1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ابن تیمیہ رحمہ اللہ کا صوفیت کے بارے مؤقف؟؟

'عقیدہ اہل سنت والجماعت' میں موضوعات آغاز کردہ از ابو معاویہ سلفی, ‏اگست 17، 2017۔

  1. ‏اگست 17، 2017 #1
    ابو معاویہ سلفی

    ابو معاویہ سلفی مبتدی
    شمولیت:
    ‏اگست 17، 2017
    پیغامات:
    1
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    17

    السلام علیکم۔کیا ابن تیمیہ رحمہ الله کا واقعی یہ مؤقف تھا صوفیت کے بارے۔یہ ایک دیوبندی نے پوسٹ کی ہے
    صوﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﻧﮯ ﺑﺎﻃﻞ ﻋﻘﺎﺋﺪ ﺑﮩﯽ ﻣﻨﺴﻮﺏ ﮐﺌﮯ ﻫﯿﮟ
    ﺷﯿﺦ ﺍﻻﺳﻼﻡ ﻓﺮﻣﺎﺗﮯ ﻫﯿﮟ ﮐﮧ ﺍﻫﻞ ﻣﻌﺮﻓﺖ ﺻﻮﻓﯿﮧ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﮐﺴﯽ ﺍﯾﮏ ﮐﺎ ﺑﻬﯽ ﯾﮧ ﻋﻘﯿﺪﻩ ﻧﻬﯿﮟ ﻫﮯ ﮐﮧ ﺍﻟﻠﻪ ﺗﻌﺎﻟﯽ ﺍﺱ ﻣﯿﮟ ﯾﺎ ﺍﺱ ﮐﮯ ﻋﻼﻭﻩ ﺩﯾﮕﺮ ﻣﺨﻠﻮﻗﺎﺕ ﻣﯿﮟ ﺣﻠﻮﻝ ﻭﺍﺗﺤﺎﺩ ﮐﺮ ﮔﯿﺎﻫﮯ ، ﺍﻭﺭ ﺍﮔﺮ ﺑﺎﻟﻔﺮﺽ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﺑﺎﺕ ﺍﻥ ﺍﮐﺎﺑﺮ ﺷﯿﻮﺥ ﮐﮯ ﺑﺎﺭﮮ ﻣﯿﮟ ﻧﻘﻞ ﮐﯽ ﺟﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﺍﮐﺜﺮ ﺍﺱ ﻣﯿﮟ ﺟﮭﻮﭦ ﻫﻮﺗﺎﮨﮯ ، ﺟﺲ ﮐﻮ ﺍﺗﺤﺎﺩ ﻭﺣﻠﻮﻝ ﮐﮯ ﻗﺎ ﺋﻞ ﮔﻤﺮﺍﮦ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﻧﮯ ﺍﻥ ﺻﻮ ﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﻣﻨﺴﻮﺏ ﮐﯿﺎﮨﮯ ، ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﺍﺱ ﻗﺴﻢ ﮐﮯ ﺑﺎﻃﻞ ﻋﻘﺎﺋﺪ ﺳﮯ ﺑﺮﯼ ﻫﯿﮟ .. ‏( ﻣﺠﻤﻮﻉ ﺍﻟﻔﺘﺎﻭﻯ ﺟﻠﺪ 11 ﺹ 74 - 75 ‏)
    ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﻋﻘﯿﺪﮦ ﺣﻠﻮﻝ ﺳﮯ ﺑﺮﯼ ﮨﯿﮟ
    ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﺟﻮ ﺍﻣﺖ ﮐﮯ ﻧﺰﺩﯾﮏ ﻣﺸﮩﻮﺭ ﻫﯿﮟ ﻭﻩ ﺍﺱ ﺍﻣﺖ ﺳﭽﮯ ﻟﻮﮒ ﻫﯿﮟ ﻭﻩ ﺣﻠﻮﻝ ﻭ ﺍﺗﺤﺎﺩ ﻭﻏﯿﺮﮦ ﮐﺎ ﻋﻘﯿﺪﻩ ﻧﻬﯿﮟ ﺭﮐﮩﺘﮯ ﺑﻠﮑﻪ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﻮ ﺍﺱ ﺳﮯ ﻣﻨﻊ ﮐﺮﺗﮯ ﻫﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺍﻫﻞ ﺣﻠﻮﻝ ﮐﯽ ﺭﺩ ﻣﯿﮟ ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﮐﺎ ﮐﻼﻡ ﻣﻮﺟﻮﺩﻫﮯ ، ﺍﻭﺭ ﺣﻠﻮﻝ ﮐﮯ ﻋﻘﯿﺪﻩ ﮐﻮ ﺍﻥ ﻧﺎ ﻓﺮﻣﺎﻥ ﯾﺎ ﻓﺎﺳﻖ ﯾﺎ ﮐﺎﻓﺮ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﻧﮯ ﺍﺧﺘﯿﺎﺭ ﮐﯿﺎ ﺟﻨﮩﻮﮞ ﻧﮯ ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﻣﺸﺎﺑﮩﺖ ﺍﺧﺘﯿﺎﺭﮐﯽ ﺍﻭﺭ ﻇﺎﮨﺮﯼ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﻭﻻﯾﺖ ﮐﮯ ﺩﻋﻮﮮ ﮐﯿﺌﮯ ﺍﻟﺦ ‏( ﻣﺠﻤﻮﻉ ﺍﻟﻔﺘﺎﻭﻯ ﺟﻠﺪ 15 ﺹ 427 ‏)
    ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﺮﺍﻡ ﮐﻔﺮ ﺳﮯ ﺑﺮﯼ ﮨﯿﮟ
    ﺍﮔﺮ ﺍﻥ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﯽ ﺗﮑﻔﯿﺮ ﮐﯽ ﺟﺎﺋﮯ ﺗﻮ ﻻﺯﻡ ﺁﺋﮯ ﮔﺎ ﺑﮩﺖ ﺳﺎﺭﮮ ﺷﺎﻓﻌﯽ ﻣﺎﻟﮑﯽ ﺣﻨﻔﯽ ﺣﻨﺒﻠﯽ ﺍﺷﻌﺮﯼ ﺍﮨﻞ ﺣﺪﯾﺚ ﺍﻫﻞ ﺗﻔﺴﯿﺮ ﺍﻭﺭ ﺻﻮﻓﯿﮧ ﮐﯽ ﺗﮑﻔﯿﺮ، ﺣﺎﻻﻧﮑﮧ ﺑﺎﺗﻔﺎﻕ ﻣﺴﻠﻤﯿﻦ ﯾﮧ ﺳﺐ ﻟﻮﮒ ﮐﺎﻓﺮ ﻧﻬﯿﮟ ﺗﮭﮯ .. ‏( ﻣﺠﻤﻮﻉ ﺍﻟﻔﺘﺎﻭﻯ ﺟﻠﺪ 35 ﺹ 101 ‏)
    ﺷﯿﺦ ﺍﻻﺳﻼﻡ ﮐﮯ ﺷﺎﮔﺮﺩِ ﺭﺷﯿﺪ ﺣﺎﻓﻆ ﺻﻮﻓﯽ ﺍﺑﻦ ﺍﻟﻘﯿﻢؒ ﮐﺎ ﮐﻼﻡ ﺗﺼﻮﻑ ﮐﮯ ﺑﺎﺭﮮ ﻣﯿﮟ ﻋﻠﻢ ﺗﺼﻮﻑ ﺑﻨﺪﻭﮞ ﮐﮯ ﺍﺷﺮﻑ ﻭﺍﻓﻀﻞ ﻋﻠﻮﻡ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﮨﮯ ﻋﻠﻢ ﺗﻮﺣﯿﺪ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﺍﺱ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﻩ ﺍﺷﺮﻑ ﮐﻮﺉ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﯾﮧ ﻋﻠﻢ ﺗﺼﻮﻑ ﺷﺮﯾﻒ ﻧﻔﻮﺱ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﻬﮧ ﻫﯽ ﻣﻨﺎﺳﺒﺖ ﺭﮐﮩﺘﺎ ﮨﮯ .. ‏( ﻃﺮﻳﻖ ﺍﻟﻬﺠﺮﺗﻴﻦ ﺹ --260 261 ‏)
     
  2. ‏اگست 18، 2017 #2
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,986
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    وعلیکم السلام و رحمت الله

    بڑا اہم موضوع ہے -اس سے متعلق اہل علم کی آراء کا انتظار رہے گا-
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں