1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

(اللہ نے) شفاء تین چیزوں میں (رکھی) ہے

'طب نبویﷺ' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد زاہد بن فیض, ‏اگست 12، 2012۔

  1. ‏اگست 12، 2012 #1
    محمد زاہد بن فیض

    محمد زاہد بن فیض سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جون 01، 2011
    پیغامات:
    1,955
    موصول شکریہ جات:
    5,774
    تمغے کے پوائنٹ:
    354

    حدیث نمبر: 5680
    حدثني الحسين،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ حدثنا أحمد بن منيع،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ حدثنا مروان بن شجاع،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ حدثنا سالم الأفطس،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ عن سعيد بن جبير،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ عن ابن عباس ـ رضى الله عنهما ـ قال ‏"‏ الشفاء في ثلاثة شربة عسل،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وشرطة محجم،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وكية نار،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وأنهى أمتي عن الكى ‏"‏‏.‏ رفع الحديث ورواه القمي عن ليث عن مجاهد عن ابن عباس عن النبي صلى الله عليه وسلم في العسل والحجم‏.‏


    ہم سے حسین نے بیان کیا، کہا ہم سے احمد بن منیع نے بیان کیا، کہا ہم سے مروان بن شجاع نے بیان کیا، ان سے سالم افطس نے بیان کیا، ان سے سعید بن جبیر نے اور ان سے حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہما نے بیان کیاکہ شفاء تین چیزوں میں ہے۔ شہد کے شربت میں، پچھنا لگوانے میں اور آگ سے داغنے میں لیکن میں امت کوآگ سے داغ کر علاج کرنے سے منع کرتا ہوں۔ حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہما نے اس حدیث کو مرفوعاً نقل کیا ہے اور القمی نے روایت کیا، ان سے لیث نے، ان سے مجاہد نے، ان سے حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہما نے اور ان سے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے شہد اور پچھنا لگوانے کے بارے میں بیان کیا۔



    حدیث نمبر: 5681
    حدثني محمد بن عبد الرحيم،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ أخبرنا سريج بن يونس أبو الحارث،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ حدثنا مروان بن شجاع،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ عن سالم الأفطس،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ عن سعيد بن جبير،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ عن ابن عباس،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ عن النبي صلى الله عليه وسلم قال ‏"‏ الشفاء في ثلاثة شرطة محجم،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ أو شربة عسل،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ أو كية بنار،‏‏‏‏ ‏‏‏‏ وأنهى أمتي عن الكى ‏"‏‏.‏


    ہم سے محمد بن عبدالرحیم نے بیان کیا، انہوں نے کہا ہم کو سریج بن یونس ابو حارث نے خبر دی، انہوں نے کہا ہم سے مروان بن شجاع نے بیان کیا، ان سے سالم افطس نے بیان کیا، ان سے سعید بن جبیر نے بیان کیا اور ان سے حضرت عبداللہ بن عباس رضی اللہ عنہما نے بیان کیا کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا شفاء تین چیزوں میں ہے پچھنا لگوانے میں، شہد پینے میں اور آگ سے داغنے میں مگر میں اپنی امت کو آگ سے داغنے سے منع کرتا ہوں۔

     
    • شکریہ شکریہ x 7
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • لسٹ
  2. ‏اگست 12، 2012 #2
    محمد شاہد

    محمد شاہد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 18، 2011
    پیغامات:
    2,509
    موصول شکریہ جات:
    6,012
    تمغے کے پوائنٹ:
    447

    جزاک اللہ خیرا
     
  3. ‏اگست 13، 2012 #3
    Aamir

    Aamir خاص رکن
    جگہ:
    احمدآباد، انڈیا
    شمولیت:
    ‏مارچ 16، 2011
    پیغامات:
    13,384
    موصول شکریہ جات:
    16,871
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,033

    تشریح : یہ ممانعت تنزیہی ہے یعنی بے ضرورت شدید داغ نہ دینا چاہیئے کیونکہ اس میں مریض کو بہت تکلیف ہو تی ہے ۔ دوسرے آگ کا استعمال ہے اور آگ سے عذاب دینا منع آیا ہے۔ حقیقت میں داغ دینا آخری علاج ہے۔ جب کسی دعا سے فائدہ نہ ہو اس وقت داغ دیں جیسے دوسری حدیث میں ہے کہ آخری دوا داغ دینا ہے۔ کہتے ہیں کہ طاعون کی بیماری میں بھی داغ دینا بے حد مفید ہے جہاں دانہ نمودار ہو اس کو فوراً آگ سے جلادینا چاہیئے ۔ عرب میں اکثر یہ علاج مروج رہاہے۔ شہد دوا اور غذادونوں کے لیے کام دیتا ہے۔ بلغم کونکالتا ہے اور اس کا استعمال امراض باردہ میں بہت مفید ہے ۔ خالص شہد آنکھوں میں لگانا بھی بہت نفع بخش ہے۔ خصوصاً سوتے وقت اسی طرح اس میں سینکڑوں فائدہ ہیں۔
     
    • شکریہ شکریہ x 4
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏جولائی 04، 2013 #4
    نزرانہ بٹ

    نزرانہ بٹ رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 04، 2013
    پیغامات:
    38
    موصول شکریہ جات:
    68
    تمغے کے پوائنٹ:
    31

    یہ پچھنا لگوانا کیا ہوتا ہے؟
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  5. ‏جولائی 06، 2013 #5
    کلیم حیدر

    کلیم حیدر رکن
    جگہ:
    لیہ
    شمولیت:
    ‏فروری 14، 2011
    پیغامات:
    9,403
    موصول شکریہ جات:
    25,973
    تمغے کے پوائنٹ:
    995

    پچھنا کو عربی میں ’’ الحجامۃ ‘‘ کہتے ہیں ۔ یہ قدیم طرز علاج ہے جسم کے کسی حصہ پر کپ ( پچھنا) لگاکر خلاء یعنی Partial vacuum پیدا کیا جاتاہے جس کی وجہ سے اس حصہ پر مقامی ہیجان خون Localized congestion واقع ہوتاہے۔ کچھ لمحہ بعد کپ کو نکالا جاتا ہے اور اس مقام پر بغیر کسی تکلیف کے فاسد خون کا اخراج کیا جاتا ہے۔ حجامہ کا عمل کافی آسان ہوتاہے لیکن اس کے فائدے حیرت انگیز ہوتے ہیں ۔ حجامہ کی وجہ سے جو کھینچاؤ اور گرمی پیدا ہوتی ہے وہ ان نظاموں کو درست کرتی ہے جس کی وجہ سے مریض کو آرام ملتا ہے اور وہ شفایاب ہوتاہے۔ حجامہ کی خصوصیت یہ ہے کہ یہ بہت آسانی کے ساتھ عمل میں لائی جا سکتی ہے۔ آسان، مفید بنا کوئی درد اور مضرات یعنی side effects کے ۔حجامہ دنیا کی مختلف اور پیچیدہ امراض کا آسان اور شفا بخش طریقہ علاج ہے۔
     
    • معلوماتی معلوماتی x 3
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  6. ‏جولائی 06، 2013 #6
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جزاک اللہ خیرا
     
  7. ‏اگست 14، 2013 #7
    sadia

    sadia رکن
    جگہ:
    KHANEWAL
    شمولیت:
    ‏جون 18، 2013
    پیغامات:
    283
    موصول شکریہ جات:
    545
    تمغے کے پوائنٹ:
    98

    جزاک اللہ خیرا
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں