1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

انجینیئر محمد علی مرزا

'جدیدیت' میں موضوعات آغاز کردہ از مصطفین عارف, ‏فروری 06، 2015۔

  1. ‏فروری 15، 2015 #31
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,160
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    محترم بھائی آپ کی بات غلط نہیں اگر اسی طرح ہو جس طرح آپ نے لکھا ہے کہ کوئی امیر معاویہ رضی اللہ عنہ کو جہنمی کہے البتہ کسی صحابی کو اجتہادی غلطی پر سمجھنے والے کے بارے میں تو کسی کو اعتراض نہیں البتہ صحابی کو اجتہادی غلطی پر سمجھ کر اسکو تحقیر کرنے یا اسکو پھیلانے والے کا بھی سختی سے رد کیا جائے گا البتہ ایسے انسان کے کفر کا معاملہ اللہ بہتر جانتا ہے ہاں غیر اہل حدیث آپ کہ سکتے ہوں کیونکہ اسنے سلف صالحین کے خلاف معاملہ کیا ہے اللہ اعلم
     
  2. ‏ستمبر 10، 2015 #32
    razijaan

    razijaan رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 21، 2015
    پیغامات:
    37
    موصول شکریہ جات:
    4
    تمغے کے پوائنٹ:
    35

    جنہوں نے کتابیں لکھیں اور وہ روایات لکھیں جنہوں نے ترجمعے کیے ان کے بارے کیا خیال ہے میرے بھائی
     
  3. ‏ستمبر 10، 2015 #33
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,194
    موصول شکریہ جات:
    2,367
    تمغے کے پوائنٹ:
    777

    کس نے کونسی کتاب لکھی ۔۔اور اس کتاب میں ۔۔صحابی کرام رضی اللہ عنہم کے خلاف کیا لکھا؟
    یاد رہے کتاب کی اصل عبارت سامنے لانا ہوگی ۔۔۔جس طرح دوستوں نے فورم پر ۔۔ جہلم کے مرزا صاحب ۔۔کی ویڈیو ۔اور ۔آڈیو ۔بیان کے کلپ لگائے ہیں ۔
     
  4. ‏ستمبر 12، 2015 #34
    قاھر الارجاء و الخوارج

    قاھر الارجاء و الخوارج رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2014
    پیغامات:
    393
    موصول شکریہ جات:
    235
    تمغے کے پوائنٹ:
    71

    عبدہ بھائی یہ شخص نہایت بد باطن ہے اور تدلیس کا نہایت ماہر ہے مجھے یاد ہے جنید جمشید کے دفاع میں جب اس نے تقریر کی تو کہا شیعہ کو تو رہنے ہی دیں نا ان کا تو معاملہ ہی الگ ہے
    بات کر رہا تھا کہ جنید جمشید نے کوئی گستاخی نہیں کی گستاخیاں تو سنی کہلانے والوں نے کی ہیں دیوبندی اھل حدیث بریلوی
    جبکہ ایک دوست ہیں مبشر سعید بھائی انہوں نے سوال کیا کیا نماز شیعہ کے پیچھے بھی پڑھی جائے گی تو فرمایا جی ہاں مرزائی کے علاوہ سب کے پیچھے پڑھی جائے گی
    شیعہ اس کی تقاریر کو اپنے پیجز پر نشر کرتے ہیں اللہ ہی اس کے باطن کو جانتا ہے لیکن قرائن اس کے رفض پر شاھد ہیں اھل سنت سے اس نے بالکل واضح علحدگی اختیار کی ہے مشاجرات صحابہ کے حوالے سے
     
    • پسند پسند x 2
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • لسٹ
  5. ‏ستمبر 12، 2015 #35
    MD. Muqimkhan

    MD. Muqimkhan رکن
    جگہ:
    نئی دہلی
    شمولیت:
    ‏اگست 04، 2015
    پیغامات:
    245
    موصول شکریہ جات:
    46
    تمغے کے پوائنٹ:
    56

    آپ نے جس ویڈیو کا پوسٹ مارٹم کیا اللہ آپ کو اجر دے آپ نے دین کا اہم کام کیا ہے. رافضیوں نے ماضی میں بھی اس قسم کی حرکتیں کی ہیں اور اب تک کررہے ہیں. مرزا کبھی رافضی رہا ہو یا نہ رہا ہو خواہ وہ کسی کا شاگرد ہو فی الحال تو رافضی ہی ہے. رافضیت صرف سینہ کوبی کا نام نہیں. وہ جس طرح سے مسلسل صحابہ کرام رضی اللہ عنہم اجمعین کے بارے میں لب کشائی کرتا ہے اس کی زبان سے رافضیت ہی غلاظت انڈیلتی ہے. اب تک جتنا دیکھا ہے ایسا ہی دیکھا ہے. ہم تو بھول کر بھی اسے اہل حدیث کجا اہل سنت کے کسی بھی گروہ سے متعلق نہیں کریں گے.
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  6. ‏ستمبر 22، 2015 #36
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  7. ‏ستمبر 22، 2015 #37
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

  8. ‏ستمبر 22، 2015 #38
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

     
  9. ‏دسمبر 28، 2015 #39
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    کذاب مرزا جہلمی کی جہالت !

    شیخ مقصود الحسن فیضی حفظہ اللہ کی ایک بات بہت قابل غور ہے.

    علماء کی موجودگی میں ایسے لوگوں کو پذیرائ کیسے مل جاتی ہے؟


     
  10. ‏جون 06، 2016 #40
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    علی مرزا جہلمی صاحب ...جھوٹ بولیے...لیکن حیا کے ساتھ

    مغلوں سے معذرت ...مگر اکبر بادشاہ نے دین کا حلیہ بگاڑا...پھر ایک مرزا صاحب نے حیا کی ردا یوں اتاری کہ خود کو نبی قرار دے دیا...اور شرم نام کی کوئی شے ان کو چھونے میں ناکام رہی....اور اب ایک اور مرزا صاحب کی درفنطنیاں سنیں....موصوف کیمرے کے سامنے " بلٹ ٹرین " کی سپیڈ سے بول رہے تھے...نہ کوئی پوچھنے والا نہ کوئی روکنے والا ...ویڈیو میں حاضرین دکھائی نہیں دے رہے تھے مجھے لگتا ہے کہ گھر کے ڈرائنگ روم میں موبائل کے کیمرے میں وڈیو بنا کر موصوف سوشل میڈیا پر چڑھا دیتے ہیں...اور ہمارے معاشرے کا چلن ہے کہ منفی باتوں کو لوگ پسند کرتے ہیں سو اس پر پھولے نہ سماتے..یہ لوگ خود کو بقراط جان لیتے ہیں....


    مدارس کے خلاف موصوف کا احساس کمتری بدزبانی بن کے نکل رہا تھا...خیر یہ تو بندے کی گھریلو تربیت ہوتی ہے...جس کو اچھی تربیت مل جائے وہ قسمت والا...ورنہ اجڑا تیمور زادہ......

    ایک تقریر میں موصوف نے اتنے جھوٹ بولے کہ اللہ کی پناہ.....کہتے ہیں کہ "ہندوستان میں مدارس جو آپ کو نظر آ رہے ہیں وہ انگریزوں کے دور میں بنے ہیں.... کہ انہوں نے بھی روٹی روزی چلانی تھی"

    مولوی صاحب آپ کو علم نہیں تو اس جہالت کا علاج کیجئے ...کتابیں پڑھیے...مطالعہ کیجئے....کم از کم جھوٹ کا سہارا تو نہ لیجئے....

    انگریز کی آمد سے پہلے سلاطین اور پھر اس کے بعد آپ کے اجداد یعنی مغلوں کے عھد تک مدارس کا باقاعدہ نظام موجود تھا...مسجد سے ملحق ان مدارس میں پہلے ناظرہ پڑھایا جاتا....پھر حساب اور فارسی زبان کی تعلیم دی جاتی ....

    مولوی جی ! بچیوں کے لیے مدارس کا الگ نظام تھا...جن کو "آتوں جی" کے نام سے پکارا جاتا...معزز اور صاحب حیثیت گھرانوں میں قائم ان مدارس میں بچیاں پڑھتیں...

    ..مرزا جی ! پھر اعلی تعلیم کا مرحلہ شروع ہوتا تھا...یعنی مدارس کا جو بقول آپ کے انگریز کیے دور کی پیدوار ہیں

    ان ابتدائی مراحل کے بعد طالب علم مدارس میں جا داخل ہوتے...اس زمانہ میں جو کتاب شامل نصاب ہوتی تھیں انھیں "کتاب مفتیانہ" کہتے تھے....بارویں صدی عیسوی سے لے کر انیسویں صدی عیسوی تک اس نصاب تعلیم کی عمدگی کے واسطے اس میں کئی بار تبدیلیاں بھی ہوئیں. مولنا ابوالحسنات نے اس کے باقاعدہ پانچ ادوار متین کیے ہیں...مگر"حجت". آپ کا تحقیق سے کیا واسطہ؟...

    ..پھر... آپ کے نالائق اور نااہل اجداد کی مہربانیوں سے انگریز آ گیا....جب آپ کے بقول مدارس شروع ہوۓ...... حالانکہ جب مدارس کے زوال کا آغاز ہوا تھا
    بس بندہ جب مائیک پر یا بائیک پر چڑھا ہوتا ہے اس کا ذہنی توازن بگڑا ضرور ہوتا ہے مگر جھوٹ بولتے ہوۓ تو پھر بھی..............

    ابوبکرقدوسی
    .
    ****ان کا کہنا ہے کہ اسلام میں پہلا مدرسہ تیسری صدی ہجری میں بنا اس پر پھر سہی
     
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں