1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

اور چادر جل گئی!

'بدعت' میں موضوعات آغاز کردہ از عدیل سلفی, ‏اپریل 29، 2018۔

  1. ‏اپریل 29، 2018 #1
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,418
    موصول شکریہ جات:
    379
    تمغے کے پوائنٹ:
    161

    اللّه و اکبر
    ( اہلحدیث کی ایک اور فتح)
    ( اور چادر جل گئی)
    ہوا کچھ یوں کہ پاکستان کےایک معروف ضلع جھنگ کےمعروف شہر چنڈ بھروانہ کےایک گاؤں بڈھی ٹھٹی میں جماعت اہل حدیث کےایک کارکن قاری عبدالمنان صاحب مسجد اہل حدیث میں مدرس ہیں وہ گاؤں شیعہ اور بریلوی حضرات سےبھرا پڑا ہے وہاں ایک بریلوی ساتھی ہیں جو جھنگ کی ایک معروف درگاہ کے مرید ہیں جس کا نام میاں بکھا ہے یہ بڑی معروف درگاہ ہے اس بریلوی ساتھی نے کہا کہ میاں بکھا لوگوں کی ٹانگیں توڑ دیتا ہے لوگوں کو اندھا بھی کر دیتا ہے اور اسکےدربار کی چادر کوئی بھی نہیں جلا سکتا قاری صاحب نےاس بات کا سلفی انداز سےانکار کر دیا بات طول پکڑ گئی۔
    بالآخر فیصلہ یہ طے پایا کہ ہم دربار سےچادر لےآتے ہیں آپ اسکو جلا کر دکھائیں۔ قاری صاحب نےہاں کر دی وہ چادر لےآئےاور میدان میں رکھ دی اور قاری صاحب کو پندرہ یا سولہ فٹ دور کھڑا کر دیا اور کہا اب اسکو جلا کر دکھاؤ قاری صاحب جب ماچس سےآگ لگانے لگے تو انہوں نےکہا کہ ماچس سےآگ نہیں لگانی بلکہ اپنے رب کو کہو کہ اس کو جلائے اور ہم اپنے پیر میاں بکھا سےدعا کرتے ہیں کہ وہ اس کو بچائے قاری صاحب اپنے رب کےحضور سجدے میں چلے گئےاور دعا شروع کر دی۔ کچھ ٹائم بعد رب کی قدرت سےچادر سےدھواں بلند ہوا تو قاری صاحب نے سر اٹھا لیا مگر وہ ساتھی بولا کہ نہیں آگ لگنی چاہیے۔ قاری صاحب پھر سجدےمیں چلے گئے اور رب سےدعا کرنی شروع کر دی کچھ ہی ٹائم گزرا تھا کہ اچانک رب کی قدرت سےآگ بھڑک اٹھی اور چادر جل گئی۔ دو تین بریلوی ساتھی موقع پر ہی اہلحدیث ہوگئے اس ہی موقع پر اہلحدیث علامہ سید سبطین شاہ نقوی نے جلسہ رکھا ہے

    31531657_128524248005105_2883477687748263936_n.jpg

    ویڈیو لنک
     
  2. ‏اپریل 30، 2018 #2
    محمد رضوان مغل

    محمد رضوان مغل مبتدی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 31، 2017
    پیغامات:
    60
    موصول شکریہ جات:
    8
    تمغے کے پوائنٹ:
    23

    السلام علیکم!

    بھائی کیا یہ واقعہ حقیقت میں پیش آیا ہے یا پھر ایسے ہی منسوب کر دیا گیا ہے؟ کیوں کہ کچھ تو اس پر اعتماد نہیں کرتے اور کہتے ہیں کہ یہ بس عوام کو خوش کرنے کے لئیے جھوٹے قصے منسوب کیے جا رہے ہیں۔
     
  3. ‏اپریل 30، 2018 #3
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,418
    موصول شکریہ جات:
    379
    تمغے کے پوائنٹ:
    161

    منسوب کرنے والے صرف دل کو تسلیاں دے رہے ہیں، جو لوگ موجود تھے اس وقت ان سے رابطہ کیا جارہا ہے ویڈیو جلد آجائیگی، ویسے اس واقعہ کے چشم دیدگواہان مقلدین ہیں جو کہ وہاں موجود تھے ان کی بھی ویڈیو نشر کی جائیگی بہت جلد، اور جہاں تک بات ہے اس واقعہ کو جھوٹا قرار دینے کی تو واقعہ سانگلہ ہل کو بھی لوگ نہیں مانتے جب کے اس کی ویڈیو بھی موجود ہے۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں