1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

اٹھارہ سال میں نے اپنے ماں باپ کے ساتھ گزارے ----------

'جہیز' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏دسمبر 13، 2013۔

  1. ‏دسمبر 13، 2013 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    اٹھارہ سال میں نے اپنے ماں باپ کے ساتھ گزارے ----------

    کائنات فاطمہ

    اٹھارہ سال میں نے اپنے ماں باپ کے ساتھ گزارے ---------- میں خوش تھی، پھر دو سال میں نے ----- میں نے کہاں گزارے، ہاں شادی ہو گئی تھی میری ---------- ایف اے کے بعد ----- مجاہد سے ----- میں مٹھیوں میں خواب لے کر اس کے گھر آئی تھی- ہر لڑکی یہی کرتی ہے ----- میں بھی خواب لے کر ایک سراب میں داخل ہو گئی تھی- میرا خیال تھا مجھے چاہا جائے گا- سب لوگ یہی کہتے تھے مجھ میں کسی چیز کی کمی نہیں تھی ---------- خوبصورتی، اخلاق، ایثار، خوش مزاجی، نرم خوئی، برداشت، تحمّل، سمجھداری، سلیقہ----------

    گنتی ان سے شروع نہیں ہوئی تھی- گنتی کہیں اور سے شروع ہوئی تھی- ٹی وی، وی سی آر، فریج، زیور، موٹر سائیکل، میں شاکڈ رہ گئی، خوف نے مجھے اپنی گرفت میں لینا شروع کر دیا- پہلی بار مجھے احساس ہوا، میرے پاس کچھ بھی نہیں تھا- جو تھا، وہ بے مول تھا ---------- ساس، سسر، نندیں، شوہر، ہر ایک کی زبان پر ایک جیسے لفظ تھے ----- وہ تلخ تھے، زہریلے تھے، کانٹے تھے-

    "وقت گزرنے کے ساتھ سب ٹھیک ہو جائے گا -----" میں ہر بار خود کو یہی کہہ کر تسلی دیتی-

    "سسرال والے ایسی باتیں کرتے ہی ہیں-" میں سوچتی "میں اپنی خدمات سے ان کے دل جیت لوں گی-"

    "ہاں! خدمت سے دلوں کو جیتا جا سکتا ہے- مگر جن لوگوں کے وجود کے اندر دلوں کے بجائے ہوس اور لالچ کے بت پیوست ہوں ----- ان کو ----- ان کو-----"

    تحریر: عمیرہ احمد
     
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  2. ‏دسمبر 13، 2013 #2
    ابومحمد

    ابومحمد رکن
    جگہ:
    کوٹ ادو
    شمولیت:
    ‏جنوری 19، 2013
    پیغامات:
    301
    موصول شکریہ جات:
    546
    تمغے کے پوائنٹ:
    86

    یہ بات 100 فیصد حقائق پر مبنی ہے ۔ہمارے معاشرے کا سب سے بڑا المیہ ہے چاہے کوئی مجاہد ہو یا عالم اس معاملے میں اپنی اصل راہ کو چھوڑ کر دنیا کی چند عشرتوں کے لئے اللہ ہمیں ان کاموں سے محفوظ رکھے ۔
     
    • پسند پسند x 3
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں