1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

اگر نفل ادا كرتے ہوئے نماز كى اقامت ہو جائے ؟

'نماز باجماعت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏مارچ 01، 2017۔

  1. ‏مارچ 27، 2017 #71
    ابو عبدالله

    ابو عبدالله مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏نومبر 28، 2011
    پیغامات:
    720
    موصول شکریہ جات:
    447
    تمغے کے پوائنٹ:
    135

    انتہائی نامعقول حرکت

    میرا رب اللہ ہے.
     
  2. ‏مارچ 27، 2017 #72
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    740
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    @ابن داؤد بھائی جان! میں اس حدیث کے انتظار میں ہوں جس میں آپ کا مذکورہ دعوی ذکر ہے۔
    ادھر ادھر کی پوسٹیں نظر آ رہی ہیں لیکن "حدیث مبارکہ" نظر نہیں آ رہی۔
     
  3. ‏مارچ 27، 2017 #73
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    740
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    تو ابن داؤد صاحب کی میرے علمی آباء کی جانب دھوکہ دہی کی نسبت والی حرکت بہت معقول تھی کیا؟
     
  4. ‏مارچ 27، 2017 #74
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,651
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    حدیث تو پیش کی جا چکی ہے!
    لیکن جس کی آنکھ پر تقلید کا شیطانی موتیا ہو،اسے نظر نہیں آئے گی!
     
  5. ‏مارچ 27، 2017 #75
    T.K.H

    T.K.H مشہور رکن
    جگہ:
    یہی دنیا اور بھلا کہاں سے ؟
    شمولیت:
    ‏مارچ 05، 2013
    پیغامات:
    1,097
    موصول شکریہ جات:
    318
    تمغے کے پوائنٹ:
    156

    اس بحث کو افتراق و اختلاف کی بجائے علمی بحث تک محدود رکھا جائے تو بہتر ہے ، شکریہ !
     
  6. ‏مارچ 27، 2017 #76
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    740
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    استغفر اللہ
    یعنی جھوٹ در جھوٹ!
    اس حدیث میں آپ کے مطلوبہ الفاظ کہاں لکھے تھے جن کا آپ نے دعوی کیا تھا؟ چچ چچ چچ شرم تم کو مگر نہیں آتی.


    میں خود بھی اس موضوع پر مزید سنجیدہ گفتگو کرنا چاہتا ہوں لیکن یہ ابن داؤد صاحب ہر جگہ اپنی ٹانگ اڑانا لازمی سمجھتے ہیں.
    ابن داؤد صاحب! اگر آپ کی اجازت ہو تو جب تک آپ اپنے مطلوبہ الفاظ پر مشتمل حدیث تلاش کریں, میں احباب سے بات چیت کر لوں؟
     
  7. ‏مارچ 27، 2017 #77
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,651
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    اشماریہ صاحب! مجھ سے جہاں تک ہو گا میں علماء احناف و علماء دیوبند کا تعاقب کروں گا!
    اور ان کے دجل و فریب سے لوگوں کو آگاہ کرتے رہوں گا!
    اللہ مجھے توفیق دے!
    سنجیدگی سے گفتگو کرنے کے متمنی ہوتے تو آپ سے جو مطلوب ہے پیش کرتے، امین اکاڑوی کے چبائے ہوئے لقمے نہ اگلتے!
    اور یہ چچ چج چج تو آپ کی اور بھی نکلے گی!
    مگر حنفی مقلد میں شرم و حیا کہاں! وہ پھر بھی اکثر ہٹ دھرمی کا ہی مظاہرہ کرتا ہے!
     
    Last edited: ‏مارچ 27، 2017
    • شکریہ شکریہ x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  8. ‏مارچ 27، 2017 #78
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,651
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    اشماریہ صاحب فرماتے ہیں:
    جب ان سے عبارت اور حوالہ طلب کیا وہ دینے سے گریز کرتے ہے، اتنا کہہ کر جان چھڑانے کی کوشش کی:
    مگر ہم بھی ان کذابوں کے فریب کو آشکار کنے کے عزم کئے ہوئے ہیں:
    اب دیکھیں امام قرطبی نے کیا کہا ہے:
    الثَّانِيَةُ- احْتَجَّ عُلَمَاؤُنَا وَغَيْرُهُمْ بِهَذِهِ الْآيَةِ عَلَى أَنَّ التَّحَلُّلَ مِنَ التَّطَوُّعِ- صَلَاةً كَانَ أَوْ صَوْمًا- بَعْدَ التَّلَبُّسِ بِهِ لَا يَجُوزُ، لِأَنَّ فِيهِ إِبْطَالَ الْعَمَلِ وَقَدْ نَهَى اللَّهُ عَنْهُ. وَقَالَ مَنْ أَجَازَ ذَلِكَ- وَهُوَ الْإِمَامُ الشَّافِعِيُّ وَغَيْرُهُ-: الْمُرَادُ بِذَلِكَ إِبْطَالُ ثَوَابِ الْعَمَلِ الْمَفْرُوضِ، فَنَهَى الرَّجُلَ عَنْ إِحْبَاطِ ثَوَابِهِ. فَأَمَّا مَا كَانَ نَفْلًا فَلَا، لِأَنَّهُ لَيْسَ وَاجِبًا عَلَيْهِ. فَإِنْ زَعَمُوا أَنَّ اللَّفْظَ عَامٌّ فَالْعَامُّ يَجُوزُ تَخْصِيصُهُ. وَوَجْهُ تَخْصِيصِهِ أَنَّ النَّفْلَ تَطَوُّعٌ، وَالتَّطَوُّعُ يَقْتَضِي تَخْيِيرًا.
    ہمارے دوسرے علماء نے اس آیت سے استدلال کیا ہے کہ نفل نماز ہو یا روزہ اس کو شروع کرنے کے بعد چھوڑ دینا جائز نہیں کیونکہ اس میں عمل کا ابطال ہے جبکہ اللہ تعالیٰ نے اس سے منع کیا ہے۔ جس نے اس کی اجازت دی یعنی امام شافعی وغیرہ انہوں نے کہا: اس سے مراد فرض عمل کا ثواب ہے ایسے آدمی کو اپنے عمل کے ثواب کو باطل کرنے سے منع کیا گیا۔ جہاں تک نفل کا تعلق ہے اس کے شروع کرنے کے بعد توڑنا کوئی منع نہیں، کیونکہ یہ اس پر واجب نہیں تھا۔ اگر وہ یہ گمان کریں کہ لفظ ہےتو عام کی تخصیص جائز ہے۔ اس کی تخصیص کی دلیل یہ ہے کہ نفل زائد عمل ہوتا ہے اور زائد عمل اختیار کا تقاضا کرتا ہے۔ (ترجمہ پیر محمد کر شاہ الازہری الحنفی)
    ملاحظہ فرمائیں: صفحه255 جلد 16 الجامع لأحكام القرآن = تفسير القرطبي - أبو عبد الله محمد بن أحمد بن أبي بكر بن فرح الأنصاري الخزرجي شمس الدين القرطبي (المتوفى: 671هـ) - دار عالم الكتب، الرياض

    ملاحظہ فرمائیں: صفحه287 جلد 19 الجامع لأحكام القرآن = تفسير القرطبي - أبو عبد الله محمد بن أحمد بن أبي بكر بن فرح الأنصاري الخزرجي شمس الدين القرطبي (المتوفى: 671هـ) – مؤسسة الرسالة، بيروت
    ملاحظہ فرمائیں: صفحہ646 جلد 08اتفسير القرطبي (مترجم اردو) - أبو عبد الله محمد بن أحمد بن أبي بكر بن فرح الأنصاري الخزرجي شمس الدين القرطبي (المتوفى: 671هـ) – مترجم پیر کرم شاہ الازہری الحنفی- ضیاء القران پبلیکیشنز، لاہور
    امام قرطبی نے اشماریہ صاحب کی دوسری تاویل کا کوئی ذکر نہیں کیا!
    یہ اشماریہ صاحب نے اپنے علمائے دیوبند کی روش اختیار کرتے ہوئے جھوٹ کہا تھا!
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  9. ‏مارچ 27، 2017 #79
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    740
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    پہلے آپ وہ حدیث دکھا دیں پھر اس پر بات کریں گے. آپ تو اللہ کے نبی ص پر جھوٹ بول دیتے ہیں کہ آپ ص کی حدیث میں یہ مذکور ہے. آپ سے اور بات کیا کی جائے!!!
    ابن داؤد صاحب! اپنے جھوٹ کو پہلے درست کریں پھر بات کریں گے.
     
  10. ‏مارچ 27، 2017 #80
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,651
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    یہ میں بہت اچھی طرح جانتا ہوں کہ علمائے وفقہائے احناف جھوٹی تہمتیں باندھنے میں دریغ نہیں کرتے! اور آپ سے بھی مجھے اس کی بعید نہ تھی!
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں