1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ایک سوال کا جواب چاھیے !!!

'اصول فقہ' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏مارچ 24، 2014۔

  1. ‏اپریل 06، 2014 #11
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,612
    موصول شکریہ جات:
    8,282
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    جزاکم اللہ خیرا ۔
    سونے چاندی کی پیسے کے ساتھ خریدو فروخت میں دونوں شرطیں نہیں ہوں گی ۔
    یہ آپ کی اپنی تحقیق ہے یا پھر مذہب کا مفتی بہ مسئلہ ہے ۔
    کیونکہ یہ ایک حنفی فتوی ہے جس میں ادھار کو نا جائز قرار دیا گیا ہے ملاحظہ فرمائیں :
    سوال
    محترم مفتی صاحب !
    السلام علیکم !
    بعد از سلام عرض ہے کہ سونے کے بیع و شراء میں ادھار کا کیا حکم ہے؟ ہم سنھار سے سونے کے زیورات ادھار خرید سکتے ہیں یا نہیں؟
    جزاک اللہ خیراً
    سائل : مراد احمد
    جواب
    سونے چاندی کی خرید و فروخت صرف نقد جائز ہے، ادھار خرید و فروخت سونے چاندی کی جائز نہیں ہے۔
    فقط واللہ اعلم
    دارالافتاء
    جامعہ علوم اسلامیہ علامہ بنوری ٹاؤن کراچی
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  2. ‏اپریل 06، 2014 #12
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,759
    موصول شکریہ جات:
    5,266
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    بظاہر تو یہ حنفی فتویٰ ”غیر منطقی“ لگ رہا ہے۔ اس موضوع پر آپ کی رائے کیا ہے۔ کرنسی نوٹوں کے عوض سونے چاندی کی ادھار خریداری جائز ہے یا ناجائز۔
     
  3. ‏اپریل 06، 2014 #13
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,612
    موصول شکریہ جات:
    8,282
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    ابھی تک جو پڑھا اور سنا ہے وہ یہی ہے کہ ناجائز ہے ۔ کیونکہ کرنسی کی سونے اور چاندی سے وہی نسبت ہے جو سونے چاندی کی آپس میں ہے ۔
    اور سونے اور چاندی کا ایک دوسرے سے تبادلہ ادھار جائز نہیں ۔ واللہ اعلم ۔
    اس ضمن میں ایک فتوی :
    http://www.urdufatwa.com/index.php?/Knowledgebase/Article/View/9372/219/
    سعودی علماء کا بھی یہی فتوی ہے :
    http://fatwa.islamweb.net/fatwa/index.php?page=showfatwa&Option=FatwaId&Id=11149
     
    • علمی علمی x 4
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  4. ‏اپریل 06، 2014 #14
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    738
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    یعنی ادھار بیع جائز نہیں اور نقد کی شرط ہوگی؟ اور مطلقا بیع درست ہوگی؟
     
  5. ‏اپریل 06، 2014 #15
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,612
    موصول شکریہ جات:
    8,282
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    جی ۔
    اطلاق سےآپ کی مراد ؟
     
  6. ‏اپریل 06، 2014 #16
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    738
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    جزاک اللہ خیرا
    اطلاق سے مراد ہاتھ در ہاتھ بیع ہو۔
    تو اس کی ممانعت کی وجہ کیا ہوگی؟ دونوں کا ثمن ہونا؟
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  7. ‏اپریل 08، 2014 #17
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,612
    موصول شکریہ جات:
    8,282
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    بظاهر تو یہی لگتا ہے ۔ واللہ اعلم ۔
     
  8. ‏اپریل 08، 2014 #18
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    738
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    جزاک اللہ احسن الجزا
    حافظ طاہر اسلام عسکری بھائی۔ یہ فرق ہوتا ہے اصول صرف پڑھنے میں اور ایک اصول کی باقاعدہ مشق کرنے میں۔
    میں نے اصول پڑھے ہوئے ہیں اور یہاں جانتا بھی ہوں لیکن میں مسئلے کی تخریج میں غلطی کر گیا۔ جب کہ مفتیان کرام اساتذہ کی نگرانی میں باقاعدہ مشق کرتے ہیں۔
    اب اگر ایک عالم کو ہم چاروں اصول پڑھا دیں اور ایک کی مستقل پریکٹس نہ کروائیں تو یہی نتیجہ نکلے گا۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  9. ‏اپریل 08، 2014 #19
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,160
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    محترم بھائی موضوع سے تعلق اور مقصد سمجھ نہیں آیا کہ رائے دی جا سکے
     
  10. ‏اپریل 08، 2014 #20
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    738
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    حافظ طاہر اسلام عسکری بھائی نے مجھے کہا تھا کہ دیوبند کے طلبہ کو تمام فقہ اور اصول فقہ ایک ساتھ پڑھنے چاہئیں۔ میں نے عرض کیا کہ یہ سوچنے کو تو ممکن ہے لیکن حقیقت میں سب میں گہرائی حاصل کرنا انتہائی مشکل ہے۔ یہ بحث لاحاصل رہی۔ وہ بھی درست فرما رہے تھے اور میں بھی جو کہہ رہا تھا وہ مشاہدے کی بنا پر کہہ رہا تھا۔
    اسی کا اتفاق سے عملی مظاہرہ ہو گیا۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں