1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ایک مجلس کی تین طلاق سے متعلق حدیث رکانہ (مسند احمد) پر بحث

'تحقیق حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از کفایت اللہ, ‏جولائی 11، 2017۔

  1. ‏ستمبر 17، 2019 #21
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    354
    موصول شکریہ جات:
    9
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    تین طلاق کے بعد رجوع میں حرامہ کا اشتباہ موجود ہے۔
     
  2. ‏ستمبر 18، 2019 #22
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    اکٹھی تین طلاق دینے والے کی تینوں لاگو کرنے سے "حلالہ ملعونہ " کا اندیشہ رہتا ہے ؛
    کیونکہ اکٹھی تین طلاق دینے والوں کی اکثریت بالعموم رجوع کیلئے مجبور دکھائی دیتی ہے ،
    اور ان کی اس مجبوری کا حل اہل تقلید کی مارکیٹ میں "حلالہ ملعونہ "کی ہی شکل میں دستیاب ہے ؛
     
    Last edited: ‏ستمبر 18، 2019
  3. ‏ستمبر 18، 2019 #23
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,650
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    شیخ @اسحاق سلفی بھائی! ان صاحب کے مراسلے دیکھ کر معلوم ہوتا ہے کہ انہیں، ''تین طلاق'' اور اکھٹی تین طلاق'' کا فرق ہی نہیں معلوم اور ''تین طلاق'' کے مسئلہ کو ''اکھٹی تین طلاق'' سے خلط کر رہے ہیں!
    دوم کہ ان صاحب کو غالباً کسی نے یہ بتلایا نہیں کہ ان کے ہاں بھی ''اکھٹی تین طلاقیں'' ایک شمار ہوتی ہیں، جب معاملہ غیر مدخولہ کا ہو! معلوم نہیں وہاں انہیں کچھ اشتباہ ہوتا ہے کہ نہیں!​
     
    Last edited by a moderator: ‏ستمبر 19، 2019
    • پسند پسند x 2
    • متفق متفق x 2
    • لسٹ
  4. ‏ستمبر 18، 2019 #24
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    354
    موصول شکریہ جات:
    9
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    آپ کی بات ٹھیک کہ اکٹھی تین طلاق کے بعد اکثریت نادم نظر آتی اور اس کا حل تلاش کرتی نظر آتی ہے۔
    کچھ ’’حلالہ‘‘ کے چکر میں پڑتے ہیں اور کچھ مسلک بدل کر ’’حرامہ‘‘ میں پڑ جاتے ہیں۔
    مگر سوچنے کی بات یہ ہے کہ ’’حلالہ ملعونہ‘‘ ملعون ضرور ہے مگر ہے ’’حلالہ‘‘ ہی ’’حرامہ‘‘ نہیں ہے۔
     
  5. ‏ستمبر 18، 2019 #25
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    354
    موصول شکریہ جات:
    9
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    تین طلاق اور ایک مجلس کی تین طلاق کے فرق کو اچھی طرح پہچانتے ہوئے ہی لکھا ۔
     
  6. ‏ستمبر 18، 2019 #26
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,650
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    جسارت دیکھیں! ''حلالہ'' کو بھی حرام سے ''حرامہ'' کے بالمقابل بیان کرکے ''حلالہ ملعونہ'' کو ''حلال'' قرار دیا جا رہا ہے!
    اب جس فعل پر اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اللہ کی لعنت کی، جسے خود ملعونہ مانتے بھی ہیں، مگر اسے حلال باور کرانے کی جسارت کرتے ہیں!
    نجانے یہ اللہ اور نبی صلی اللہہ علیہ وسلم پر کس طرح کا ایمان رکھتے ہیں!
     
  7. ‏ستمبر 18، 2019 #27
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    354
    موصول شکریہ جات:
    9
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    ملعونہ ہونے کا سبب طلاق کی شرط پر نکاح ہے۔
    حلالہ میں باقاعدہ نکاح ہوتا ہے عدت کے بعد۔
    طلاق کے بعد بھی عدت گزاری جاتی ہے۔
    سوائے اس کے کہ طلاق کی نیت سے نکاح کیا جاتا ہے جو کہ مبغوض ہے۔
    طلاق جائز تو ہے مگر ہے نا پسندیدہ عمل۔
    طلاق کی نیت سے نکاح اور بھی شدید ہے۔
    جبکہ
     
  8. ‏ستمبر 18، 2019 #28
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    354
    موصول شکریہ جات:
    9
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    حلالہ پر اعتراض اور حرامہ پر خاموشی کو کیا کہیں گے؟
     
  9. ‏ستمبر 19، 2019 #29
    سید طہ عارف

    سید طہ عارف مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 18، 2016
    پیغامات:
    725
    موصول شکریہ جات:
    135
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    جب کسی فعل کی ذات یا صفت سے متعلق کسی امر کی نھی آجائے تو النھی یقتضی الفساد.
    تو نکاح یہاں پر فاسد ہے
     
  10. ‏ستمبر 19، 2019 #30
    سید طہ عارف

    سید طہ عارف مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 18، 2016
    پیغامات:
    725
    موصول شکریہ جات:
    135
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    جب کسی فعل فعل کی ذات یا صفت سے متعلق کسی بات میں نھی آجائے تو النھی یقتضی الفساد کا معروف قاعدہ ہے.
    لہذا یہ بات درست نہیں کہ حلالہ سے حلال تو ہوجاتی ہے جہاں ملعون ہی سہی
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں