1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ایک مجلس کی دو طلاقیں اور حلالہ؟

'محدث فتویٰ' میں موضوعات آغاز کردہ از رانا ابوبکر, ‏ستمبر 19، 2013۔

  1. ‏ستمبر 19، 2013 #1
    رانا ابوبکر

    رانا ابوبکر ناظم خاص رکن انتظامیہ
    جگہ:
    بورے والہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 24، 2011
    پیغامات:
    2,055
    موصول شکریہ جات:
    3,032
    تمغے کے پوائنٹ:
    432

    السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
     
    • پسند پسند x 1
    • ناپسند ناپسند x 1
    • لسٹ
  2. ‏ستمبر 19، 2013 #2
    رانا ابوبکر

    رانا ابوبکر ناظم خاص رکن انتظامیہ
    جگہ:
    بورے والہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 24، 2011
    پیغامات:
    2,055
    موصول شکریہ جات:
    3,032
    تمغے کے پوائنٹ:
    432

  3. ‏ستمبر 19، 2013 #3
    ideal_man

    ideal_man رکن
    شمولیت:
    ‏اپریل 29، 2013
    پیغامات:
    258
    موصول شکریہ جات:
    482
    تمغے کے پوائنٹ:
    79

    صحت سوال سے صاحب سوال کی ذہنی کیفیت کا بخوبی اندازہ ہورہا ہے۔
    یہ سوال ہی جہالت، فتنہ یا شعبدہ بازی کا کمال ہے۔
    بعض شعبدہ باز قسم کے لوگ ہوتے ہیں جو اس قسم کے سوال تراش کر علماء احناف کو بدنام کرنے یا اس کے خلاف فتنہ کھڑا کرنے کی جستجو کو اپنا نصب العین اور مذہبی فریضہ سمجھتے ہیں۔
    یہ سوال بھی اسی مزہبی فریضہ کا کمال ہے۔ انا للہ وانا الیہ راجعون
    دو طلاقوں کے بعد کونسا حنفی عالم ہے جو حلالہ کا مشورہ دیتا ہے؟؟؟؟
    جبکہ سوال میں کسی جاہل مولوی صاحب کا ذکر نہیں ہورہا بلکہ علماء احناف کا ذکر ہورہا ہے، یعنی ایک ، دو عالم نہیں علماء احناف نے فتوی دیا ہے کہ دو طلاقوں کے بعد حلالہ کروایا جائے۔
    انا للہ وانا الیہ راجعون
    قصہ کے جھوٹے ہونے کی بڑی دلیل ہی یہی ہے کہ کسی جاہل مولوی کا نہیں بلکہ علماء احناف کے فتوی کا ذکر کیا ہے جو دوطلاقوں پر حلالہ کا حکم دیتے ہیں۔
    جو شخص جھوٹ ، خیانت، بد دیانتی کاسہارا لے کر فتنہ پھیلاتا ہے اللہ تعالی اس سے عقل بھی چھین لیتا ہے۔
    اللہ تعالی ہم پر رحم فرمائے اور ہمارے اذہان و قلوب کو ایسی خباثتوں سے محفوظ فرمائے۔
    نوٹ: میرے اس رد عمل کا تعلق صحت سوال اور صاحب سوال سے ہے، سوال کے تحت دئے گئے جواب سے کوئی تعلق نہیں۔
    شکریہ
     
    • پسند پسند x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏ستمبر 21، 2013 #4
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    میرے دوست نے سوال کو صحیح طرح پڑھا ہی نہیں ہے۔ کہ سوال کیا کیا گیا ہے؟ اگر سوال غور سے پڑھ لیتے تو اتنی اچھی زبان استعمال کرنے کی نوبت ہی نہ آتی۔

    موصوف سے ہمارا سوال ہے کہ فقہ حنفی کی رو سے بتاؤ کہ

    1۔ ایک آدمی اپنی بیوی کو ایک طلاق دیتا ہے۔ اس کے بعد تین ماہ گزر جاتے ہیں۔ نہ رجوع کرتا ہے۔ اور نہ دوسری اینڈ تیسری طلاق دیتا ہے تو کیا یہ طلاق واقع ہوگی کہ نہیں ؟ ۔۔۔ اگر طلاق واقع ہوگی تو دوبارہ اس عورت سے نکاح کی کیا صورت ہوگی؟
    2۔ ایک آدمی اپنی بیوی کو دو طلاقیں ایک ہی مجلس میں دیتا ہے۔ اور پھر تین ماہ گزر جاتے ہیں ۔طلاق دیے جانے کے بعد نہ وہ رجوع کرتا ہے۔ اور نہ وہ تیسری طلاق دیتا ہے۔ تو کیا یہ طلاق واقع ہوگی کہ نہیں ؟ ۔۔۔۔ اگر طلاق واقع ہوگی تو دوبارہ اس عورت سے نکاح کی کیا صورت ہوگی؟
     
  5. ‏ستمبر 21، 2013 #5
    ideal_man

    ideal_man رکن
    شمولیت:
    ‏اپریل 29، 2013
    پیغامات:
    258
    موصول شکریہ جات:
    482
    تمغے کے پوائنٹ:
    79

     
  6. ‏ستمبر 24، 2013 #6
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    دوست سوالات کے جو جوابات دیے ہیں۔ فقہ حنفی سے کوئی دلیل بھی پیش کرسکتے ہیں ؟
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • ناپسند ناپسند x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں