1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

بنی ہاشم کو زکوۃ دے سکتے ہیں؟

'مصارف' میں موضوعات آغاز کردہ از شیخ نوید, ‏جون 17، 2014۔

  1. ‏جون 17، 2014 #1
    شیخ نوید

    شیخ نوید رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جون 07، 2014
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    36

    سلام !

    قال اللہ تعالی انما الصدقات للفقراء وقال رسول اللہ علیہ السلام فی الخبر الواحد لا یحل لکم یا اہل البیت من الصدقات شی

    1) جو لوگ خبر واحد کی ظنیت کے قائل ہیں وہ قطعی الدلالۃ للفقراء کے مطلق کو اس خبر واحد کے لا یحل لکم سے کیونکر مقید کر ڈالتے ہیں اور کہتے ہیں

    بنی ہاشم کو زکوۃ دینا جائز نہیں؟

    2) نیز خبر واحد کے من الصدقات شئ کے الصدقات سے استدلال کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ یہاں نافلہ و واجبہ دونوں مراد ہیں یعنی بنی ہاشم کو دونوں نہیں دے سکتے اور قرآن کے الصدقات للفقراء کے الصدقات سے صرف واجبہ مراد لیتےہیں یہ کیوں؟

    بینو و تواجروا
     
    Last edited: ‏جون 17، 2014
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں