1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

تبصرہ جات ماہنامہ رُشد قراء ات نمبر

'علم القراءات' میں موضوعات آغاز کردہ از ساجد, ‏اپریل 05، 2012۔

  1. ‏اپریل 05، 2012 #51
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    [ ۲ ]


    اس ماہ علمی تحائف میں سب سے اَہم تحفہ، لاہور سے شائع ہونے والے ماہنامہ ’رُشد‘ کے خصوصی شمارے قراء ات نمبر کی دوسری جلد ہے… کلیّۃ القرآن الکریم والعلوم الإسلامیۃ لاہور کا یہ شاہکار ۹۳۶ صفحات پر مشتمل ہے۔ اُردو زبان میں قرا ء ات کے حوالہ سے ہونے والا یہ کام اس دور کا ایک بڑا کام ہے۔ جن حضرات نے فن قرائات پراس بار لکھا ہے اُنہوں نے بڑی عرق ریزی سے مقالات مرتب کیے ہیں۔ ڈاکٹرحافظ حمزہ مدنی اور اُن کے رفقاء کی یہ کاوش قابل ِستائش ہے کہ علوم القرآن اور بالخصوص قراء اتِ قرآن کی جن باتوں کو لوگ بھولتے جارہے تھے انہیں ایک بار پھر ذہنوں میں تازہ کردیا گیا ہے۔اگرچہ بعض حضرات اسے تحسین کی بجائے تنقید کی نظر سے دیکھ رہے ہیں اور ان کے خیال میں ایسا کرنے سے قرآن کریم کے بارے میں بعض شکوک و شبہات پیدا ہوسکتے ہیں، تاہم علم تو علم ہے اور قراء ات کے علم سے ناواقفیت اور نامانوسیت اس تنقیدی نگاہ کا اصل چشمہ ہے۔ اَزمنہ ماضیہ میں اَسلاف نے اس پر بہت کچھ لکھا ہے مگر اُردو خواں طبقہ کی چونکہ وہاں تک دسترس نہیں اس لیے اس کے بارے میں مختلف خیالات کا پیدا ہونا اَمر لابدی ہے۔ ندعو اﷲ أن یوفقنا بفہم القرآن و علوم القرآن و بفہم القراء ات المختلفۃ المذکورۃ في السنۃ المطہرۃ … واﷲ ولی التوفیق۔
    علمی و تحقیقی مجلہ ’فقہ اسلامی‘ گلشن اقبال، کراچی​
     
  2. ‏اپریل 05، 2012 #52
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    [ ۳ ]


    ماہنامہ ’رُشد‘ کے قراء ت نمبر کا حصہ دوم (ستمبر۲۰۰۹ء) پیش نظر ہے۔ یہ حصہ بھی حصہ اَوّل ہی کی طرح قراء ت کے بارے میں معلومات کا بیش بہا خزانہ ہے۔ اس حصہ کا اِداریہ محترم محمدعطاء اللہ صدیقی کا تحریر کردہ ہے جو صاحب طرز ادیب ہیں۔
    اس حصہ میں چودہ جامع عنوانات کے تحت ۵۳ مضامین شامل کیے گئے ہیں جو وسیع مطالعہ کا نچوڑ ہیں۔ جامع عنوانات حسب ذیل ہیں:
    حدیث و سنت، حجیت قراء ت، فتاویٰ جات، تاریخ قراء ت، حدیث سبعہ اَحرف، مباحث ِقراء ت، اعجازِ قرآنی، تحقیق و تنقید، اِنکار ِقراء ت ، علوم القرآن، متفرقات، اِنٹرویوز، کتابیات اور سیرو سوانح۔
    ان جامع عنوانات میں سے ہر ایک کے تحت متعدد مضامین ہیں۔ ان میں عربی مضامین کے تراجم بھی شامل ہیں۔ شیخ الحدیث حافظ ثناء اللہ مدنی﷾ کا مضمون ’قراء ت ِمتواترہ کی حجیت‘ مولانا سیدابوالاعلیٰ مودودی﷫ کا مضمون ’قرآن مجید میں قراء توں کا اِختلاف‘ جیسے دقیع مضامین اور قراء تِ متواترہ کا اِنکار کرنے والوں کا مدلل اور مسکت جواب ہے۔
    فنِ قراء ت کے مختلف پہلوؤں پر لکھے گئے اور بھی بہت سے مضامین شامل اِشاعت ہیں۔
    قراء تِ متواترہ کا ثبوت اور اس کے منکر کا حکم اَزمولانا مبشراحمدربانی، قراء تِ متواترہ، سبعہ و عشرہ اَزقاری صہیب اَحمد میرمحمدی، متنوعِ قرائات کا ثبوت مصاحف عثمانیہ کی روشنی میں اَزقاری نجم الصبیح تھانوی، سبع اَحرف سے کیا مراد ہے؟ اَزڈاکٹر ابومجاہد عبدالعزیز قاری، حدیث سبع اَحرف کا مفہوم اَزقاری محمد اِدریس العاصم، تعارفِ علم القراء ت اَزڈاکٹرحافظ حمزہ مدنی، اَحکام فقہ میں قراء تِ قرآنی کے اَثرات اَزڈاکٹر نبیل بن محمد ابراہیم، اس کے چند اَہم موضوعات ہیں۔
    اس کے علاوہ شیخ القراء محمد ادریس العاصم﷾ اور حافظ عبدالرحمن مدنی﷾ کے اِنٹرویوز بھی شامل ہیں۔ سابقہ اَدوار میں لکھی گئی کتبِ قراء ت کا جائزہ بھی پیش کیا گیا ہے۔ فقہائے اَحناف، فقہائے مالکیہ، فقہائے شافعیہ اور فقہائے حنبلیہ کے قراء کرام کے طبقات اور اُن کے اَسمائے گرامی بھی دیئے گئے ہیں۔
    سیروسوانح کے عنوان کے تحت امام ابوالقاسم شاطبی﷫ اور علامہ علی محمد الضباع﷫ کے حالات زندگی دیئے گئے ہیں۔ یہ رسالہ رنگا رنگ مضامین کا ایک عمدہ اور خوب صورت گلدستہ ہے۔ ہرلائبریری کی لازماً زینت بننا چاہئے۔
    ملک عصمت اللہ قلعوی، ہفت روزہ’الاعتصام‘ لاہور​
     
  3. ‏اپریل 05، 2012 #53
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    [ ۴ ]


    شائقین علم قراء ت کیلئے بیش قیمت علمی تحفہ: ماہنامہ ’رُشد‘ لاہور کا قراء ات نمبر (حصہ دوم)
    معروف مذہبی اَسکالر حافط عبدالرحمن مدنی کے زِیرسرپرستی اِدارہ جامعہ لاہو رالاسلامیہ کے شعبہ کلیَّۃُ القرآن الکریم او رمجلس تحقیق الاسلامی، لاہور کے تعاون سے ماہنامہ ’رُشد‘ کا قراء ات نمبر، (حصہ دوم) شائع ہوچکا ہے۔

    خصوصیات
    ٭ علم تجوید و قراء ات پر پچاس سے زائد گراں قدر مضامین۔
    ٭ اُردو زبان میں پہلی مرتبہ علم قراء ات کے موضوع پر بیش قیمت مواد کی فراہمی۔
    ٭ عرب و عجم کے نامور علمائ، دانشور اور قرائِ حضرات کے تحقیقی مضامین کا شاندار مجموعہ۔
    ٭ اِنتہائی سنجیدہ اَنداز میں عقلی و نقلی دلائل سے معترضین و منکرینِ قراء ات کے شکوک و شبہات کا اِزالہ۔
    ٭ علم قراء ات پر اندرون و بیرون ملک کی مختلف یونیورسٹیوں میں لکھے گئے ۶۰ سے زائدتحقیقی مقالہ جات کی فہرست۔
    ٭ دیدہ زیب طباعت، خوبصورت کمپوزنگ، معیاری سفید کاغذ اور فورکلر ٹائٹل۔
    ٭ ۹۳۶ صفحات پر مشتمل شمارے کی قیمت صرف ۳۰۰ روپے ہے۔
    پندرہ روزہ ’صحیفہ اہلِ حدیث‘ کراچی​
     
  4. ‏اپریل 05، 2012 #54
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    [ ۵ ]


    زِیر تبصرہ ماہنامہ ’رُشد‘ جامعہ لاہور الاسلامیہ کے طلباء کا ترجمان ہے۔طلباء اس ماہنامہ کے ذریعے اپنی تحریری صلاحیتوں میں نکھار پیدا کرتے ہیں۔ طالبان علم و فکر نے ستمبر ۲۰۰۹ء کے شمارے کو خاص نمبر کی حیثیت سے علم کے موتی چننے والوں کی خدمت میں پیش کیا ہے۔اِس طرح کا اَنداز اس سے قبل چند ایک مجلات نے اختیار کیا لیکن وہ صرف قرآن نمبر تک محدود رہے۔ جامعہ لاہور الاسلامیہ کے طلباء نے قراء ات نمبر شائع کرکے ایک کارنامہ سرانجام دیا ہے۔ یہ صرف خصوصی اِشاعت تک محدود نہیں بلکہ اپنے موضوع پر ’رُشد‘ کے اس نمبر کو انسائیکلو پیڈیا کی حیثیت حاصل ہوگئی ہے۔ قرآن حکیم وحی الٰہی ہے یہ وہ شاہ کلید ہے جو دلوں کے بند دریچوں کو کھول کر ہدایت سے بھر دیتی ہے۔ اس کی حقانیت مجبور کردیتی ہے کہ بندے نے اپنے دل میں جو تصوراتی خدا اور بت سجا رکھے ہیں، ان کو پاش پاش کرکے اس قرآن کے حروف کو بسا لے۔ قرآن نے صرف دلوں کی کایا نہیں پلٹی بلکہ اَن گنت لوگوں کو ضلالت و گمراہی اور جہنم کی آگ سے نجات دلا کر جنت کا راہی بنایا۔ کفار مکہ اپنے دوستوں کو یہ مشورہ دیتے تھے کہ تم جب باہر نکلو تو کانوں میں روئی ٹھونس لینا کہ کہیں محمد1 کی زبان سے وحی الٰہی سن کر اس کے نہ ہوجانا۔ لیکن حق تو حق ہے یہ اپنے آپ کو منوا لیتا ہے۔ قرآن کی تلاوت سے دلوں کو جو سکون ملتا ہے وہ کسی مغنیہ کی خوبصورت آواز میں گائے نغمے، کسی بھگت کے گائے بھجن میں نہیں ہے۔ قاری قرآن کی مترنم آواز کانوں کی راہ سے گزر کر دل میں جب اترتی ہے تو انبساط ونشاط کے عجب جذبات پیدا ہوتے ہیں۔ قرآن کی تلاوت کے حوالے سے مستشرقین اور دیگر سطحی علم رکھنے والے جہاں خود شکوک و شبہات کا شکار ہوتے ہیں وہیں یہ کئی عام لوگوں کی گمراہی کا سبب بنتے ہیں۔ قرآن کی آیات کی قرا ء ت کے مختلف اَندا ز ان کی سمجھ سے بالا ہیں۔
     
  5. ‏اپریل 05، 2012 #55
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    نبی رحمتﷺنے فرمایا کہ یقیناً یہ قرآن حکیم سات قراء توں پر نازل ہوا ہے۔ ماہنامہ ’رُشد‘ نے اس حدیث کو بنیاد بنا کر علماء ِکرام اورقراء ِعظام کے فتاویٰ جات اور بیش قیمت مضامین کو جمع کرکے یہ قراء ت ِمتواترہ کی حجیت، جمع قرآن اور مصاحفِ عثمانیہ میں قراء ت، تعارفِ علم القراء ت، اَحرف سبعہ اور ان کا مفہوم، حنابلہ، شوافع، اَحناف اور مالکی قراء ِکرام کا تعارف پیش کردیاہے۔
    علاوہ اَزیں علم تفسیر پر قراء ت کے اَثرات، دفاعِ قراء ت، جمع قرآن اور پرویزی اَفکار کا جائزہ جیسے علمی مضامین ’رُشد‘ کے اس خصوصی نمبر کا حصہ ہیں۔ قرا ئاتِ سبعہ و عشرہ کے مطالعہ کے لیے اس سے بہتر علمی ذخیرہ شاید ہی ہو۔ اس خصوصی نمبر کو دو حصوں میں شائع کیا گیا ہے۔ دوسرا حصہ ۹۴۰ صفحات پر مشتمل گویا ایک ضخیم دستاویز ہے۔ اس کا ہر صاحب علم اور طالبان علم کے پاس ہونا ضروری ہے۔ ۹۴۰ صفحات کے اس نمبر کی قیمت ۳۰۰ روپے رکھی گئی ہے اور یہ جامعہ لاہو رالاسلامیہ ماڈل ٹاؤن سے دستیاب ہے۔
    عبداللہ بخش، ہفت روزہ اہلحدیث ، لاہور​
     
  6. ‏اپریل 05، 2012 #56
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    [ ۶ ]


    قرآن کریم ’کلام اللہ‘ ہونے کے ساتھ باری تعالیٰ کی ایسی صفت ہے جو سات حروف کی صورت میں محمد رسول اللہﷺکے قلب اَطہر پر اُتارا گیا، یہ ساتوں قراء ات صحیح، قطعی اور متواتر اَحادیث سے ثابت ہیں۔ صحیح حدیث ’’أُنْزِلَ الْقُرْآنُ عَلـٰی سَبْعَۃِ أَحْرُفٍ… الخ‘‘(صحیح البخاري: ۴۹۹۰) کی تائیدو توثیق میں ساڑھے سات سو روایات موجود ہیں، اسی وجہ سے اُمت کا اس بات پر اِجماع ہے قیامت تک آنے والے مسلمانوں کو قران مجید متنوع لغات و لہجات میں پڑھنے کی اِجازت ہے۔
    عصر حاضر میں یوں محسوس ہوتا تھا کہ جیسے قرآن کریم ایک ہی لہجے میں اُترا ہے اور قیامت تک اسی لہجے میں پڑھا جائے گا کیونکہ جب ہم سات قراء توں میں پڑھنے کی اِجازت والی اَحادیث سنتے ہیں تو علماء کے سوا دنیا دارطبقہ ان قراء توں میں قرآن کی تلاوت کو مختلف عنوانات اور متنوع اَنداز میں اشکالات و اعتراضات کی بوچھاڑ کردیتا ہے۔ اگر آج ہماری مساجد میں مشہور قراء ت کو چھوڑ کر بقیہ چھ قراء توں کی تلاوت شروع ہوجائے تو ۸۰ فیصد نمازی اِمام پر غلط قرآن پڑھنے کا فتویٰ لگا دیں، یہ تمام صورت حال قرآنی علوم خاص کر قراء اتِ سبعہ کو نظر اَنداز کرنے کا شاخسانہ ہے، اس حوالے سے عوام و خواص میں شعور اُجاگر کرنے کے لئے ماہنامہ ’رُشد‘ نے کلیدی کردار اَدا کیا ہے۔ ماہنامہ ’رُشد‘ کے ذمہ داران نے ’قراء ات نمبر‘ نکال کر اس موضوع کی تشنگی کو دور کردیا ہے، میری ناقص معلومات کے مطابق اس اہم ، پیچیدہ اور علمی موضوع پر اس سے بہتر کام برصغیر پاک و ہند میں نہیں ہوا۔ یہ خاص نمبر ایک اِنسائیکلو پیڈیا کی حیثیت رکھتا ہے، اُردو زبان میں یہ ایک نادر، علمی اور قابلِ قدر کاوش ہے، اللہ تعالیٰ ماہنامہ ’رُشد‘ کے ذمہ داران او رجملہ معاونین کی اس محنت کو شرف قبولیت سے نوازے۔ آمین
    ماہنامہ ’آب حیات‘ لاہور​
     
  7. ‏اپریل 05، 2012 #57
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    [ ۷ ]


    ماہنامہ ’رُشد‘ کا پہلا تعارف حافظ یحییٰ رسو لنگری ﷾ کی زبانی حاصل ہوا تھا۔ ’رسالہ‘ دیکھنے پر معلوم ہوا کہ دور حاضر میں ’جدید اِعتزال‘ کے جراثیم سے محفوظ و مامون رہنے اور ’راہ اعتدال‘ پر باقی رہنے کیلئے کافی وافی رہنمائی اس میں موجود ہے۔ واقعتاً اس پُرفتن دور میں ’رشد‘ باعث رشد و ہدایت ہے کہ جو اپنی بہترین ٹیم کے ساتھ میدان عمل میں اُتر کر اس اُمت کے فرزندوں کو کتاب و سنت اور فہم سلف صالحین سے جوڑنے کا فریضہ سرانجام دے رہا ہے۔ گویا کہ احباب اور رفقاء ’رشد‘ ینفون عنہ تحریف الغالین وتأویل الجاھلین وانتحال المبطلین‘‘ کے عملی مصداق ہیں اور یقینا انہی کیلئے ’طوبیٰ‘ ہے کہ یہی اس کام کیلئے کوشاں ہیں جو حصول ’طوبیٰ‘ کیلئے بنیادی ہے۔ ’’الذین یصلحون إذا أفسد الناس من سنتي‘‘
    اللہ تعالیٰ تادیر ایسے بیدار مغز احباب و رفقاء کی حفاظت فرمائے اور اُن کی تمام سعی جمیلہ کو شرفِ قبولیت عطافرمائے۔ آمین! خصوصاً اس ماہنامہ کا دو ضخیم جلدوں پر مشتمل ’قراء ات نمبر‘ جو اِنتہائی قیمتی مضامین پر مشتمل ہے اور علم و درایت اور تعاقب فتنہ پرداز، جو از خود ’فتنہ عجم‘ ہے میں اپنی مثال آپ ہے۔ اس کے شائع کرنے والے ادارے کا یقینا اُردو دان طبقے پر بہت بڑا احسان ہے کہ اُردو میںاس ’قراء ات نمبر‘ سے پہلے اس موضوع پر اس قدر مواد دستیاب نہیں ہے۔ اَحباب اُردو خواں ضرور اِستفادہ کریں۔
    عبدالوکیل ناصر، ہفت روزہ ’حدیبیہ‘ کراچی،11؍دسمبر 2009ء​

    ٭_____٭_____٭
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں