1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

جموں و کشمیر میں جہاد .

'جنگ وجدال' میں موضوعات آغاز کردہ از آشیانہ, ‏اکتوبر 23، 2017۔

  1. ‏اکتوبر 23، 2017 #1
    آشیانہ

    آشیانہ مبتدی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 23، 2017
    پیغامات:
    5
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    18

    جموں و کشمیر میں نظریہ پاکستان جہاد کی بنیاد ہے. کیا اس نظریے کے تحت جہاد شرعی حیثیت سے درست ہے. رہنمائی فرمائیں

    Sent from my SM-G610F using Tapatalk
     
  2. ‏اکتوبر 23، 2017 #2
    محمد المالكي

    محمد المالكي رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 01، 2017
    پیغامات:
    401
    موصول شکریہ جات:
    153
    تمغے کے پوائنٹ:
    47

  3. ‏اکتوبر 24، 2017 #3
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

  4. ‏اکتوبر 24، 2017 #4
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,649
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    اگر ''سپر پاکستانی'' ہضم کر سکیں تو عرض ہے کہ:
    تقسیم ہند کے معاہدے کی رو سے آزاد ریاستوں کے راجا ، مہاراجا، ناظم کو یہ اختیار تھا کہ وہ چاہیں تو بھارت سے الحاق کریں، اور چاہیں تو پاکستان سے الحاق کریں!
    کشمیر کے راجا نے بھارت سے الحاق کا کیا! اب اس معاہدے کو تسلیم نہیں کرنا، تو پاکستان کا ہی انکار کردیں! اور پاکستان کے قیام کو اس معاہدے کے تحت درست کہتے ہو، تو کشمیر کے حوالہ سے راجا کے حق کو تسلیم کریں!
    یہ کہنا بھی سود مند نہ ہوگا کہ کشمیری تو مسلمان ہیں، ان کی زمین کا فیصلہ ایک غیر مسلم راجا کیوں کر کر سکتا تھا! کہ ساری باتوں سے قطع نظر قیام پاکستان کے معاہدے میں اسے تسلیم کیا گیا تھا!
    ہاں ! وہ حیدرآباد دکن! وہ جوناگڑھ!
    یہ کیوں یاد نہیں آتا کہ یہ وہ ریاستیں تھی جس نے پاکستان سے الحاق کیا تھا!
    یہ کشمیر کا معاملہ بھی ہمارے ''سپر پاکستانی'' کشمیریوں کے لئے نہیں، بلکہ اپنے مفاد کے حصول کے لئے اٹھا رکھتے ہیں!
    اب کیا کریں کہ بات تو سچ ہے، مگر بات ہے رسوائی کی!
    اور ہاں ! جب میں نے ''سپر پاکستانیوں'' کو چھیڑ ہی دیا ہے، تو ایک بات اور کر لوں!
    ہمارے ''سپر پاکستانیوں'' نے برما میں مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کے حوالہ سے آواز اٹھائی کہ انہیں پاکستان لے آیا جائے! اور بنگلہ دیش پر بہت تنقید کی کہ وہ انہیں بنگلہ دیش میں داخل نہیں ہونے دیتا!
    یہ سب بجا ہے! لیکن لیکن!
    یہ بھی تو بتلاؤ کہ بنگلہ دیش میں 40 سال سے محصور پاکستانیوں کو، کہ جو پاکستانی ہیں، انہیں تو پاکستان لائے نہیں! اور یہی پاکستانی کہتے ہیں کہ اگر وہ پاکستان آگئے تو ہم ''اصل پاکستانی'' کہاں جائیں گے!
    سو باتوں کی ایک بات!
    جہاد کے نام پر مفادات کا دھندا بند کیا جائے!
    جہاد و قتال فی سبیل اللہ کو فی سبیل اللہ ہی رہنے دو!
     
  5. ‏اکتوبر 24، 2017 #5
    ابن طاھر

    ابن طاھر رکن
    جگہ:
    ارض الله
    شمولیت:
    ‏جولائی 06، 2014
    پیغامات:
    160
    موصول شکریہ جات:
    53
    تمغے کے پوائنٹ:
    75

    اور کشمیر میں جاری ظلم و ستم کا سلسلہ، کشمیریوں کا مطالبہ آزادی اور تقسیم ہند کے معاہدے کے مقابل کشمیریوں کا حق راے دہی براے آزادی--- یہ سب کس کروٹ بٹھائیں گے؟
    مفادات پاکستان کی بات تو کر دی گئی اور اس میں کوئی حقیقت ہو تو کوئی حیرت بھی نہیں، مگر انڈیا کے مفاد کا تذکرہ کہاں ہو گا جو وہاں پر زندہ لاشیں بنا رہا ہے؟ مسلہ پاکستان کا تو بیان کر دیا گیا، مسلہ کشمیر کا بیان کیسے اور کہاں ہو گا؟ اگر کشمیری بھی اپنے حق اور ظلم کے خلاف احتجاج کریں اور دوسرے مسلم اس میں شریک ہوں تو پھر کیا بیان ہو گا؟

    اس بات سے بالکل متفق کہ:
    "جہاد و قتال فی سبیل اللہ کو فی سبیل اللہ ہی رہنے دو!"
     
  6. ‏اکتوبر 24، 2017 #6
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,649
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    اس تھریڈ کے پہلے مراسلہ کو دیکھیں! اسی کے تناظر میں بات کی ہے!
    رہی بات بھارت کے کشمیر میں مظالم کی!
    تو بھارت تو ظالم ہے، غیر مسلم حکومت ہے، دشمن ہے! اس سے عدل و انصاف کی امید کیوں؟
    مسئلہ یہ ہے کہ ہم کیا کرتے ہیں!
    تو میرے بھائی ! یا تو اتنی تپڑ ہو کہ بھارت کو کشمیر سے بزور طاقت باہر دھکیلا جا سکے، تو کیجیئے!
    اور اگر نہ اس کی لیاقت ہو، نہ تپڑ، تو پھر یہ پنگے بازی سے بھارت کو مشتعل کرکے کشمیریوں کے لئے زندگی اجیرن کرنے کا سبب نہیں بننا چاہیئے!
    بلکہ کوئی ایسی راہ اختیار کرنا چاہیئے، کہ جس سے کشمیری مسلمانوں کی بھلائی ہو!
    وہ ایک شعر ہے!
    ہو صداقت کے لیے جس دل میں مرنے کی تڑپ
    پہلے اپنے پیکرِ خاکی میں جاں پیدا کرے
     
  7. ‏اکتوبر 24، 2017 #7
    ابن طاھر

    ابن طاھر رکن
    جگہ:
    ارض الله
    شمولیت:
    ‏جولائی 06، 2014
    پیغامات:
    160
    موصول شکریہ جات:
    53
    تمغے کے پوائنٹ:
    75


    وعلیکم سلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ-
    بالکل صحیح. میرا نشاندہی کا مقصد صرف یہی تھا کہ تصویر کا ایک ہی رخ ہی نہ پیش کیا جائے کہ قصور صرف یار لوگوں کا ہی نکلے، باقی بات اتنی ہے کہ الله صراط مستقیم کی ہدایت دے- آمین.

    جہاں تک تپڑ کی بات ہے تو اس کا آج کے موجودہ حالات میں کہیں بھی بالواسطہ طریقے سے ممکن نہیں. اور پھر وہی "دائرہ بحث لاحاصل" کہ پہلے ریاست لاؤ، سیٹ اپ لاؤ، امیر لاؤ، جماعت لاؤ اور پھر----- بہرحال اس "پنگے بازی" کا "بہانہ" بہت استعمال کیا گیا کہ صرف "اسی" وجہ سے ہی کشمیریوں کی زندگی تباہ ہے، ورنہ تو وہاں سکون کے ندی نالے، پیار کے چشمے اور محبّت کے گیت ہی سنائی دیں. میرا خیال ہے کہ آپ بھی متفق ہیں کہ وجہ صرف یار لوگوں کی "پنگے بازی" نہیں.
    میرے سمیت کوئی بھی ١٠٠ فیصد متفق ہو گا اس راہ کے اختیار کرنے پر جو کشمیری مسلمانوں کی بھلائی کی ہو مگر وہ کیا ہو؟، اس کی کوئی کوشش نہیں کی گئی؟؟؟ سیدھے اور دنیاوی طریقے سے تو اقوام متحدہ نے اپنی چین چین کر کے دیکھ لیا، قراردادیں پیش کر کر کے دیکھ لیں مگر نتیجہ؟
    اس کا قطعا یہ مطلب نہیں ہے کہ صرف تشدد یا "قتال" ہی راستہ رہ گیا ہو گا (اور اگر یہی راستہ رہ گیا ہو تو بھی حیرت نہیں)، لیکن اگر "تپڑ" کے حصول کا ہی انتظار رہا تو وہ کل بھی لاحاصل تھا، آئندہ بھی لاحاصل رہے گا.

    الله، فضاۓ بدر پیدا کرنے کی توفیق دے. آمین.
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں