1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

جواب چاہتا ہوں.

'تقلید واجتہاد' میں موضوعات آغاز کردہ از buttnajeeb3, ‏جولائی 10، 2015۔

  1. ‏جولائی 10، 2015 #1
    buttnajeeb3

    buttnajeeb3 مبتدی
    شمولیت:
    ‏جولائی 10، 2015
    پیغامات:
    2
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    2

    السلام عليكم. محدث فورم کے بارے میں دوست نے جانکاری دی. عرض ھے کہ ایک عام مسلمان تقلید کے بغیر اسلام کے کیسے عمل کرسکتا ہے؟
     
  2. ‏جولائی 10، 2015 #2
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,402
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    وہ اس طرح کہ ہر دینی مسئلہ پر قرآن و حدیث سے براہ راست خود ۔۔یا۔۔کسی جاننے والے کے ذریعے راہنمائی لے ؛
    جو جو عقائد اور اعمال قرآن و حدیث سے ثابت ہو جائیں ان بحیثیت دین قبول کرے ،اور جن چیزوں کی ممانعت ثابت ہوجائے ،انہیں ترک کردے
     
    • پسند پسند x 7
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  3. ‏جولائی 11، 2015 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,402
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    یعنی ہر چیز جو بحیثیت دین قبول کرے ،صرف دلیل شرعی کے ساتھ قبول کرے ،
    اور تقلید اس کے الٹ ،متضاد طریقہ کو کہا جاتا ہے ۔جس میں بلا دلیل کسی کی اطاعت کی جاتی ہے،
    مثلاً : اہل تقلید ۔۔صرف تقلید بنیاد پر نماز ،روزہ کی زبانی نیت پڑھتے ہیں ۔۔جبکہ زبانی نیت پڑھنے پر شرعی دلیل موجود نہیں،
     
    • پسند پسند x 3
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏جولائی 11، 2015 #4
    buttnajeeb3

    buttnajeeb3 مبتدی
    شمولیت:
    ‏جولائی 10، 2015
    پیغامات:
    2
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    2

    محترم ایک عام مسلمان جو خود دین کے بارے میں بے خبر ہے کو کسی عالم دین کی پیروی کرنی ہوگی؟
     
  5. ‏جولائی 11، 2015 #5
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,651
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم رحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    یعنی کہ امام ابو حنیفہ کے بعد حنفی مقلدوں میں کوئی عالم پیدا نہیں ہو!!
    ویسے یہ تو بتلائیے کہ امام صاحب کیا شکم مادر سے عالم پیدا ہوئے تھے؟
    کہ جب تک وہ وہ عالم نہ اور ایک عام مسلمان تھے، کس کی تقلید کرتے تھے؟
     
  6. ‏جولائی 11، 2015 #6
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    860
    موصول شکریہ جات:
    241
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    السلام علیکم بھائ

    آ پ علماء کی پیروی کو تقلید سمجھ رہے ہیں یہ آ پ کی غلط فہمی ہے جب کہ اہل علم نے علماء کی طرف رجوع کرنے کو تقلید نہیں کہا

    ۱- امام ابن حمام حنفی رحہ فرماتے ہیں

    مَسْأَلَةُ التَّقْلِيدِ الْعَمَلُ بِقَوْلِ مَنْ لَيْسَ قَوْلُهُ إحْدَى الْحُجَ بِلَا حُجَّةٍ مِنْهَا فَلَيْسَ الرُّجُوعُ إلَى النَّبِيِّ – صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ – وَالْإِجْمَاعُ مِنْهُ

    ککہ تقلید اس شخص کے قول پر بغیر دلیل کے عمل کو کہتے ہیں جسکا قول دلائل میں سے نہیں ہے پس نبی صلی اللہ علیہ وسلم اور اجماع کی طرف رجوع تقلید میں سے نہیں ہے

    تحریر ابن ھمام فی علم الاصول جلد 3 ص 453

    اسکی تشریح کرتے ہوئے ابن امیر الحجاج حنفی نے لکھا ہے

    مَسْأَلَةُ التَّقْلِيدِ الْعَمَلُ بِقَوْلِ مَنْ لَيْسَ قَوْلُهُ إحْدَى الْحُجَجِ) الْأَرْبَعِ الشَّرْعِيَّةِ (بِلَا حُجَّةٍ مِنْهَا فَلَيْسَ الرُّجُوعُ إلَى النَّبِيِّ – صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ – وَالْإِجْمَاعُ مِنْهُ) أَيْ مِنْ التَّقْلِيدِ عَلَى هَذَا؛ لِأَنَّ كُلًّا مِنْهُمَا حُجَّةٌ شَرْعِيَّةٌ مِنْ الْحُجَجِ الْأَرْبَعِ، وَكَذَا لَيْسَ مِنْهُ عَلَى هَذَا عَمَلُ الْعَامِّيِّ بِقَوْلِ الْمُفْتِي وَعَمَلُ الْقَاضِي بِقَوْلِ الْعُدُولِ؛

    کہ تقلید کسی شخص کے قول پر بغیر دلیل کے عمل کرنے کو کہتے ہیں جو ادلہ عربہ میں سے نہ ہو اور نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی طرف رجوع کرنا تقلید نہیں ہے اسی طرح عامی کا مفتی سے اور قاضی کا گواہوں کی گواہی کے مطابق فیصلہ کرنا تقلید نہیں ہے

    التقریر والتحبیر جلد 3 ص 433

    picsart_1432983412978.jpg

    اور تفصیل سے اگر جاننا ہے تو یہ میرا بلاگ پر تقلید کے موضوع پر جتنے بھی پوسٹ ہیں سب پڑھ لیجئے

    https://ahlehadithhaq.wordpress.com/category/taqleed/

    جزاک اللہ خیرا
     
  7. ‏جولائی 11، 2015 #7
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    860
    موصول شکریہ جات:
    241
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    امام ابن حاجب رحہ فرماتے ہیں

    ” فالتقليد العمل بقول غيرك من غير حجة وليس الرجوع الى قوله صلى الله عليه وسلم والى الاجماع والعامى الى المفتى والقاضى الى العدول بتقليد لقيام الحجة ”

    کہ اتباع رسول صلی اللہ علیہ وسلم ،وقت کے فقہاء کا اجماع،جاہل کا مفتی سے پوچھنا،قاضی کا گواہوں کی گواہی کے مطابق فیصلہ کرنا تقلید نہیں ہے

    منتہی الوصول والعمل من علم الاصول ص 163

    picsart_1432746979546.jpg

    جزاک اللہ خیر
     
  8. ‏جولائی 13، 2015 #8
    جوش

    جوش مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 17، 2014
    پیغامات:
    621
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    ایک عام آدمی دینی مسئلہ کسی ایسے عالم سے پوچھے جو قرآن و حدیث کا عالم ہو اس کی بات پر عمل کرے اسوقت وہ قرآن و حدیث ہی پر عمل کرے گا البتہ جو عالم قرآن و حدیث کے علاوہ کا جواب دیتا ہے اور سائل اس پر عمل کرتا تو یہ تقلید ہے
     
  9. ‏جولائی 21، 2015 #9
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    740
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    سب کے جوابات پڑھے۔ ایک عام مسلمان جو عربی سے بھی ناواقف ہو وہ قرآن و حدیث پر غور کیسے کرے گا عمل کرنے کے لیے؟
     
  10. ‏جولائی 21، 2015 #10
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,313
    موصول شکریہ جات:
    2,651
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    جس طرح عقائد کے کے باب میں، بغیر تقلید کے!!
    یاد رہے کہ عقائد کے باب احناف بھی تقلید کے قائل نہیں!!
     
    • پسند پسند x 3
    • شکریہ شکریہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں