1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

حافظ عبدالسلام فتح پوری صاحب رحمہ اللہ فوت ہوگئے

'اللہ تعالیٰ کے حضور دعا کریں' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد نعیم یونس, ‏نومبر 21، 2015۔

  1. ‏نومبر 21، 2015 #1
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,402
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    استاد محترم شیخ الحدیث والتفسیر (جامعہ رحمانیہ لاہور) عالم با عمل ، جناب حافظ عبدالسلام فتح پوری صاحب رحمہ اللہ وفات پاگئے۔
    اناللہ واناالیہ راجعون!
    اللھم اغفر لہ!
     
  2. ‏نومبر 21، 2015 #2
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,968
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ !

    انا للہ و انا الیہ راجعون
    اللہ تعالی ان کی مغفرت فرمائے۔
    انہیں اعلی علیین میں جگہ عطا فرمائے
    بغیر حساب و کتاب کے جنت الفردوس میں انھیں اور ہمیں اکٹھا فرمائے
    آمین یارب العالمین
     
  3. ‏نومبر 21، 2015 #3
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    و علیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    انا للہ و انا الیہ رجعون ، رحمہ اللہ رحمۃ واسعۃ
    استاد محترم ابو وقاص عبد السلام فتحپوری مشفق ، متقی ، پرہیز گار ، محنتی ، وقت کے پابند ، فرض شناس اور ہنس مکھ اور وفادار عالم دین تھے ۔
    ٹائپر الحروف کو آپ سے حدیث میں سنن ابوداؤد اور تفسیر میں نیل المرام پڑھنے کا شرف حاصل ہوا ، علم و فضل میں اپنے ہم عصر معروف علماء سے کسی طرح کم نہیں تھے ، البتہ شہرت ، منصب وغیرہ چیزوں سے کوئی سروکار نہیں تھا، طبیعت کی سادگی کا یہ عالم تھا کہ للہ فی اللہ دوسروں کے اغراض و مقاصد کے لیے اپنا قیمتی وقت صرف کرتے رہے ۔ اللہ شیخ کی مغفرت فرمائے ، اور انہیں فوز و فلاح کے اعلی منصب کا حقدار ٹھہرائے ۔
     
  4. ‏نومبر 21، 2015 #4
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    مقدور ھو تو خاک سے پوچھوں کہ اے لئیم
    تو نے وہ گنج ھائے گراں مایہ کیا کیے؟!!!!!
    حضرت الاستاذ شیخ التفسیر مولانا عبد السلام فتح پوری صاحب جسی نابغہ روزگار شخصیت کا ھم سے بچھڑ جانا بلاشبہ اس فرمانِ نبویﷺ کا مصداق ھے کہ قربِ قیامت میں علم کو اٹھا لیا جائے گا اور اس کی صورت یہی ھو گی کہ پختہ کار اور باعمل علماء اس دنیا سے رخصت ھونے لگیں گے۔
    بارگاہِ ایزدی میں دعا ھے کہ وہ حضرت الاستاذ پر کروٹ کروٹ رحمت فرمائے، ان کی مرقد مبارک کو جنت کا باغیچہ بنا دے اور جنت میں بالا درجات پر انہیں فائز فرمائے۔۔۔ آمین
     
  5. ‏نومبر 21، 2015 #5
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    ایک اور چراغ گل ہوا
    شیخ التفسیر مولانا عبدالسلام فتح پوری
    آج بھی میں چشم تصور سے دیکھ سکتا ہو ابو داود شریف کا سبق اور جیسے ہی ٹائم شروع ہوا شیخ صاحب کتاب کا نسخہ سینے سے لگائے کلاس میں داخل ہو رہے ہیں اور ہر ایک کو ان کے سبق کا انتظار رہتا مسکراتا چہرہ اور پرسکون انداز ان کی آمد کے ساتھ ہی سب کے چہرے کھل جاتے ایک اچھا وقت تھا جو پر لگا کر گزر گیا
    ہم 2009 میں جامعہ رحمانیہ سے فارغ ہوئے اس کے بعد بہت کم ان سے ملاقات رہی ایک دن اطلاع ملی شیخ صاحب علالت کے باعث جامعہ کو خیر باد کہہ کر اپنے آبائی گاوں فتح پور جا چکے ہیں پھر کبھی کبھی ان کے بارے میں خبر آجاتی
    ہم اس بارے میں بڑے بد نصیب واقع ہوئے ہیں کہ اپنے محسنوں کو فراموش کر دیتے ہیں وہ اجتماعی سطح ہو یا انفرادی جب وقت گزر جاتا ہے تو ہم ان کے قصیدے لکھنا اور پڑھنا شروع کر دیتے ہیں اور ان کو زندگی میں کو وہ مقام نہیں دے پاتے جامعہ والے جب تک کام کرواتے رہے گے اس کے بعد ایسے بھول جاتے ہیں جیسا کوئی تھا ہی نہیں اسی طرح کا رویہ طلبا کا بھی اپنے اساتذہ سے ہے جو کہ انتہائی عجیب ہے اللہ ان کی مغفرت فرمائے اور ان کے ہزاروں طلبا کو ان کے لیے صدقہ جاریہ بنائے آمین ۔
    عبد الباسط بلوچ ، پرڈیوسر پیغام ٹی وی​
     
  6. ‏نومبر 21، 2015 #6
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    شیخ ہزاروں آنکھوں کو نم کر گئے ۔
    والله ایسی مبارک ہستیاں روز روز پیدا نہیں ہوتیں ۔
    قاری اکمل شاہین​
     
  7. ‏نومبر 21، 2015 #7
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    اک چراغ اور بجھا!۔۔انا للہ و انا الیہ راجعون
    استاذ الاساتذہ شیخ التفسیر مولانا عبدالسلام صاحب فتح پوری[سابق وکیل ،جامعہ لاہور الاسلامیہ،رحمانیہ] دار دانی سے کوچ فرما گئے ہیں؛مرحوم بلند پایہ عالم دین اور عابد و زاہد تھے؛برس ہا برس تک جامعہ رحمانیہ،نیو گارڈن ٹاون ،لاہور میں تفسیر، حدیث اور سیرت و تاریخ کا درس دیتے رہے؛کچھ عرصہ ادارۂ محدث سے منسلک مجلس التحقیق الاسلامی سے بھی وابستہ رہے اور بعض علمی مسودات کو اِڈٹ کیا؛بلا مبالغہ ہزاروں طلبہ ان کے علم و عمل سے مستفید ہوئے؛وہ جادو اور جنات سے متاثر مریضوں کا قرآنی آیات اور ماثور ومسنون دعاؤں کے ذریعے کام یاب روحانی علاج بھی کرتے تھے؛اللہ تعالیٰ نے ان کے ہاتھوں سیکڑوں لوگوں کو شفایاب فرمایا؛ مرحوم بے حد ملنسار خوش طبع تھے؛احقر کو بھی ان سے شرف تلمذ حاصل ہے۔تمام احباب سے استاذی المکرم کی مغفرت اور بلندیِ درجات کے لیے دعا کی درخواست ہے؛رب کریم ان کی بشری کم زوریوں سے درگزر فرمائے ؛ اخروی منازل آسان فرمائے اور ان کے فرزند برادرم حافظ وقاص(مدرس،مسجد القادسیہ،چوبرجی ،لاہور) سمیت تمام اہل خانہ کو صبر جمیل کی توفیق مرحمت فرمائے؛آمین یا الٰہ العالمین ۔
     
  8. ‏نومبر 21، 2015 #8
    makki pakistani

    makki pakistani سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مئی 25، 2011
    پیغامات:
    1,323
    موصول شکریہ جات:
    3,028
    تمغے کے پوائنٹ:
    282


    آمین یا رب
     
  9. ‏نومبر 21، 2015 #9
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    ( اعلان وفات ) بزرگ عالم دین ، استاذ العلماء ، استاذ جامعہ رحمانیہ لاہور مولانا حافظ عبدالسلام فتح پوری آج رضاء الھی سے اللہ تعالی کو پیارے ھوگئے ھیں ، انا للہ وانا الیہ راجعون ، اللہ رب العزت ان درجات بلند فرمائے اور اعلی علیین میں جگہ عطا فرمائے ، ماشاءاللہ ؛ حضرۃ شیخ رحمہ اللہ تعالی نے ساری زندگی خدمت دین میں گزاردی اللہ تعالی ان کی مساعی جمیلہ قبول فرمائے ، وہ صرف عالم دین اور کامیاب استاذ ھی نہیں بلکہ مجاہدِ اسلام بھی تھے ، مجھے یاد ھے 1988 میں افغانستان کے علاقہ( جاجی ) میں ھم ایک ماہ اکٹھے رھے جب روسی افواج کاابھی انخلا نہیں ھوا تھا ، حافظ محمد سعید صاحب حفظہ اللہ ، شیخ محمود باحاذق ، حافظ امانت اللہ المعروف عبدالرحمن الداخل ، حافظ سیف اللہ منصور رحمہ اللہ ، ابرار شھید ، عبدالمجید ابو صخر ، رحمہ اللہ ، سب حضرات نے استاذ المجاہدین بھائی ذکی الرحمن لکھوی سے ایک ماہ ٹریننگ لی تھی ، آہ ، کیا خوبصورت ماضی ھے ۔
    قاری نوید الحسن لکھوی ، مدرس جامعہ سلفیہ فیصل آباد​
     
  10. ‏نومبر 21، 2015 #10
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    انا للہ وانا الیہ راجعون
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں