1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

حدثنا، اخبرنا اور انبانا

'علوم حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از قاضی786, ‏ستمبر 01، 2015۔

  1. ‏ستمبر 01، 2015 #1
    قاضی786

    قاضی786 رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2014
    پیغامات:
    142
    موصول شکریہ جات:
    70
    تمغے کے پوائنٹ:
    61

    السلام علیکم

    امید ہے سب خیریت سے ہوں گے

    اکثر اوقات جب سند کو دیکھیں، تو مذکورہ بالا الفاظ ملتے ہیں

    ان میں کیا فرق ہے، یعنی یہ کہنا کہ

    حدثنا فلاں
    اخبرنا فلاں
    انبانا فلاں


    شکریہ
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
  2. ‏ستمبر 02، 2015 #2
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    815
    موصول شکریہ جات:
    236
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

  3. ‏ستمبر 02، 2015 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,168
    موصول شکریہ جات:
    2,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    777

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ ؛
    اس سے پہلے قاضی صاحب نے ( عبد الرزاق بن ہمام ) کے متعلق سوال کیا،جس کا بڑی محنت سے ،بڑا وقت لگا کر جواب دیا گیا ؛
    لیکن قاضی صاحب نے پلٹ کر اس تھریڈ کو دیکھا تک نہیں ۔۔۔
    اسلئے انکے اس سوال کا جواب نہیں لکھا کہ شاید انہیں میرا جواب دینا پسند نہ ہو ۔۔۔۔۔
     
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 2
    • معلوماتی معلوماتی x 2
    • لسٹ
  4. ‏ستمبر 02، 2015 #4
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    815
    موصول شکریہ جات:
    236
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    بالکل آ پ کی بات درست ہے
     
  5. ‏ستمبر 02، 2015 #5
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    اسحاق سلفی بھائی یہ فعل کی کوسی قسم سے ہے اور کس کا صغیہ ہے۔انبانا لفظ میرے لیے بھی نیا ہے۔لغت میں میں نے ان کے معنی تلاش کئے ہیں ۔غلظہ کی صورت میں اصلاح کردیں
     

    منسلک کردہ فائلیں:

    Last edited: ‏ستمبر 02، 2015
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  6. ‏ستمبر 03، 2015 #6
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,168
    موصول شکریہ جات:
    2,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    777

    Last edited: ‏ستمبر 03، 2015
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 3
    • علمی علمی x 2
    • لسٹ
  7. ‏ستمبر 03، 2015 #7
    قاضی786

    قاضی786 رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2014
    پیغامات:
    142
    موصول شکریہ جات:
    70
    تمغے کے پوائنٹ:
    61

    وعلیکم السلام و رحمۃ اللہ و برکاتہ

    ارے نہیں اسحاق بھائی، آپ تو ہمارے شیوخ میں شامل ہیں

    میں نے بالکل تھریڈ پڑھا تھا، اور آپکا جواب بالخصوص جو کلام آپ نے حافظ زیبر علی زئی مرحوم کا نقل کیا تھا
    وہ تو کمال تھا

    تاہم غلطی سے میں آپ کے جواب پر شکریہ نہیں ادا کر سکا
    اس کے لیے شرمندہ ہوں
    امید ہے معذرت قبول کر لیں گے

    اور برائے مہربانی جواب ضرور عطا کر دیا کریں

    شکریہ
     
    • پسند پسند x 3
    • شکریہ شکریہ x 2
    • لسٹ
  8. ‏ستمبر 03، 2015 #8
    اویس تبسم

    اویس تبسم رکن
    جگہ:
    گجرات،پاکستان
    شمولیت:
    ‏جنوری 27، 2015
    پیغامات:
    369
    موصول شکریہ جات:
    133
    تمغے کے پوائنٹ:
    80

    تِلْكَ مِنْ أَنبَاء الْغَيْبِ نُوحِيهَا إِلَيْكَ مَا كُنتَ تَعْلَمُهَا أَنتَ وَلاَ قَوْمُكَ مِن قَبْلِ هَـذَا فَاصْبِرْ إِنَّ الْعَاقِبَةَ لِلْمُتَّقِينَ ﴿سورۃ ہود:۴۹
    یہ خبریں غیب کی خبروں میں سے ہیں جن کی وحی ہم آپ کی طرف کرتے ہیں انہیں اس سے پہلے آپ جانتے تھے اور نہ آپ کی قوم، اس لئے آپ صبر کرتے رہیئے (یقین مانیئے) کہ انجام کار پرہیزگاروں کے لئے ہی ہے۔

    وَعَلَّمَ آدَمَ الأَسْمَاء كُلَّهَا ثُمَّ عَرَضَهُمْ عَلَى الْمَلاَئِكَةِ فَقَالَ أَنبِئُونِي بِأَسْمَاء هَـؤُلاء إِن كُنتُمْ صَادِقِينَ ﴿سورۃ البقرۃ:۴۹
    اور اس نے آدم کو سب (چیزوں کے) نام سکھائے پھر ان کو فرشتوں کے سامنے کیا اور فرمایا کہ اگر تم سچے ہو تو مجھے ان کے نام بتاؤ

    حدثنا:ہم سے بیان کیا
    انبانا: ہمیں خبر دی، یا بتایا
    اخبرنا:ہمیں بتایا ،یا خبر دی
     
    • پسند پسند x 4
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
  9. ‏ستمبر 03، 2015 #9
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,160
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    محترم ابن قدامہ بھائی انبانا دراصل دو چیزوں کا مرکب ہے یعنی انبا + نا
    1۔ انبا دراصل (ن ب ء) مادہ سے باب افعال سے ماضی مثبت معروف کا پہلا یعنی واحد مذکر غائب کا صیغہ ہے بروزن اَکرَمَ یعنی اس نے خبر دی
    2۔نا جمع متکلم کی متصل ضمیر ہے جو مفعول ہے یعنی ہم کو

    یہاں انباءالغیب میں انباء دراصل نبا کی جمع ہے یعنی خبریں
    اسی طرح انبئونی =(انبئو+ن وقایہ+ ی ضمیر متکلم)
    اس میں انبئوا دراصل اسی باب افعال سے امر حاضرمعروف کا جمع مذکر کا صیغہ ہے بروزن اَکرِمُوا یعنی تم خبر دو
     
    • پسند پسند x 3
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں