1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

حدیث کی تعریف اور اس کی اقسام

'حدیث وعلومہ' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد ارسلان, ‏فروری 14، 2014۔

  1. ‏فروری 14، 2014 #1
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    حدیث کی تعریف اور اس کی اقسام

    تعریف:
    حدیث کی نوعیت کے اعتبار سے تین اقسام ہیں۔
    حدیثِ قولی:
    مثال
    حدیثِ فعلی :
    مثال
    حدیثِ تقریری:
    مثال
    تھریڈ از مشکٰوۃ
     
  2. ‏فروری 14، 2014 #2
    مشکٰوۃ

    مشکٰوۃ سینئر رکن
    جگہ:
    اللہ کی رحمتوں کے زیر سائے ان شاء اللہ
    شمولیت:
    ‏ستمبر 23، 2013
    پیغامات:
    1,466
    موصول شکریہ جات:
    926
    تمغے کے پوائنٹ:
    237

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    توبہ ہے ارسلان بھائی!
    میں سمجھی کوئی پرانا تھریڈ ہے ۔۔اب کہا جائے گا یہاں سے کاپی پیسٹ کیا۔۔وہ تو آخر میں دیکھا کہ۔۔۔۔۔۔۔غصے والا آئیکون
    جزاک اللہ خیر فی الدارین
     
  3. ‏فروری 14، 2014 #3
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    جزاک اللہ خیرا

    سسٹر ٹینشن مت لیں، آخر میں لکھ دیا ہے "تھریڈ از مشکٰوۃ"
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏فروری 14، 2014 #4
    مشکٰوۃ

    مشکٰوۃ سینئر رکن
    جگہ:
    اللہ کی رحمتوں کے زیر سائے ان شاء اللہ
    شمولیت:
    ‏ستمبر 23، 2013
    پیغامات:
    1,466
    موصول شکریہ جات:
    926
    تمغے کے پوائنٹ:
    237

    وایاک
    بھائی!ٹینشن تو جو لینی تھی وہ لے لی ہے۔۔۔
    اللہ آپ کے حسنات میں برکت عطا فرمائیں۔۔آمین یا رب العالمین
     
  5. ‏فروری 14، 2014 #5
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    آمین
    جزاک اللہ خیرا
     
  6. ‏فروری 14، 2014 #6
    عامر رضا

    عامر رضا رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 25، 2013
    پیغامات:
    138
    موصول شکریہ جات:
    34
    تمغے کے پوائنٹ:
    32

    یہ تعریف اور اقسام آپ کی مقرر کردہ ہیں ؟ یا قرآن وحدیث میں کسی مقام پر ان تعریفات کا ذکر کیا گیا ہے؟
     
  7. ‏فروری 14، 2014 #7
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    یعنی اب صوفیت کے ساتھ علوم حدیث پر اعتراضات بھی؟؟؟؟؟؟
    اس کا جواب آپ کو صاحب تھریڈ مشکٰوۃ سسٹر دیں گیں۔ ان شاءاللہ
     
  8. ‏فروری 14، 2014 #8
    مشکٰوۃ

    مشکٰوۃ سینئر رکن
    جگہ:
    اللہ کی رحمتوں کے زیر سائے ان شاء اللہ
    شمولیت:
    ‏ستمبر 23، 2013
    پیغامات:
    1,466
    موصول شکریہ جات:
    926
    تمغے کے پوائنٹ:
    237

    محترم ارسلان بھائی ! جنہیں ا حادیث پر اعتراض ہو ان کا علمِ حدیث سے تعلق بہتر جانتے ہوں گے آپ۔۔

    ایک بات سمجھ کر دوسر ی بات شروع کریں تو زیادہ مناسب ہوتا ہے ناکہ ہر جگہ میں نا مانوں کا رٹالگایا جائے۔۔۔۔بات سمجھنے،سمجھانے کا انداز اور ہوتا ہے اور بحث کا اور۔۔۔۔بغیر معذرت کے میرے پاس بحث برائے بحث کا وقت نہیں ہے ۔
    انتباہ:۔ارسلان بھائی پوسٹ کا مخاطب اپنے آپ کو نہ سمجھیے گا۔ابتسامہ
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  9. ‏فروری 14، 2014 #9
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    ہاں سسٹر آپ بے فکر رہیں ، میں سمجھ گیا ہوں۔

    آپ نے صحیح بات کی ہے، اور ویسے اس آدمی سے گفتگو کو ہے ہی فضول، کیونکہ اس آدمی نے جو صوفیت کے باطل ہونے کے موضوع پر ضدی پن کا مظاہرہ کیا ہے، آج تک یہ ہمارے کسی سوال کا جواب نہیں دے سکا۔اس سے دیکھ کر تو ایسا ہی لگتا ہے کہ اس کا مقصد سوائے شر پھیلانا ہی ہے۔ اللہ بہتر جانتا ہے۔

    اللہ تعالیٰ اس بندے کو ہدایت عطا فرمائے آمین
     
  10. ‏فروری 14، 2014 #10
    عامر رضا

    عامر رضا رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 25، 2013
    پیغامات:
    138
    موصول شکریہ جات:
    34
    تمغے کے پوائنٹ:
    32

    کون ضدی وجائل اور شریر ہے ؟ یہ تو اہل معرفت جانتے ہیں۔جو میں نے سوال پوچھا ہے اسکا جواب دیجئے ،آپ ہمیشہ غیر ضروری مباحث میں الجھے رہتے ہیں ،جو میں نے پو چھا ہے ،وہ قط اتنا سا ہے
    یہ تعریف اور اقسام آپ کی مقرر کردہ ہیں ؟ یا قرآن وحدیث میں کسی مقام پر ان تعریفات کا ذکر کیا گیا ہے؟
    کاپی پیسٹ کرنا آسان کام ہے ۔ہم تو ضدی ہیں جواب دینا پڑے گا ،خواہ چی کرو یا می ؟ اس سے پہلے بھی ایک فتوی مانگا تھا،اس کا بھی مجھے انتظار ہے؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں