1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

حسن بصری رح کا قول اور حضرت معاویہ رضی اللہ عنه پر جھوٹ:

'موضوع ومنکر روایات' میں موضوعات آغاز کردہ از ابن قدامہ, ‏اکتوبر 27، 2015۔

  1. ‏اکتوبر 27، 2015 #1
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    حسن بصری رح کا قول اور حضرت معاویہ رضی اللہ عنه پر جھوٹ:
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    حسن بصری کہا کرتے تھے کہ (معاذ اللہ )معاویہ رضی اللہ عنه میں چار صفات ایسی تھیں کہ اگر ان میں سے اس میں ایک بھی ہوتی تو بھی تباہی کے لئے کافی تھی۔
    1:- امت کے دنیا طلب جہال کو ساتھ ملاکر اقتدار پر قبضہ کیا جبکہ اس وقت صاحب علم و فضل صحابہ موجود تھے ۔
    2:- اپنے شرابی بیٹے یزید کو ولی عہد بنایا جو کہ ریشم پہنتا تھا اور طنبور بجاتا تھا ۔
    3:- زیاد کو اپنا بھائی بنایا ۔ جب کہ رسول خدا کا فرمان ہے کہ لڑکا اس کا ہے جس کے بستر پر پیدا ہو اور زانی کے لئے پتھر ہیں ۔
    4:- حجر بن عدی اور ان کے ساتھیوں کو ناحق قتل کیا۔
    ( الفتنتہ الکبری ۔علی وبنوہ ۔ص 248)
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    اس کو طبری نے تاریخ میں بیان کیا ہے سند:
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    قَالَ الإمامُ الطبري:
    { قَالَ أَبُو مخنف: عن الصقعب بن زهير، عن الْحَسَن، قَالَ: أربع خصال كن فِي مُعَاوِيَة، لو لَمْ يَكُنْ فِيهِ منهن إلا واحدة لكانت موبقة: انتزاؤه عَلَى هَذِهِ الأمة بالسفهاء حَتَّى ابتزَّها أمرها بغير مشورة مِنْهُمْ وفيهم بقايا الصحابة وذو الفضيلة، واستخلافه ابنه بعده سكيراً خميراً، يلبس الحرير ويضرب بالطنابير، وادعاؤه زياداً، وقد قال رسول الله صلى الله عليه وسلم: الولد للفراش، وللعاهر الحجر، وقتله حُجراً، ويلاً لَهُ من حُجر! مرتين..}

    (تاريخ الرسل والملوك للإمام محمد بن جرير الطبري ج5 ص279، ط دار المعارف)
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    پہلی علت:
    راوی لوط بن يحيى، أبو مخنف.(رافضی کذاب ہے)
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    قال الإمام شمس الدين الذهبي:
    { لوط بن يحيى، أبو مخنف، أخباري تَالِفٌ، لا يُوثَقُ بِهِ.
    تركه أبو حاتم وغيره.
    وقال الدارقطني: ضعيف.
    وقال ابن معين: ليس بثقة.
    وقال مَرَّةً: ليس بشيء.
    وقال ابنُ عَدِيٍّ: شيعي محترق، صاحب أخبارهم. تُوُفِّيَ سَنَةَ سَبْعٍ وَخَمْسِيْنَ وَمائَةٍ }
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    دوسری علت راوی الصقعب بن زهير کا سماع حسن البصری سے نہیں یعنی سند مقطع بھی ہے۔
    اس کی بحث کتب تراجم میں دیکھی جاسکتی ہے کہ ایک بھی جگہ ان کا سماع حسن بصری رح سے نہیں۔
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    التاريخ الكبير: 7 / 252، المعارف: 537، الضعفاء: خ: 369، الجرح والتعديل: 7 / 182، الفهرست: المقالة الثالثة الفن الأول، معجم الأدباء: 17 / 41 - 43، ميزان الاعتدال: 3 / 419 - 420، فوات الوفيات: 3 / 225 - 226، لسان الميزان: 4 / 492 - 493 (3) الجرح والتعديل: 7 / 182.
    ،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،،
    قارئیں کرام ایک ایسی سند جس کا پہلا راوی کذاب رافضی ہو اور ساتھ ہی سند میں انقطاع تو بتائیں اس کی کیا اصل رہ گئی یہاں ہم ایک بار پھر بتادیں یزید کا دفع ہرگز نہیں ہے یہاں بات معاویہ رضی اللہ عنہ کی ہے یہ عبارت آج کل دیکھنے میں آرہی تو سوچا اس کی تحقیق کرلی جائے ناجانے لکھنے والے کیوں یہ سب نہیں کرتے اس باب میں لکھنا تو اپنا فرض سمجھتے ہیں لیکن یہ زحمت ہرگز نہیں کرتے کہ اللہ ہمیں کیا حکم دیتا ہے (يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا إِن جَاءَكُمْ فَاسِقٌ بِنَبَإٍ فَتَبَيَّنُوا )اے ایمان والوں !جب تمھارے پاس کوئی فاسق خبر لے کر آئے تو تحقیق کر لیا کرو۔(الحجرات, 49:6 )
    یہ صرف ایک مثال پے اور اندازہ لگائیں کتنا مشکل اور محقق کام ہے۔لیکن لوگوں نے مزاق بنادیا ہے اللہ پاک ہم سب کو درست بات جاننے کی سمجھنے اور بیان کرنے کی توفیق دے۔
    (محمد نوید)
     
    • پسند پسند x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  2. ‏دسمبر 03، 2018 #2
    Talha Salafi

    Talha Salafi مبتدی
    جگہ:
    مرادآباد، یو پی، انڈیا،
    شمولیت:
    ‏ستمبر 19، 2018
    پیغامات:
    48
    موصول شکریہ جات:
    7
    تمغے کے پوائنٹ:
    28

    جزاک اللہ خیرا کثیرا
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں