1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

حنفی مقلدین کی قرآن و حدیث میں تحریف

'حنفی' میں موضوعات آغاز کردہ از حافظ عمران الہی, ‏فروری 11، 2014۔

  1. ‏دسمبر 27، 2015 #31
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    محمد عاصم انعام صاحب کیا آپ نے یہ تحریر اصل کتاب میں پڑھی ہے یا کہ کہسی اور کتاب سے حوالہ درج کیا ہے؟
    واقعہ: میں نے ایک حنفی عالم کی کتاب میں ایک تحریردیکھی جو کہ شیعہ کی کتاب ”حق الیقین“ کے حوالہ سے لکھی تھی کہ وہ تحریفِ قرآن کے قائل ہیں۔ یہبات اتنی شدید تھی کہ مجھے یقین نہیں آ رہا تھا۔ میں یہ گمان کر رہا تھا کہ بعض اوقات ایک بات کا عندیہ تو ہوتا ہے مگر اس کو نمک مرچ لگا کر شدید کر دیا جاتا ہے۔ جس حنفی عالم کی یہ کتاب تھی میں نے کبھی بھی اس میں ایسی بات نہیں پائی تھی مگر میرا طریقہ کار یہ ہے کہ اس قسم کی شدید بات کو جب تک محولہ کتاب میں نہ دیکھ لوں یقین نہیں کرتا۔خیر محولہ کتاب مجھے کوئی دس سال کے بعد ملی اور اس میں وہ تحریر جوں کی توں پا کر اطمینانِ قلب ہؤا۔
    میں نے سوچا کہ کتاب تو مل ہی گئی ہے اس کو پڑھ لوں۔ اس میں مطاعن کے سلسلہ میں عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ پر طعن تھا کہ عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ نعوذ باللہ قرآن کو نہیں مانتے تھے۔ دلیل میں صحیح بخاری کی حدیث درج تھی جس میں دوران سفر عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے حدث اکبر والا واقعہ درج تھا۔ میرے پاس صحیح بخاری موجود تھی میں نے بڑی کوشش کے بعد وہ محولہ عبارت مل گئی اور وہ اسی طرح تھی جیسا کہ ”حق الیقین“ میں لکھی تھی۔ ذہن میں کھلبلی مچھ گئی کہ یہ کیا معاملہ ہے۔ اللہ تعالیٰ سے دعاء کی کہ یا اللہ میرا سینہ کھول دے۔ دوسری احادیث سے یہ عقدہ کھل گیا جن میں عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی وضاحت تھی کہ میں وہ کام کیسے کر سکتا ہوں جس کی تشریح رسول اللہ سلی اللہ علیہ وسلم نے نہیں فرمائی۔
    اس تحریر کا مقصد یہ ہے کہ کسی تحریر پر اندھوں کی طرح نہ گریں اور نہ ہی تعصب سے کام لیں اگر حق کو پانا ہے تو۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں