1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ذمیوں کے سلام کا جواب کس طرح دیا جائے؟

'یہودیت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد زاہد بن فیض, ‏ستمبر 27، 2012۔

  1. ‏ستمبر 27، 2012 #1
    محمد زاہد بن فیض

    محمد زاہد بن فیض سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جون 01، 2011
    پیغامات:
    1,955
    موصول شکریہ جات:
    5,774
    تمغے کے پوائنٹ:
    354

    حدیث نمبر: 6256
    حدثنا أبو اليمان،‏‏‏‏ أخبرنا شعيب،‏‏‏‏ عن الزهري،‏‏‏‏ قال أخبرني عروة،‏‏‏‏ أن عائشة ـ رضى الله عنها ـ قالت دخل رهط من اليهود على رسول الله صلى الله عليه وسلم فقالوا السام عليك‏.‏ ففهمتها فقلت عليكم السام واللعنة‏.‏ فقال رسول الله صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مهلا يا عائشة،‏‏‏‏ فإن الله يحب الرفق في الأمر كله ‏"‏‏.‏ فقلت يا رسول الله أولم تسمع ما قالوا قال رسول الله صلى الله عليه وسلم ‏"‏ فقد قلت وعليكم ‏"
    ‏‏.‏



    حدیث نمبر: 6257
    حدثنا عبد الله بن يوسف،‏‏‏‏ أخبرنا مالك،‏‏‏‏ عن عبد الله بن دينار،‏‏‏‏ عن عبد الله بن عمر ـ رضى الله عنهما ـ أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال ‏"‏ إذا سلم عليكم اليهود فإنما يقول أحدهم السام عليك‏.‏ فقل وعليك ‏"‏‏.‏



    حدیث نمبر: 6258
    حدثنا عثمان بن أبي شيبة،‏‏‏‏ حدثنا هشيم،‏‏‏‏ أخبرنا عبيد الله بن أبي بكر بن أنس،‏‏‏‏ حدثنا أنس بن مالك ـ رضى الله عنه ـ قال قال النبي صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إذا سلم عليكم أهل الكتاب فقولوا وعليكم ‏"‏‏.‏


     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں