1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

رزق کی کنجیاں

'معاصر بدعی اور شرکیہ عقائد' میں موضوعات آغاز کردہ از lovelyalltime, ‏نومبر 04، 2012۔

  1. ‏نومبر 04، 2012 #1
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,841
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    [​IMG]



     
    • شکریہ شکریہ x 5
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  2. ‏نومبر 04، 2012 #2
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,795
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جزاک اللہ خیرا
     
  3. ‏نومبر 05، 2012 #3
    محمد شاہد

    محمد شاہد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 18، 2011
    پیغامات:
    2,446
    موصول شکریہ جات:
    6,004
    تمغے کے پوائنٹ:
    407


    جزاک اللہ خیرا
     
    Last edited: ‏فروری 25، 2015
  4. ‏فروری 25، 2015 #4
    مقبول احمد سلفی

    مقبول احمد سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    اسلامی سنٹر،طائف، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏نومبر 30، 2013
    پیغامات:
    963
    موصول شکریہ جات:
    301
    تمغے کے پوائنٹ:
    158

    آپ لوگوں کی خدمت میں پیش ہے اس کا یونیکوڈ
     
  5. ‏فروری 25، 2015 #5
    مقبول احمد سلفی

    مقبول احمد سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    اسلامی سنٹر،طائف، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏نومبر 30، 2013
    پیغامات:
    963
    موصول شکریہ جات:
    301
    تمغے کے پوائنٹ:
    158

    رزق کی کنجیاں
    (1) توبہ و استغفار:

    مراد : گناہوں پر نادم ہونا، اس کو چھوڑنا،اور آئندہ اس سے دور رہنے کا عزم کرنا۔

    دلیل : قرآن کریم میں ہے ۔﴿فَقُلْتُ اسْتَغْفِرُوا رَبَّكُمْ إِنَّهُ كَانَ غَفَّارًا (10) يُرْسِلِ السَّمَاءَ عَلَيْكُمْ مِدْرَارًا (11) وَيُمْدِدْكُمْ بِأَمْوَالٍ وَبَنِينَ وَيَجْعَلْ لَكُمْ جَنَّاتٍ وَيَجْعَلْ لَكُمْ أَنْهَارًا﴾ (نوح: 10-12)

    ترجمہ: پس میں (نوحؑ) نے کہا، اپنے رب سے گناہوں کی معافی طلب کرو،بے شک وہ بڑا بخشنے والا ہے ، وہ آسمان سے تم پر موسلادھار بارش برسائے گااور تمہارے مالوں اور اولاد میں اضافہ کرے گا،اور تمہارے لئے باغات پیدا کرے گا،اور نہریں نکالے گا۔


    (2) تقوی:

    مراد : اپنے آپ کو ہرگناہ سے بچانا۔

    دلیل:اللہ تعالی نے فرمایا: وَمَن يَتَّقِ اللَّهَ يَجْعَل لَّهُ مَخْرَجًا وَيَرْزُقْهُ مِنْ حَيْثُ لَا يَحْتَسِبُ)سورۃ الطلاق :2،3)

    ترجمہ : جو کوئی اللہ تعالی سے ڈرتا ہے وہ اس کے لئے (ہرمشکل سے) نکلنے کی راہ بنا دیتا ہے اور اس کو ایسی جگہ سے روزی دیتا ہے جہاں سے اس کو گمان بھی نہیں ہوتا۔


    (3)توکل :

    مراد:اس بات کا یقین رکھنا کہ کائنات میں سب کچھ تخلیق رزق، نفع ، نقصان،بیماری، موت اور زندگی، غرضیکہ ہرچیز تنہا اللہ تعالی کے حکم سے ہے ۔

    دلیل : امام ترمذی نے حضرت عمربن خطاب  سے روایت نقل کی ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: لوانکم توکلون علی اللہ حق توکلہ لرزقتم کما ترزق الطیرتغدو خماصا وتروح بطانا(جامع الترمذی 7/7)


    (4) توجہ اور دلجمعی سے عبادت:

    دلیل:امام ترمذی نے حضرت ابوہریرہ  سے روایت کی ہے کہ نبی کریم ﷺ نے ارشاد فرمایا: ان اللہ تعالی یقول :یاابن آدم !تفرغ لعبادتی املا صدرک غنی، واسد فقرک وان لم تفعل ملات یدک شغلا ولم اسدک فقرک (جامع الترمذی 7/14)

    ترجمہ: یقینا اللہ تعالی نے فرمایا:اے ابن آدم ! میری عبادت کے لئے خود کو فارغ کرویعنی توجہ اور دلجمعی سے میری عبادت کرو، میں تیرے سینے کو تونگری سے بھر دوں گا، اور تیری محتاجی کو ختم کردوں گا۔اور اگر تونے ایسا نہ کیاتو میں تیرے ہاتھ کاموں میں الجھا دوں گا اور تیری مفلسی ختم نہ کروں گا۔


    (5) یکے بعد دیگرے حج و عمرہ:

    دلیل : امام ترمذی نے حضرت ابن مسعود  سے روایت نقل کی ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: تابعوا بین الحج والعمرۃ فانھما ینفیان الفقر والذنوب کما ینفی الکیر خبث الحدید و الذھب والفضۃ۔(جامع الترمذی 3/454)

    ترجمہ :" حج اور عمرے کو ایک دوسرے کے بعد ادا کیا کرو، کیونکہ یہ دونوں غربت اور گناہوں کواس طرح دور کرتے ہیں جیسے بھٹی لوہے، سونےاور چاندی کے زنگ کو دور کرتی ہے "۔


    (6)صلہ رحمی:

    مراد: نسبی اور سسرالی قرابتداروں کے ساتھ احسان کرنا، ان کے ساتھ ہمدردی والا سلوک کرنا،اور ان کا خیال رکھنا۔

    دلیل:امام بخاری ؒ نے حضرت ابوہریرہ سے روایت کی ہے انہوں نے بیان کیا کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: من سرہ ان یبسط لہ فی رزقہ و ینسا لہ فی اثرہ فلیصل رحمہ۔(صحیح البخاری 10/405)

    ترجمہ: جو شخص اپنے رزق میں وسعت اور عمر میں اضافہ پسند کرے وہ صلہ رحمی کرے ۔


    (7) انفاق فی سبیل اللہ :

    مراد: دین کی رو سے پسندیدہ جگہوں میں خرچ کرنا۔

    دلیل: اللہ تعالی نے فرمایا: وَمَا أَنْفَقْتُمْ مِنْ شَيْءٍ فَهُوَ يُخْلِفُهُ وَهُوَ خَيْرُ الرَّازِقِينَ )سورة سبأ: 39)

    ترجمہ : اور تم اللہ کی راہ میں جو خرچ کروگے وہ اللہ تعالی اس کا بدلہ دے گا، اور وہ بہترین زرق دینے والا ہے ۔


    (8)دینی طلبہ پر خرچ کرنا:

    دلیل : امام ترمذی نے انس بن مالک  سے روایت نقل کی ہے کہ انہوں نے بیان کیا کہ رسول اللہ ﷺ کے زمانے میں دو بھائی تھے ایک حصول علم کی خاطر نبی ﷺ کی خدمت میں حاضر ہوتا تھااور دوسرا حصول معاش کے لئے جدوجہد کرتا۔ حصول معاش کے لئے جدوجہد کرنے والے نے نبی ﷺ سے اپنے بھائی کی شکایت کی تو آپ ﷺ نے فرمایا:" لعلک ترزق بہ"

    ترجمہ: شاید تمہیں اسی کی وجہ سے رزق دیا جارہاہے ۔(جامع الترمذی7/8)


    (9)کمزوروں کے ساتھ احسان:

    دلیل : امام بخاری نے مصعب بن سعد سے روایت نقل کی ہے کہ سعد نے خیال کیاکہ انہیں اپنے سے کمزور لوگوں پر فوقیت ہے تو اس پررسول اللہ ﷺ نے فرمایا:ھل تنصرون و ترزقون الا بضعفائکم(صحیح بخاری 14/179)

    ترجمہ: تمہاری مدد اور تمہیں رزق تو تمہارے کمزوروں ہی کی وجہ سے ملتا ہے ۔


    (10)اللہ تعالی کی راہ میں ہجرت :

    مراد : دارالکفر سے دارالایمان کی طرف کوچ کرجاناجیساکہ مکہ مکرمہ سے مدینہ طیبہ کی طرف ہجرت کی گئی ۔

    دلیل : اللہ تعالی نے فرمایا: وَمَنْ يُهَاجِرْ فِي سَبِيلِ اللَّهِ يَجِدْ فِي الْأَرْضِ مُرَاغَمًا كَثِيرًا وَسَعَةً (سورۃ النساء : 100)

    ترجمۃ : اور جو کوئی اللہ کی راہ میں ہجرت کرے وہ زمین میں رہنے کی بہت جگہ اور (رزق میں) وسعت پائے گا۔


    (11) نکاح

    دلیل : امام بزار نے حضرت عائشہ  سے روایت کیا ہے کہ انہوں نے بیان کیا کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: تزوجوا النساء یاتینکم بالاموال(مجمع الزوائد4/255)

    ترجمہ: عورتوں سے شادی کرو،وہ تمہارے پاس مالوں کو لائیں گی۔

    ماخوذ از رزق کی کنجیاں از پروفیسر ڈاکٹر فضل الہی
     
    • پسند پسند x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  6. ‏فروری 25، 2015 #6
    محمد شاہد

    محمد شاہد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 18، 2011
    پیغامات:
    2,446
    موصول شکریہ جات:
    6,004
    تمغے کے پوائنٹ:
    407


    جزاک اللہ خیرا
     
  7. ‏دسمبر 19، 2015 #7
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,711
    موصول شکریہ جات:
    6,470
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,055

    جزاک اللہ خیرا
     
  8. ‏اپریل 30، 2016 #8
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,711
    موصول شکریہ جات:
    6,470
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,055

    اور جو تقویٰ اختیار کرے گا!



    13062502_678133042324960_6466901088997379415_n (1).jpg
     
  9. ‏جنوری 16، 2017 #9
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,711
    موصول شکریہ جات:
    6,470
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,055

    15894341_1427154430916439_2640649520115751088_n.jpg
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں