1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

سیدنا الامام عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما کی نماز با جماعت سے محبت !!!

'نماز باجماعت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏جنوری 04، 2015۔

  1. ‏جنوری 04، 2015 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,968
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    سیدنا الامام عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما کی نماز با جماعت سے محبت !!!

    مشہور ثقہ تابعی امام نافع رحمہ اللہ سے روایت ہے کہ ’’ ان ابن عمر کان إذا فاتتہ صلٰوۃ العشاء في جماعۃ أحي بقیۃ لیلتہ ‘‘

    بے شک جب ( سیدنا ) ابن عمر ( رضی اللہ عنہما) کی نمازِ عشاء باجماعت فوت ہو جاتی تو آپ باقی ساری رات بیدار ( عبادت کرتے) رہتے تھے اور سوتے نہیں تھے۔

    ( المعجم لابی یعلیٰ الموصلی بتحقیق الشیخ ارشاد الحق الاثری : ۱۸، وسندہ حسن )

    نماز باجماعت سے محبت کا یہ کتنا عظیم الشان واقعہ ہے جبکہ کلمہ پڑھنے والوں کی اکثریت نماز باجماعت کا اہتمام کرنے کے بجائے فرض نمازوں سے ہی غافل ہے۔ !!

    [مقالات جلد نمبر 2،ص 538]
     
  2. ‏ستمبر 27، 2016 #2
    محمد فراز

    محمد فراز رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 26، 2015
    پیغامات:
    524
    موصول شکریہ جات:
    126
    تمغے کے پوائنٹ:
    98

    بھائی جان میں نے یہ روایت بہت تلاش کی مسند ابی یعلی میں لیکن نہیں ملی مجھے یہ روایت الكتاب: حلية الأولياء وطبقات الأصفياء میں ملی ہے
    حَدَّثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ أَحْمَدَ بْنِ الْحَسَنِ، ثَنَا بِشْرُ بْنُ مُوسَى، ثَنَا خَلَّادُ بْنُ يَحْيَى، ثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ أَبِي رَوَّادٍ، وَحَدَّثَنَا أَبُو مُحَمَّدِ بْنُ حَيَّانَ، ثَنَا أَبُو يَعْلَى، ثَنَا مُحَمَّدُ بْنُ الْحُسَيْنِ الْبُرْجُلَانِيُّ، ثَنَا زَيْدُ بْنُ الْحُبَابِ، ثَنَا عَبْدُ الْعَزِيزِ بْنُ أَبِي رَوَّادٍ، عَنْ نَافِعٍ: أَنَّ ابْنَ عُمَرَ رَضِيَ اللَّهُ تَعَالَى عَنْهُ كَانَ إِذَا فَاتَتْهُ صَلَاةُ الْعِشَاءِ فِي جَمَاعَةٍ أَحْيَا بَقِيَّةَ لَيْلَتِهِ، وَقَالَ بِشْرُ بْنُ مُوسَى: أَحْيَا لَيْلَتَهُ.
    مجھے لگتا ہے حوالہ درست نہیں اگر آپ کے پاس مسند ابی یعلی کا درست حوالہ ہے تو دے پلیز
     
  3. ‏اکتوبر 26، 2018 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    یہ روایت معجم ابی یعلیٰ (ح18) میں موجود ہے :
    امام ابو یعلیٰ(احمد بن علی )الموصلي (المتوفى: 307هـ) فرماتے ہیں
    ’’حدثنا محمد بن الحسين، قال: حدثنا زيد بن الحباب، قال: حدثنا عبد العزيز بن أبي رواد، عن نافع، «أن ابن عمر، كان إذا فاتته صلاة العشاء في جماعة أحيى ليلته»‘‘
    مشہور ثقہ تابعی امام نافع رحمہ اللہ سے روایت ہے کہ جب ( سیدنا ) عبداللہ ابن عمر ( رضی اللہ عنہما) کی نمازِ عشاء باجماعت فوت ہو جاتی تو آپ باقی ساری رات بیدار ( عبادت کرتے) رہتے تھے اور سوتے نہیں تھے۔ ( المعجم لابی یعلیٰ الموصلی بتحقیق الشیخ ارشاد الحق الاثری : ۱۸، وسندہ حسن )
    https://archive.org/stream/grobi-1-2/yala#page/n37/mode/2up
     
لوڈ کرتے ہوئے...
متعلقہ مضامین
  1. Muhammad Waqas
    جوابات:
    2
    مناظر:
    840
  2. محمد طلحہ اہل حدیث
    جوابات:
    1
    مناظر:
    78
  3. علی عمران
    جوابات:
    1
    مناظر:
    356
  4. ابن داود
    جوابات:
    1
    مناظر:
    387
  5. محمد طلحہ اہل حدیث
    جوابات:
    0
    مناظر:
    219

اس صفحے کو مشتہر کریں