1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

شب برات کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

'بدعت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏مئی 11، 2017۔

  1. ‏مئی 03، 2018 #11
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,235
    موصول شکریہ جات:
    1,064
    تمغے کے پوائنٹ:
    387

    محو حیرت ہوں۔ کیا اب کوئی نیا محدث پیدا ہوگیا ہے جو علامہ البانی رحمہ اللہ کو متساہل کہ رہا ہے۔
     
  2. ‏مئی 03، 2018 #12
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,387
    موصول شکریہ جات:
    371
    تمغے کے پوائنٹ:
    147

    عمر اثری بھائی شیخ البانیؒ کے تساہل اور تسامحات کی نشاندہی کافی اہل علم حضرات کرچکے ہیں!
    محترم شیخ @خضر حیات حفظ اللہ
     
  3. ‏مئی 03، 2018 #13
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,235
    موصول شکریہ جات:
    1,064
    تمغے کے پوائنٹ:
    387

    ضرور جاننا چاہوں گا کہ وہ کس پائے کہ محدث ہیں جو علامہ البانی رحمہ اللہ کو متساہل کہ رہے ہیں۔
     
  4. ‏مئی 03، 2018 #14
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    5,554
    موصول شکریہ جات:
    2,214
    تمغے کے پوائنٹ:
    701

    بارك الله فيكم ------مقید تساہل کے قائل دو بڑے نام پیش ہیں
    ومن الذين تخرصوا هذا القول مصطفى العدوي المصري
    وقد رد عليه الشيخ أبي العينين المصري في كتابه "الانتصار لأهل الحق الكبار والرد على من رمى الامام الألباني بالتساهل

    ــــــــــــــــــــــــــ
    يقول الشيخ خالد الشافعي :
    سمعت محاضرة للشيخ المحدث أبي إسحاق الحويني بعنوان : بدر التمام في سيرة علامة الشام قال فيها : الشيخ الألباني في التصحيح دقيق جدا ، والتساهل من الشيخ يقع في الحديث الحسن أحيانا انتهى
     
    Last edited: ‏مئی 03، 2018
    • شکریہ شکریہ x 1
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
  5. ‏مئی 03، 2018 #15
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    5,554
    موصول شکریہ جات:
    2,214
    تمغے کے پوائنٹ:
    701

    يقول الشيخ خالد الشافعي :
    "سمعت محاضرة للشيخ المحدث أبي إسحاق الحويني بعنوان : بدر التمام في سيرة علامة الشام قال فيها :
    الشيخ الألباني في التصحيح دقيق جدا ، والتساهل من الشيخ يقع في الحديث الحسن أحيانا انتهى
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
  6. ‏مئی 04، 2018 #16
    محمد عثمان رشید

    محمد عثمان رشید رکن
    جگہ:
    پاکستان فیصل آباد
    شمولیت:
    ‏ستمبر 06، 2017
    پیغامات:
    74
    موصول شکریہ جات:
    2
    تمغے کے پوائنٹ:
    42


    جی محترم بهائی.!
    عرض هے که پهلی بات تو یه هے که علامه البانی گو محدث عالم محقق حافظ وقت تهے.
    لیکن ان سے وهم بهی هوا هے جو که ایک انسان کے خمیر میں هے جیسا طبرانی کی ایک روایت میں آیا اور شیخ البانی نے الصحیحه میں درج کی هے.
    اس هی لئے علماء نے بتایا که جهاں البانی صاحب منفرد هو اعتبار نه کیا جائے. انوار السبیل.
    .
    اب اگے چلتے هیں.
    پهلی بات آپ نے یه کی که جناب مکحول کو مالک بن یخامر کے شاگرودں میں نقل کیا گیا هے.
    عرض هے که محترم صرف اتنی سے بات مکحول کے مالک بن یخامر سے سماع کی دلیل نهیں هے.
    حافظ مزی نے اگر اسکو مالک بن یخامر کے شاگردوں میں نقل کیا هے تو وه صحیح نهیں کیونکه مزی تو بظاهر سند کو دیکھ کر استاد شاگرد بیان کردیتے هیں اگرچه ملاقات هو یا نه هو سماع هو یا نه هو.
    اسکی ایک مثال یه هی مکحول عن مالک یخامر کی هے.
    دوسری مثال یه که ایک روای هے سعید بن ابی هند جو که حضرت ابوهریرۃ رضی الله عنه سے روایت کرتا هے دیکھے.
    (ابن حبان ج ۱ ص ۲۷۴.)
    اور سند سے معلوم هوتا هے که یه ابوهریرۃ رضی الله عنه کے شاگرد هیں حالانکه یه شاگرد تو کیا ملاقات بهی نهیں رکھتے.
    امام ابوحاتم کھتے هیں:
    "سعید بن ابی هند لم یلق ابا هریرۃ."
    (مرسیل لابن ابی حاتم ص ۷۵.)
    که سعید بن ابی هند ابوهریرۃ رضی الله عنه سے ملاقات هی نهیں رکھتے.
    تیسری مثال حسین بن علی جعفی کا استاد عبدالرحمن بن یزید بن تمیم هے یا عبدالرحمن بن یزید بن جابر تو اس حواله سے نقدین کھتے هیں که ابن تمیم هے اور مزی نے یهاں بهی ابن جابر سے استاد شاگرد نقل کیا هے.
    فتدبر.!
    سمجھنے کیلئے یه مثالیں هی کافی هے.
    پهر جو الفاظ سعید بن ابی هند عن ابی هریرۃ رضی الله عنه کے متعلق بیان هوئے وه هی الفاظ مکحول عن یخامر کے متعلق بهی هے.
    حافظ ذهبی خود نقد بهی هیں.
    اور حافظ ذهبی نے بتایا هے که: مکحول کی مالک بن یخامر سے ملاقات ثابت نهیں هے. جیسا که البانی صاحب نے بهی اس هی حدیث کے تحت ذکر کیا هے. آپکو حدیث کی تصحیح تو نظر آگی لیکن یه عبارت نظر نهیں آئی.!
    لهذا آپکو صراحت کے ساتھ سماع ثابت کرنا هو گا.
    یهاں ایک اور باب قابل غور هے که مکحول, مالک بن یخامر سے ایک واسطه سے روایت بیان کرتے هیں.!
    مکحول عن جبیر بن نفیر عن مالک بن یخامر
    (مسند الشامین ج ۴ ص ۳۴۷ ح ۳۵۲۰.
    نیز دیکھے مصنف ابن ابی شیبه ج ۱۵ ص ۱۳۶, و فی نسخه ج ۲۱ ص ۲۰۲ کتاب الفتن ح ۳۸۶۳۲. ابوداود ۹۰۱.)
    پهر احناف کے هاں تو مکحول مدلس هے تو اسلئے لهذا سے بهی آپ پر سماع کی تصریح ثابت کرنی هو گی.
    اگر آپ یه کھ دیں که آپ کے هاں منقطع مرسل روایات قرن ثلاثه کی حجت هے تو پهر هم آپ کو کپھ نهیں کهه سکتے.
    یه تو رهی تمهیدی گفتگو اب اصل مدع پر آتے هیں.
     
  7. ‏مئی 04، 2018 #17
    محمد عثمان رشید

    محمد عثمان رشید رکن
    جگہ:
    پاکستان فیصل آباد
    شمولیت:
    ‏ستمبر 06، 2017
    پیغامات:
    74
    موصول شکریہ جات:
    2
    تمغے کے پوائنٹ:
    42

    یه روایت مضطرب هے.

    ۱: مکحول کبهی عن مالک بن یخامر عن معاذ بن جبل روایت کرتا هے.
    (الشعب الایمان ج ۷ ص ۴۱۳.)
    ۲: کبهی مکحول ڈائریکٹ نبی صلی الله علیه وسلم سے روایت کرتا هے.
    (النزول للدارقطنی ص ۱۶۷, ۸۷.)
    ۳: کبهی عن کثیر بن مرۃ قال قال رسول الله صلی الله علیه وسلم بیان کرتا هے.
    (ابن ابی شیبه ج ۶ ص ۱۰۸. النزول للدارقطنی.)
    اگر کثیر بن مرۃ اور رسول الله صلی الله علیه وسلم کے درمیان بهی ایک واسطه مروی هے.
    دیکھے مسند احمد ج ۵ ص ۲۸۷.
    ۳: کبهی مکحول کثیر بن مرۃ کے درمیان بهی واسطه ذکر کرتا هے.
    "مکحول عن خالد بن معدان عن کثیر بن مرۃ."
    (النزول الدارقطنی ص ۸۴.)
    ۴: کبهی عن کثیر بن مرۃ مرفوع نقل کیا هے.
    (عبدالرزاق ج ۴ ص ۳۱۷ ح ۷۹۲۴.)
    ۵: کبهی عن کثیر بن مرۃ موقوف بیان کیا هے.
    (ایضا.)
    ۶: کبهی عن مکحول عن ابی ادریس الخولانی.
    (النزول للدارقطنی ۸۵.)
    ۷: کبهی مکحول عن ابی ثعلبه الخشی رضی الله عنه بهی بیان کیا هے.

    لهذا امام دارقطنی اور ابوحاتم نے جو اسکو منکر اور مضطرب غیرثابت کها هے وه بالکل صحیح هے. والله اعلم.
    اب اس میں علتیں دیکھے ایک علت تو یه هے که مضطرب هے دوسری مالک سے انقطاع نیز بقول احناف کے مکحول مدلس بهی هے.
    لهذا آپ اسکا جواب ارسال کریں تو اگے بات هو گی اور ان شاءالله بیان هو گا کے کوئی روایت بهی اسکی تائید نهیں کرتی.
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں