1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

علی بن جعد سے منسوب دو اقوال

'ثقہ رواۃ' میں موضوعات آغاز کردہ از قاضی786, ‏نومبر 11، 2016۔

  1. ‏نومبر 11، 2016 #1
    قاضی786

    قاضی786 رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2014
    پیغامات:
    142
    موصول شکریہ جات:
    70
    تمغے کے پوائنٹ:
    61

    السلام علیکم

    امید ہے تمام برادران خیریت سے ہوں گے

    شیخ زبیر علی زئی رح کی کتاب تعداد رکعات قیام رمضان کا تحقیقی جائزہ میں شیخ صاحب نے علی بن جعد کے بارے میں کہا ہے کہ وہ ثقہ علی الراجح ہیں مگر وہ حضرت عثمان رض پر بہت تنقید کرتے تھے اور کہتے تھے کہ مجھے برا نہیں لگتا کہ معاویہ رض پر اللہ عذاب کرے

    علی بن جعد سے منسوب دو روایات مجھے سیر اعلام نبلاء میں بھی ملی ہیں - پہلی والی تو یہی ہے ۔ دوسری تاریخ بغداد میں بھی موجود ہے

    قال أحمد بن إبراهيم الدورقي : قلت لعلي بن الجعد : بلغني أنك قلت : ابن عمر ذاك الصبي ، قال : لم أقل ، ولكن معاوية ما أكره أن يعذبه الله .

    [ ص: 465 ] وقال هارون بن سفيان المستملي : كنت عند علي بن الجعد ، فذكر عثمان ، فقال : أخذ من بيت المال مائة ألف درهم بغير حق ، فقلت : لا والله ، ما أخذها إلا بحق .

    کیا یہ روایات صحیح سند کے ساتھ مروی ہیں؟

    کیا علی بن جعد کو ثقہ مانا جاتا ہے کہ نہیں؟

    شکریہ
     
  2. ‏نومبر 16، 2016 #2
    قاضی786

    قاضی786 رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2014
    پیغامات:
    142
    موصول شکریہ جات:
    70
    تمغے کے پوائنٹ:
    61

    السلام علیکم ورحمه الله وبرکاته

    محترم @اسحاق سلفی بھائی

    برائے مہربانی روشنی ڈال دیں

    شکریہ
     
  3. ‏نومبر 16، 2016 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,109
    موصول شکریہ جات:
    2,351
    تمغے کے پوائنٹ:
    777

    السلام علیکم
    (تعداد رکعات قیام رمضان ) کا وہ صفحہ بتائیں جہاں ابن الجعد کا ذکر ہے ۔
     
  4. ‏نومبر 16، 2016 #4
    محمد فراز

    محمد فراز رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 26، 2015
    پیغامات:
    506
    موصول شکریہ جات:
    124
    تمغے کے پوائنٹ:
    98

    upload_2016-11-16_18-34-16.png
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  5. ‏نومبر 16، 2016 #5
    محمد فراز

    محمد فراز رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 26، 2015
    پیغامات:
    506
    موصول شکریہ جات:
    124
    تمغے کے پوائنٹ:
    98

    قَالَ: ما جعله سيدا؟ أَخْبَرَنَا العتيقي، قَالَ: أَخْبَرَنَا يُوسُف بْن أَحْمَد، قَالَ: حَدَّثَنَا العقيلي، قَالَ: حَدَّثَنَا أَحْمَد بْن الحسين، قَالَ: حَدَّثَنَا أَحْمَد بْن إِبْرَاهِيم الدورقي، قَالَ: قلت لعلي بْن الجعد: بلغني أنك قلت: ابن عُمَر ذاك الصبي؟ قَالَ: لم أقل، ولكن معاوية، ما أكره أن يعذبه اللَّه عَزَّ وَجَلَّ الأزهري، قَالَ: حَدَّثَنَا مُحَمَّد بْن العباس، قَالَ: حَدَّثَنَا أَبُو بكر مُحَمَّد بْن هارون بْن حميد بْن المجدر، قَالَ: حَدَّثَنَا هارون بْن سُفْيَان المستملي، المعروف بالديك، قَالَ: كنت عند علي بْن الجعد، فذكر عُثْمَان بْن عفان، فقال: أخذ من بيت المال مائة ألف درهم بغير حق.
    الکتاب:تاریخ البغداد ت بشار جلد۱۳ پیج۲۶۱
    قَالَ أَحْمَدُ بنُ إِبْرَاهِيْمَ الدَّوْرَقِيُّ: قُلْتُ لِعَلِيِّ بنِ الجَعْدِ: بَلَغَنِي أَنَّكَ قُلْتَ: ابْنُ عُمَرَ ذَاكَ الصَّبِيُّ.
    قَالَ: لَمْ أَقُلْ، وَلَكِنَّ
    مُعَاوِيَةَ مَا أَكْرَهُ أَنْ يُعَذِّبَهُ اللهُ
    الكتاب: سير أعلام النبلاء ط الرسالة جلد۱۰ پیج ۴۶۴
    وقال الجوزجاني متشبث بغير بدعة زائغ عن الحق وقال أحمد بن إبراهيم الدورقي قلت لعلي بن الجعد بلغني انك قلت بن عمر ذاك الصبي قال لم أقل ولكن معاوية ما أكره أن يعذبه الله
    الكتاب: تقريب التهذيب جلد۷ پیج۲۹۱
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  6. ‏نومبر 16، 2016 #6
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,109
    موصول شکریہ جات:
    2,351
    تمغے کے پوائنٹ:
    777

    محترم بھائی محمد فراز مجھے شیخ زبیر علی ؒ کی وہ عبارت چاہیئے جو محترم قاضی صاحب نے نقل کی ہے
    باقی اسماء الرجال کی کتب الحمد للہ موجود ہیں ؛
     
  7. ‏نومبر 16، 2016 #7
    محمد فراز

    محمد فراز رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 26، 2015
    پیغامات:
    506
    موصول شکریہ جات:
    124
    تمغے کے پوائنٹ:
    98

    شیخ صاحب میرے علم کے مطابق قاضی صاحب نے جو عبارت نقل کی ہے اور جس کتاب کا حوالہ دیا ہے انہوں نے شاہد کتاب کا نام غلط دیا ہے کیونکہ شیخ زبیر علی زئی رحمہ اللہ نے یہ بات اس کتاب میں نہیں لکھی بلکہ اس سے ملتی جلتی عبارت یہ ہے
    upload_2016-11-16_19-43-51.png
    کتاب اوکاڑوی کا تعاقب پیج ۶۵
    قاضی صاحب نے کتاب کا نام غلط لکھا ہے باقی وہ اب خود بتائے گے
     
  8. ‏نومبر 16، 2016 #8
    قاضی786

    قاضی786 رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2014
    پیغامات:
    142
    موصول شکریہ جات:
    70
    تمغے کے پوائنٹ:
    61

    السلام علیکم و رحمۃ اللہ و برکاتہ

    یہ صفحہ 77 پر ہے۔

    مجھ اسکین لگانا نہیں آتا
    اس وجہ سے وہ نہیں لگا سکتا
    تاہم شیخ رح نے یہ الفاظ لکھے ہیں

    "تاہم علی بن الجعد (ثقہ علی الراجح) پر بذات خود جرح ہے ۔ علی ابن الجعد مذکور سیدنا عثمان رض پر سخت تنقید کرتا تھا وہ کہتا تھا : مجھے یہ برا نہیں لگتا کہ اللہ معاویہ رض کو عذاب دے"
     
  9. ‏نومبر 16، 2016 #9
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,109
    موصول شکریہ جات:
    2,351
    تمغے کے پوائنٹ:
    777

    ۔۔
     
  10. ‏نومبر 16، 2016 #10
    محمد فراز

    محمد فراز رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 26، 2015
    پیغامات:
    506
    موصول شکریہ جات:
    124
    تمغے کے پوائنٹ:
    98

    قاضی صاحب یہ لے ہاں موجود ہے اسی کتاب میں شیخ اسحاق صاحب یہ لے
    upload_2016-11-16_22-13-26.png
     
لوڈ کرتے ہوئے...
متعلقہ مضامین
  1. محمد فراز
    جوابات:
    1
    مناظر:
    89
  2. عامر عدنان
    جوابات:
    0
    مناظر:
    108
  3. محمد عامر یونس
    جوابات:
    0
    مناظر:
    490
  4. محمد شاهد جاويد
    جوابات:
    0
    مناظر:
    504
  5. ابوالوفا محمد حماد اثری
    جوابات:
    0
    مناظر:
    481

اس صفحے کو مشتہر کریں