1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

غلام رسول سعیدی بریلوی صاحب کی کتاب نعمۃ الباری پر تعاقب قسط ١

'شرح وفوائد' میں موضوعات آغاز کردہ از ابن بشیر الحسینوی, ‏اکتوبر 30، 2011۔

  1. ‏اکتوبر 30، 2011 #1
    ابن بشیر الحسینوی

    ابن بشیر الحسینوی رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    Pakistan
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    1,064
    موصول شکریہ جات:
    4,412
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    مولانا غلام رسول رسول سعیدی صاحب بریلوی مکتبہ فکر سے تعلق رکھتے ہیں وہ ایک مدرسہ میں شیخ الحدیث ہیں اور اپنے معتقدین کی نظر میں ’’محدث اعظم و سعید ملت ،علامہ‘‘ہیں(نعمۃ الباری :ج١ ص١١٣) مولانا غلام رسول سعیدی بریلوی صاحب کی شرح نعمۃ الباری پیش نظر ھے ،
    اس میں کچھ چیزیں قابل تعاقب ہیں
    ١:اس میں صحیح بخاری کی احادیث پر بھی نقد کیا گیا کہ یہ حدیث ضعیف ھے حالانکہ وہ حدیث متصل باسند ہوتی جن کے متعلق محدثین اور علمائ امت کا اجماع ھے کہ بخاری میں جتنی بھی باسند احآدیث ہیں وہ تمام کی تمام صحیح ہیں ۔مگر افسوس کہ سعیدی بریلوی صاحب جو صحیح بخاری کی احآدیث پر نقد کر رہے ہیں اور ان کے متعلق لکھتے ہیں کہ یہ ضعیف ہے ان للہ و نا الیہ راجعون ۔
    ٢:اور اپنی یہ حالت ھے کہ ضعیف اور موضوع روایات سے استدلال کرنے سے ان کی نعمۃ الباری ، شرح صحیح مسلم اور تبیان القرآن بھری پڑی ھے جس پر عنقریب بحث کی جائے گی بلکہ بریلویت ،فقہ حنفی اور بدعات کی تائید میں جیسی مرضی بے اصل روایت ملے اس کو لکھ مارتے ہیں،گویا وہ احآدیث جن کی صحت پر اجماع ہو چکا ھے ان کو ضعیف ثابت کرنا اور خود موضؤع ،بے اصل اور ضعیف روایات سے استدلال کرنا سعیدی بریلوی صاحب کا وطیرہ ھے ۔

    ٣:صحیح بخاری میں موجود فقہی مباحث کی صورت میں رد کیا ہے کہ امام بخاری ان احادیث سے یہ مسئلہ ثابت کرنا چاہتے ہیں اور یہ صحیح نہیں ہے فقہ حنفی کا مسئلہ ہی راجح ہے ،حقائق بتائیں گے کہ حق کیا ہے فقہ حنفی یا حدیث رسول صلی اللہ علیہ وسلم ۔دوسرے لفظوں میں صحیح بخاری کا توڑ پیش کیا ھے سعیدی بریلوی صاحب نے منۃ الباری میں ،انا للہ وانا الیہ راجعون ۔
    اس کی حقیقت بھی واضح کریں گے ان شائ اللہ ۔

    ٤:حافظ ابن حجررحمہ اللہ کی فتح الباری پر بے جا تنقید کی گئی ھے تعصب کی انتہائ دیکھیے حافظ ابن حجر کے متعلق لکھتے ہیں :’’حافظ ابن حجر عسقلانی کے ممدوح امام بخاری نے اپنی ’’صحیح بخاری‘‘میں امام اعظم ابو حنیفہ کی عبارات میں متعدد مقامات پر اپنے زعم میں تناقض اور تضآد ثآبت کیا ھے ،وہاں پر حآفظ ابن حجر عسقلانی نے امام بخاری شدت سے تائید کی ھے اور اس تناقض اور تضاد کو برقرار رکھا ھے ،امام بخاری کے متعلق تو ہماری مجال نہیں ہے ،وہ ہمارے نزدیک فن حدیث میں ایسے ہی محترم ہیں جیسے علم فقہ میں ہمارے نزدیک امام اعظم ابو حنیفہ مکرم ہیں ،لیکن حافظ ابن حجر عسقلانی سے قصاص لینے کاتو ہمیں حق پہنچتا ھے ۔‘‘(نعمۃ الباری :ج١ص١٠٦)
    نعمۃ الباری اسی تعصب سے بھری ہوئی ھے اور بلاوجہ ابن حجر کا رد کیا گیا جو علم و تحقیق سے خالی ہے ،اس کی حقیقت بھی ہم واضح کریں گے اور قارئین پر مطلع کریں گے کہ سعیدی صاحب نے ابن حجر سے قصاص لینے میں انصاف سے کام لیا ہے یا تقلید اور بدعات کا پرچار کرنے کی خاطریہ روش اپنائی ھے۔
    ٥:تاویلات باطلہ اور بعیدہ کا سہارا لیا ہے اور بدعات کا خوب اثبات کیا ھے منۃ الباری میں ،اس پر بھی کلام ھو گی ۔
    ٦:محدثین پر بے جا تنقید کی ہے اور ان کے متعلق غیر مناسب الفاظ استعمال کئے ہیں کیونکہ وہ تقلید اور بدعات کا رد کرتے تھے۔اس پر بھی بحث ھو گی ۔ان شائ اللہ

    ٧:اصول حدیث اور جرح و تعدیل کا دور سے بی مس نہیں کیا اور نہ ہی اس کا خیال رکھا ھے بس اپنی مرضی کے ترکش چلائے ہیں ۔
    الغرض سعیدی بریلوی صاحب نے انصاف سے کام نہیں کاش وہ منۃ الباری میں حدیث رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا دفاع کرتے اور قرآن و حدیث کے مطابق شرح لکھتے ۔مگر افسوس جب بھی کسی مقلد نے حدیث کی شرح لکھی تو صرف اس غرض سے کہ فقہ حنفی کا دفاع کیا جائے اور احادیث کا توڑ کیا جائے اس کی داستان پڑھنے کے لئے ’’پاک و ہند میں علمائے اہل حدیث کی خدمات حدیث ‘‘کا مطالعہ کیا جائے ۔

    راقم اس پر مفصل تبصرہ کرے گا پہلے صحیح بخاری کی جن احادیث کو سعیدی بریلوی صاحب نے ضعیف ثابت کیا ہے ان پر بحث کی جائے گی پھر دیگر بحوث پر منصفانہ تجزیہ کیا جائے گا انشائ اللہ

    صحیح بخاری میں ضعیف احادیث ہیںسعیدی بریلوی کے نزدیک

    !

    سعيدي بريلوي صاحب نے لكها هي

    بعض وہ حضرات جو صحیح بخاری کو حرف آخر قرار دیتے ہیں ان کی رائے ہے کہ بخاری میں مندرج ہر ہر حدیث صحیح ہے اور سند اور متن کے بیان میں ان سے کسی جگہ غلطی نہیں ہوئی ۔ ہماری رائے ان لوگوں سے بحرحال مختلف ہے ۔ یہ صحیح ہے کہ بخاری میں دیگر تمام کتب احادیث کی بہ نسبت سب سے زیادہ صحیح احادیث ہیں لیکن یہ صحیح نہیں ہے کہ اس میں مندرج کوئی بھی حدیث ضعیف نہیں ہے۔

    نعمۃالباری فی شرح صحیح البخاری جلد اول ص نمبر 94

    .............................

    اس کا رد پیش خدمت ہے

    احمد رضا خان بریلوی صاحب نے ردّ کرتے ہوئے لکھا :
    اقول اولاً : یہ بھی شرم نہ آئی کہ یہ محمد بن فضیل صحیح بخاری و صحیح مسلم کے رجال سے ہے۔

    حوالہ : فتاویٰ رضویہ ، طبع جدید 174/5 ۔

    تفصیلی رد کے لئے البشارہ ڈاٹ کام پر جائیں
     
  2. ‏اکتوبر 30، 2011 #2
    ناصر رانا

    ناصر رانا رکن مکتبہ محدث
    جگہ:
    Cape Town, Western Cape, South Africa
    شمولیت:
    ‏مئی 09، 2011
    پیغامات:
    1,171
    موصول شکریہ جات:
    5,448
    تمغے کے پوائنٹ:
    306

    جزاک اللہ خیرا
     
  3. ‏اکتوبر 30، 2011 #3
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,763
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    جزاکم اللہ ۔۔۔
    کتاب کا نام نعمۃ الباری ہے یا کہ منۃ الباری ؟
     
  4. ‏اکتوبر 30، 2011 #4
    siddique

    siddique مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    170
    موصول شکریہ جات:
    895
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    اسلام علیکم بھائی جان
    جزاک اللہ خیرا
    آپ نے سعيدي بريلوي صاحب کی شرح پر جو نقد کیا ہے۔بہت ہی بہترین کام کیا ہے۔بریلوی اپنے یہ اکلوتے ایک محدث پر بہت نازکرتے ہے۔اور مٰیں نےخود شرح مسلم کا مطالعہ کیا ہے۔اپنے مسلک کو ثابت کرنے کے لیے ضعیف اور موضوع روایت کا بھی سہارا لیا گیا۔اور شرح مسلم پڑھنے کے بعد میں نے دیکھا ہے۔اسم رجال میں موصوف کچھ بھی نہیں۔ایک مشال مومل بن اسماعیل کے تعلق سے موصوف نے بہت ہی بدترین بددیانتی کی ہے۔
    میں چاہتا ہوں کہ آپکا یہ نقد کتابی شکل میں بن جائے تو بہت فائدہ مند ثابت ہوگا ہم جیسے کم علم کی لیے
    اللہ حافظ
     
  5. ‏نومبر 01، 2011 #5
    ابن بشیر الحسینوی

    ابن بشیر الحسینوی رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    Pakistan
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    1,064
    موصول شکریہ جات:
    4,412
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    نعمۃ الباری ہے
     
  6. ‏نومبر 01، 2011 #6
    ابن بشیر الحسینوی

    ابن بشیر الحسینوی رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    Pakistan
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    1,064
    موصول شکریہ جات:
    4,412
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    اسلام علیکم بھائی جان
    جزاک اللہ خیرا
    آپ نے سعيدي بريلوي صاحب کی شرح پر جو نقد کیا ہے۔بہت ہی بہترین کام کیا ہے۔بریلوی اپنے یہ اکلوتے ایک محدث پر بہت نازکرتے ہے۔اور مٰیں نےخود شرح مسلم کا مطالعہ کیا ہے۔اپنے مسلک کو ثابت کرنے کے لیے ضعیف اور موضوع روایت کا بھی سہارا لیا گیا۔اور شرح مسلم پڑھنے کے بعد میں نے دیکھا ہے۔اسم رجال میں موصوف کچھ بھی نہیں۔ایک مشال مومل بن اسماعیل کے تعلق سے موصوف نے بہت ہی بدترین بددیانتی کی ہے۔
    میں چاہتا ہوں کہ آپکا یہ نقد کتابی شکل میں بن جائے تو بہت فائدہ مند ثابت ہوگا ہم جیسے کم علم کی لیے
    اللہ حافظ
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    اللہ کی توفیق سے ایک ادارہ راقم سے صحیح مسلم کی اردو میں شرح لکھوا رہا ہے جس میں سعیدی بریلوی صاحب کا شرح صحیح مسلم کا رد تفصیلی لکھ رہا ہوں ۔اور اس کی پہلی جلد زیر طبع ہے ،تما بھائیوں سے خصوصی دعاوں کی گزارش ہے ۔
     
  7. ‏نومبر 01، 2011 #7
    کلیم حیدر

    کلیم حیدر رکن
    جگہ:
    لیہ
    شمولیت:
    ‏فروری 14، 2011
    پیغامات:
    9,403
    موصول شکریہ جات:
    25,973
    تمغے کے پوائنٹ:
    995

    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    اللہ آپ کا ہر پل حامی وناصر ہو۔
     
  8. ‏نومبر 01، 2011 #8
    ندیم محمدی

    ندیم محمدی مشہور رکن
    جگہ:
    Wah, Pakistan, Pakistan
    شمولیت:
    ‏جولائی 29، 2011
    پیغامات:
    347
    موصول شکریہ جات:
    1,274
    تمغے کے پوائنٹ:
    140

    اللہ تعالیٰ آپ کو اس مقصد میں کامیاب فرمائے اور ہم سب کو یہ توفیق عطا کرے کہ ہم بھی اس کے نازل کردہ دین پر عمل پیرا ہوں اور دین اسلام کی دعوت کا حق ادا کر سکیں۔
     
  9. ‏اگست 18، 2015 #9
    Hafiz Muhammad Irfan

    Hafiz Muhammad Irfan مبتدی
    شمولیت:
    ‏اگست 18، 2015
    پیغامات:
    1
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    2

    اللہ آپ کو لوگوں کو ہدایت عطافرمائے آمین
     
  10. ‏اگست 22، 2015 #10
    ابو فاران نعیم بن شہزاد

    ابو فاران نعیم بن شہزاد رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏جون 07، 2015
    پیغامات:
    144
    موصول شکریہ جات:
    24
    تمغے کے پوائنٹ:
    67

    السلام علیکم ! میرے بھائی یہ پورا تبصرہ یونیکوڈ یا پی ڈی ایف میں کہاں سے دستیاب ہو سکتا ہے ۔البشارہ ڈاٹ کام سے ڈاؤئلوڈ نہیں ہو رہا ۔اگر کسی صاحب کے علم میں ہو تو کوئی متبادل لنک بتا دیں ممنون ہوں گا جزاک اللہ
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں