1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

فرقہ قادیانی کاپس منظر

'قادیانیت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد اشرف یوسف, ‏نومبر 09، 2012۔

  1. ‏نومبر 09، 2012 #1
    محمد اشرف یوسف

    محمد اشرف یوسف مبتدی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 04، 2012
    پیغامات:
    20
    موصول شکریہ جات:
    78
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    قرآن احادیث اور اجماع امت سب کا اس بات پر اتفاق ہے کہ جناب رسول اللہ ﷺ آخری نبی ہیں، اسی بات کو قرآن میں تقریباً سو سے زائد جگہ بیان کیا گیا ہے، مگر اس کے ساتھ ساتھ نبی کریم ﷺ نے یہ بھی پیشین گوئی کی تھی کہ:
    لا تقوم الساعۃ حتی یبعث دجالون کذّابون قریبا من ثلاثین کلھم یزعم انہ رسول اللہ۔
    (بخاری:۲/۱۰۵۴۔ مسلم۲/۳۹۷)
    ترجمہ: قیامت اس وقت تک قائم نہیں ہوگی جب تک کہ تیس کے قریب دجال اور کذاب پیدا نہ ہوں، جن میں سے ہر ایک یہ دعویٰ کرے گا کہ وہ اللہ کا رسول ہے۔
    یہ پیشین گوئی بھی پیدا ہوئی، آپﷺکے آخری ایام میں ہی مسیلمہ کذاب نے نبوت کا دعویٰ کردیا، اسی طرح یمن کے ایک باشندہ اسود عنسی اور ایک مکار عیار عیسائی عورت سجاح بنت حارث عراقی نے آپﷺ کی نبوت کے بعد اپنی نبوت کا اعلان کردیا، اس کے بعد بھی لوگوں نے نبوت کا دعویٰ کیا، پھر اٹھارہوں صدی کے اواخر میں بھی ایک شخص نے نبوت کا دعویٰ کیا، جس کو لوگ مرزا غلام احمد قادیانی کے نام سے جانتے ہیں۔
    ۱۸۵۷ء میں برطانوی سامراجیوں نے جس مکر و فریب، عیاری ہتھکنڈوں سے مسلمان حکمرانوں کو تخت وتاج سے محروم کیا اور خود تمام احتیارات و اقتدار پر قابض ہوگئے، ان کو ڈر تھا کہ کہیں یہ مسلمان پھر ہم سے اقتدار نہ چھین لیں، اس خطرے کے پیش نظر انہوں نے مسلمانوں کو کمزور کرنے کے لئے ان میں انتشار و افتراق کے بیج بونے شروع کردئے، ان میں سے ایک مرزا غلام احمد قادیانی بھی تھا، جس سے انہوں نے اسلام کے بنیادی عقائد پر ضرب لگائی، کبھی نبوت کا دعویٰ کروایا اور کبھی انبیاء علیہم السلام کو برا بھلا کہلوایا اور کبھی قرآن و حدیث کو غلط ثابت کروانے کی کوشش کی اور پھر آخر میں جہاد جس سے برطانوری حکومت کو ڈر تھا کہ ہماری حکومت کو جہاد سے یہ چھین نہ لیں، اس کے لئے انہوں نے مرزا غلام احمد کی زبان سے کہلوایا کہ جہاد اب ختم ہوگیا اور اس بات کا مرزا صاحب نے کئی بار اعلان کیا کہ ہر وہ شخص جو مجھ سے بیعت کرے کہ وہ مجھ کو مسیح موعود جانتا ہے اسی میں یہ عقیدہ بھی ہے کہ اب اس زمانہ میں جہاد حرام ہوگیا ہے۔
    کبھی کہا کہ:
    چھوڑدو اے دوستو جہاد کا خیال دین کے لئے حرام ہے اب جنگ و قتال بند ہو چکا ۔ جہاد کا حکم منع ہو گیا ،
    بہر حال انگریز نے اپنے مقصد کو پورا کیا اور مسلمانوں کی فکری وحدت میں انتشار پیدا کردیا اور بالآخر انگریزوں نے ایک عرصۂ دراز تک بر صغیر پر حکومت کی۔
     
  2. ‏مئی 06، 2013 #2
    الیاسی

    الیاسی رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏فروری 28، 2012
    پیغامات:
    425
    موصول شکریہ جات:
    736
    تمغے کے پوائنٹ:
    86

    عموما یہ سمجھا جاتا ہے کہ قادینیوں کو پیسے ملتے ھیں اس لیے قادیانی بنتا ہے ایسی کوئی بات نھیں ان کی پاس بھی اپنی کفر پر دلایل ھوتے ھیں قرآن وحدیث سے نوبل انعام یافتہ لوگ بھی قادیانی ہے ان کہ پیسے کی کیا ضرورت ؟؟ میرای مقصد یہ ہے کہ صرف پیسہ نھیں بلکہ لوگوں کو گمراہ کرنے کیلیے ان کی پاس بڑے دلایل موجود ہے اس لیے مسلمان کو مطالعہ کرکے ہر دم تیار
    رھنا چاھیے
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں