1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

فضائل اعمال ! 30 سال سے جنت میرے سامنے آتی رہی - شیخ ابو ذید ضمیر حفظہ اللہ

'تبلیغی جماعت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏اپریل 21، 2014۔

  1. ‏اپریل 21، 2014 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,971
    موصول شکریہ جات:
    6,508
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

  2. ‏اپریل 21، 2014 #2
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جزاک اللہ خیرا عامر بھائی
    دیوبندیوں کا مولوی ایک نمبر کا جھوٹا ہے، بلکہ یہ کہا جائے کہ جھوٹ بولنے میں پی ایچ ڈی کر رکھی ہے تو بے جا نہ ہو، ہم ان جھوٹ کے پلندوں کو بتانا چاہتے ہیں کہ جنت کیا چیز ہے۔سنیں:
    ایک حدیث کا مفہوم ہے کہ میرے نبی جناب محمد صلی اللہ علیہ وسلم کو خواب میں جنت کے اندر ان کا مقام دکھایا گیا تو اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے اس میں جانے کی خواہش ظاہر کی، جس پر فرشتوں نے کہا کہ آپ کی ابھی کچھ زندگی باقی ہے۔ (او کما قال النبی صلی اللہ علیہ وسلم)
    صرف اپنا ٹھکانہ دیکھ کر میرے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کس قدر جنت میں جانے کی خواہش رکھتے تھے، اور دیوبندیوں کا مولوی نے اپنی افیشنسی بڑھانے کے لئے جھوٹ بولا ہے، اصل بات یہ ہے کہ یہ یہودیوں کی طرح اپنے گمانوں پر خوش ہیں، ان کو پتہ تھا کہ ہم جو کرتوت کر رہے ہیں اس پر چِھتر پڑیں گے اسی لئے وہ موت کی تمنا نہیں کرتے تھے، اور آرزو یہ تھی کہ جنت میں ہمارے سوا کوئی جائے گا ہی نہیں۔۔۔ یہ جاہل دیوبندیوں کے مولوی بھی اسی پر عمل پیرا ہیں شاید۔ واللہ اعلم
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں