1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

فوت شدہ رشتے دار کو خواب میں دیکھنا

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد شاہد, ‏اکتوبر 26، 2019۔

  1. ‏اکتوبر 26، 2019 #1
    محمد شاہد

    محمد شاہد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 18، 2011
    پیغامات:
    2,506
    موصول شکریہ جات:
    6,012
    تمغے کے پوائنٹ:
    447

    محترم علماء کرام ،
    السلام علیکم
    میرا سوال یہ ہے کہ
    "اگر کوئی شخص اپنے فوت شدہ رشتے دار کو خواب میں دیکھے اور خواب میں وہ فوت شدہ شخص اس کو بلائے یا لینے آنے کی بات کرے تو اس کی کیا تعبیر ہو گی؟ کیا اس سے مراد یہی ہے کہ وہ شخص مرنے والا ہے۔"
     
  2. ‏اکتوبر 27، 2019 #2
    عبد الخبیر السلفی

    عبد الخبیر السلفی رکن
    جگہ:
    بدایوں
    شمولیت:
    ‏اگست 28، 2018
    پیغامات:
    145
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    57

    علم تعبیر رویاء وہبی علم ہے اللہ تعالیٰ جس کو چاہتا ہے دیتا ہے اس کے لئے کوئی قاعدہ متعین نہیں کبھی کبھی ایک ہی چیز دو شخصوں کے لئے الگ الگ تعبیر رکھتی ہے عموماً دیکھاجاتا ہے معتبر معبر (پابند شرع) جب کوئی تعبیر بتاتا ہے تو وہ پوری ہو جاتی ہے اسی لئے حکم ہے کہ خواب کی تعبیر کسی معتبر انسان سے پوچھی جائے مذکورہ بالا سوال سے متعلق مجھے حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کی شہادت کے موقع کا خواب یاد آ رہا ہے ( غالبا علامہ إحسان الہی ظہیر رحمہ اللہ کی کسی تقریر سے سنا ہے) کہ حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے شہادت کے روز نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو دیکھا تھا جو اپنے ساتھ افطار کی دعوت دے رہے ہیں یہ واقعہ میں نے صرف سنا ہے تحقیق نہیں کی ہے اہل اس کی تحقیق فرما دیں، اگر واقعہ سچ ہے تو اس سے تعبیر رویا پر کچھ نا کچھ روشنی پڑتی ہے واللہ اعلم بالصواب
     
    • مفید مفید x 2
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  3. ‏اکتوبر 28، 2019 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,368
    موصول شکریہ جات:
    2,395
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    سیدنا عثمان رضی اللہ عنہ کا شہادت سے قبل خواب
    مسنداحمد بن حنبلؒ اور فضائل صحابہ لاحمدؒ میں حدیث ہے کہ:
    حدثنا عبد الله قال: حدثني عثمان بن أبي شيبة قثنا يونس بن أبي اليعفور العبدي، عن أبيه، عن مسلم أبي سعيد مولى عثمان بن عفان، أن عثمان بن عفان أعتق عشرين مملوكا، ودعا سراويل فشدها عليه، ولم يلبسها في جاهلية ولا إسلام، قال: إني رأيت رسول الله صلى الله عليه وسلم البارحة في النوم، ورأيت أبا بكر وعمر، وإنهم قالوا لي: «اصبر، فإنك تفطر عندنا القابلة» ، ثم دعا بمصحف فنشره بين يديه، فقتل وهو بين يديه.
    ابو سعید مسلم سے مروی ہے کہ سیدنا عثمان ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ نے بیس غلام آزاد کیے اور ازار منگوا کر پہن لی، اس سے پہلے آپ نے دورِ جاہلیت میں یا قبول اسلام کے بعد کبھی بھی شلوار نہیں پہنی تھی، پھر انھوں نے کہا: میں نے آج رات خواب میں رسول اللہ ‌صلی ‌اللہ ‌علیہ ‌وسلم ، سیدنا ابو بکر ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ اور سیدنا عمر ‌رضی ‌اللہ ‌عنہ کو دیکھا ہے، انہوں نے مجھ سے فرمایا کہ صبر کرنا، آئندہ رات تم ہمارے ہاں روزہ افطار کرو گے۔ اس کے بعد انہوں نے قرآن مجید کا مصحف منگوایا اور اپنے سامنے کھول کر رکھ لیا، پھر وہ اس حال میں شہید کردیئے گئے کہ مصحف ان کے سامنے کھلا ہوا تھا۔‘‘
    مسنداحمد 526
    اور فضائل الصحابہ لاحمد ،وقال الشيخ وصي الله عباس :اسناده حسن
    https://archive.org/details/ozkorallh_20170828_2059/page/n495
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    • علمی علمی x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  4. ‏اکتوبر 28، 2019 #4
    عبد الخبیر السلفی

    عبد الخبیر السلفی رکن
    جگہ:
    بدایوں
    شمولیت:
    ‏اگست 28، 2018
    پیغامات:
    145
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    57

    جزاکم اللہ خیرا و احسن الجزاء
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں