1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قاتل حسين يزيد نہيں بلکہ کوفي شيعہ ہيں , يزيد بريء ہے

'اہل تشیع' میں موضوعات آغاز کردہ از رفیق طاھر, ‏اپریل 02، 2012۔

  1. ‏اپریل 02، 2012 #1
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    قاتل حسين يزيد نہيں بلکہ کوفي شيعہ ہيں , يزيد بريء ہے۔
    [​IMG]
    [​IMG]
    [​IMG]



    [​IMG]



    [​IMG]



    [​IMG]

     
    • شکریہ شکریہ x 11
    • مفید مفید x 2
    • لسٹ
  2. ‏مئی 29، 2012 #2
    نوید عثمان

    نوید عثمان رکن
    شمولیت:
    ‏جنوری 24، 2012
    پیغامات:
    181
    موصول شکریہ جات:
    119
    تمغے کے پوائنٹ:
    53

    واقعہ کربلا کو ایک طرف رکھیں اور یہ بتائیں کہ واقعہ حرہ اور خانہ کعبہ پر حملہ کا ذمہ دار کون تھا۔
     
  3. ‏مئی 29، 2012 #3
    نوید عثمان

    نوید عثمان رکن
    شمولیت:
    ‏جنوری 24، 2012
    پیغامات:
    181
    موصول شکریہ جات:
    119
    تمغے کے پوائنٹ:
    53

    اگر یزید نے قتل کا حکم نہیں دیا تو اس نے ان قاتلین حسین ؓ کو کیا سزا دیں کیا آپ کسی مستند حوالہ سے کسی ایک کو دی گئ سزا ثابت کر سکتے ہیں ۔ بنو امیہ کے دور میں تو گورنر لوگوں کے ہاتھ تک کٹوا دیتے تھے وہ تو پھر بادشاہ تھا ۔اپنی بیعت توڑنے پر تو اس نے مدینہ والوں پر شامی فوج بھیج دی اور وہاں وہ خون خرابہ برپا کروایا کہ جس کی حد نہیں لیکن قاتلین حسین ؓ اس کی دسترس سے باہر تھے ۔ رافضیت کا رد کرتے کرتے ناصبیت کی حد تک چلے جانا یہ بھی کوئی ٹھیک بات نہیں۔۔
     
    • شکریہ شکریہ x 5
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏جون 15، 2012 #4
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,765
    موصول شکریہ جات:
    9,778
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    کیا آپ کسی مستند حوالہ سے یہ ثابت کرسکتے ہیں کہ کسی ایک مسلمان نے بھی یزیدبن معاویہ رحمہ اللہ سے خون حسین رضی اللہ عنہ کے قصاص کا مطالبہ کیا ہو؟؟؟؟؟؟؟؟؟

    عثمان رضی اللہ عنہ کو شہیدکیا گیا تو خون عثمان رضی اللہ عنہ کے قصاص کا مطالبہ ایک دو نہیں بلکہ پوری ایک جماعت نے کیا ، لیکن حسین رضی اللہ عنہ کی شہادت پر قصاص کا مطالبہ امت مسلمہ میں کسی طرف سے بھی نہیں ہوا، نہ انفرادی طورپر نہ اجتماعی طورپر، اورنہ ہی اس واقعہ کی وجہ سے کوئی بغاوت ہوئی۔
    خون عثمان رضی اللہ عنہ کے قصاص کی وجہ سے ایک عظیم جماعت نے علی رضی اللہ عنہ کے خلاف احتجاج کیا حتی کہ میدان میں بھی اترآئے۔
    لیکن خون حسین رضی اللہ عنہ کے قصاص کے نام پرکسی قلیل جماعت نے بھی احتجاج کی صدا بلند نہ کی کیوں ؟؟؟؟؟؟؟


    اس کی دو ہی وجہ ہوسکتی ہے:


    الف:
    یزید رحمہ اللہ یا اس کے ماتحتوں نے حسین رضی اللہ عنہ کے خون کا قصاص لے لیا تھا جیساکہ بعض روایات میں اس کی صراحت بھی ملتی ہے ، لیکن اصول حدیث کے معیارپر وہ ثابت نہیں۔


    ب:
    حکومت کے سامنے واضح طورپرکچھ ایسی سیاسی مجبوریاں تھی جس کا علم سب کو تھا اس لئے کسی نے قصاص کا مطالبہ کیا ہی نہیں ۔
     
  5. ‏جون 16، 2012 #5
    allahkabanda

    allahkabanda مبتدی
    شمولیت:
    ‏مارچ 27، 2012
    پیغامات:
    174
    موصول شکریہ جات:
    546
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    یعنی تمہارے نزدیک کربلا کا واقعہ حرہ سے چھوٹا ہے ؟
     
  6. ‏جون 16، 2012 #6
    Abdulallam

    Abdulallam مبتدی
    شمولیت:
    ‏جون 06، 2012
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    62
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    yeh sirf 1 batil guman hai jis par koi dalil nahi. Waqeat is k mukhalif hai. Us zamane ki mustanad tarekh dekhe to malum hota hai k yazid palid majbur nahi balke jabir badeshah tha. Subhanallh kya majbury hai. Pehle imam husain ke khilaf lashkar kashi . Phir madina ko 3din ke liye halal karna phir makkah par chadai. Ma lakum kaifa tahkumun.
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  7. ‏جون 16، 2012 #7
    Abdulallam

    Abdulallam مبتدی
    شمولیت:
    ‏جون 06، 2012
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    62
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    mamla chute bade ka nahi balke hamare nasiby dost karbala ka wqia kisi awr ke zemme lagate hai. Ham agar ye galat bat taslim bhi kar le to in 2 bade jaraim ka kya jawab hai?
     
  8. ‏جون 16، 2012 #8
    Abdulallam

    Abdulallam مبتدی
    شمولیت:
    ‏جون 06، 2012
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    62
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    shekh muhtarm shiya kab se hajjat ho gae jo un ki tahrir par faesle hone lage.
     
  9. ‏جون 16، 2012 #9
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,765
    موصول شکریہ جات:
    9,778
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    جناب آپ کے ان الفاظ میں میرے سوال کا جواب نہیں ہے ۔
    میراسوال تھا:
    کیا آپ کسی مستند حوالہ سے یہ ثابت کرسکتے ہیں کہ کسی ایک مسلمان نے بھی یزیدبن معاویہ رحمہ اللہ سے خون حسین رضی اللہ عنہ کے قصاص کا مطالبہ کیا ہو؟؟؟؟؟؟؟؟؟

    آپ نے لکھا:
    سبحان اللہ !
    کوفی یزیررحمہ اللہ کی مرضی کے خلاف قتل حسین پرقادر تھے لیکن اہل کوفہ میں سے کسی کو بھی اتنی قدرت حاصل نہ تھی کہ یزیر رحمہ اللہ سے خون حسین کے قصاص کا مطالبہ کرتا۔
    اہل مدینہ کو اس قدر وسعت ملی کہ انہوں نے نہ صرف یہ کہ یزید کی مخالفت کی بلکہ یزیر رحمہ اللہ کی بیعت ہی توڑ دی ، لیکن شہادت حسین سے لیکر اس واقعہ تک تمام اہل مدینہ میں ایک بھی فرد اس بات پر قادرنہ تھا کہ یزیر رحمہ اللہ سے خون حسین کے قصاص کا مطالبہ کرتا یا اسی بات کو بنیاد بناکر یزید کی مخالفت کرتا۔
    اہل مکہ کو تو اس قدر حوصلہ تھا کہ وہ علی الاعلان حکومت یزید کی مخالفت کریں لیکن ان میں بھی اتنی ہمت نہ ہوئی کہ یزیر رحمہ اللہ سے خون حسین کے قصاص کا مطالبہ کرتے، یا اسی بات کو بنیاد بناکریزید کی مخالفت کرتے ۔

    سوال یہ ہے کہ امت مسلمہ نے یزید رحمہ اللہ سے خون حسین رضی اللہ عنہ کے قصاص کا مطالبہ کیوں نہ کیا ؟؟؟؟؟؟؟؟؟
    اگروہ مجبورتھے تو یہ مجبوری اس وقت کہاں تھی جب مکہ و مدینہ میں یزیدرحمہ اللہ کی کھلے عام مخالفت کی گی ؟؟؟



    اگریزید اس لئے قصوروار ہے کہ اس نے خون حسین رضی اللہ عنہ کا قصاص نہیں لیا تو پوری امت بھی قصوروارہے کہ ان میں کسی ایک نے بھی اس قصاص کا نہ تو مطالبہ کیا اورنہ ہی اس کے سبب کسی بھی قسم کا احتجاج کیا ہے، اورنہ ہی اس کی وجہ سے کہیں بھی یزید کی بیعت توڑی گئی۔
     
  10. ‏جون 16، 2012 #10
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,765
    موصول شکریہ جات:
    9,778
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    سبحان اللہ !
    علی رضی اللہ عنہ کو اہل جمل پریلغار اور صفین میں خونزیرجنگ پرقدرت تھی مگرقاتلین عثمان رضی اللہ عنہ سے قصاص کی قدرت نہ تھی !!!!!!
    کیا خیال ہے علی رضی اللہ عنہ سے متلق ؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟؟




    یاد رہے علی رضی اللہ عنہ سے خون عثمان کے قصاص کا مطالبہ بھی ہوا تھا اوریہ مطالبہ کسی ایک فرد نہیں بلکہ ایک جماعت کی طرف سے ہواتھا ۔
    اب علی رضی اللہ عنہ کے پاس اتنی طاقت تو نہ تھی خون عثمان میں ملوث چند لوگوں کے خلاف کارروائی کرتے لیکن ان کے پاس اتنی طاقت کہاں سے آگئی کہ پوری ایک جماعت کے خلاف لشکرکشی کردی۔
    سبحان اللہ !
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں