1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قتل ناحق سنگین ترین جرم !

'مسلمانوں کے حقوق' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏نومبر 06، 2013۔

  1. ‏نومبر 06، 2013 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    960060_613313042019792_1606165305_n.jpg
     
    • پسند پسند x 5
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  2. ‏نومبر 06، 2013 #2
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    183095_523857704342236_1560102480_n.jpg
     
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  3. ‏نومبر 06، 2013 #3
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    مسلمان کی طرف ہتھیار سے محض اشارہ کرنا بھی منع ہے،اَسلحہ کی کھلی نمائش پر بھی پابندی

    فولادی اور آتشیں اسلحہ سے لوگوں کو قتل کرنا تو بہت بڑا اقدام ہے۔ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اہلِ اِسلام کو اپنے مسلمان بھائی کی طرف اسلحہ سے محض اشارہ کرنے والے کو بھی ملعون و مردود قرار دیا ہے۔

    :۔ حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے مرو ی ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ارشاد فرمایا :

    یہاں اِستعارے کی زبان میں بات کی گئی ہے یعنی ممکن ہے کہ ہتھیار کا اشارہ کرتے ہی وہ شخص طیش میں آجائے اور غصہ میں بے قابو ہو کر اسے چلا دے۔ اس عمل کی مذمت اور قباحت بیان کرنے کے لئے اسے شیطان کی طرف منسوب کیا گیا ہے تاکہ لوگ اِسے شیطانی فعل سمجھیں اور اس سے باز رہیں۔

    :۔ یہی مضمون ایک اور حدیث میں اِس طرح بیان ہوا ہے :


    حضرت جابر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ :


    ننگی تلوار کے لینے دینے میں جہاں زخمی ہونے کا احتمال ہوتا ہے وہاں اسلحہ کی نمائش سے اشتعال انگیزی کا بھی خدشہ رہتا ہے۔ اسلام کے دین خیر و عافیت اور مذہب امن و سلامتی ہونے کا اس سے بڑا اور کیا ثبوت ہو سکتا ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے کھلے بندوں اسلحہ کی نمائش پر پابندی لگا دی، تاکہ نہ تو اسلحہ کی دوڑ شروع ہو اور نہ ہی اس سے کسی کو کیا جا سکے۔ مذکورہ حدیث میں لفظِ مَسْلُول اِس اَمر کی طرف اشارہ کر رہا ہے کہ ریاست کے جن اداروں کے لیے اسلحہ ناگزیر ہو وہ بھی اس کو غلط استعمال سے بچانے کے لیے کے انتظامات کریں۔
    درج بالا بحث سے ثابت ہوتا ہے کہ جب اسلحہ کی نمائش، دکھاوا اور دوسروں کی طرف اس سے اشارہ کرنا سخت منع ہے تو اس کے بل بوتے پر ایک مسلمان معاشروں میں اسلحہ لہراتے ہوئے اسلام کے نفاذ کے نام پر آتشیں گولہ و بارود سے مخلوق خدا کے جان و مال کو تلف کرنا کتنا قبیح عمل اور ظلم ہوگا!۔ اور یاد رہے تاریخ اسلامی مین یہ طریقہ ہمیشہ سے خوارج کا رہا ہے۔
     
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  4. ‏نومبر 06، 2013 #4
    اسامہ خان

    اسامہ خان مبتدی
    شمولیت:
    ‏نومبر 06، 2013
    پیغامات:
    3
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    3


    یونس صاحب ہم بھی اسی بات کو ٹھیک سمجھتے ہیں مگر جب اس کا طلاق سب پر ایک جیسا ہو مثلا مسلم معاشروں سے مراد پاکستان کثمیر اور افغانستان ہے ان تینوں جگہوں پر اسلام کے نفاذ یا تکمیل پاکستان کے نام پر اسلحہ لیرانا اور مسلمان عمر فاروق عبداللہ اور اس کے مسلمان وزرا اور اسی طرح مسلمان حامد کرزئی اور اس کے مسلمان ساتھیوں پر ہتھیار اٹھانے والے یا ان کی اخلاقی حمایت کرنے والے سارے ہماری نزدیک خارجی ہیں اصل میں سب کام اسامہ من لادن نے شروع کیا تھا اسکو کیش کروانے کے لئے جہادی علما نے اس کو فنڈ کے لئے استعمال کیا
    یقین جانیں بڑا اچھا موضوع شروع کیا ہے آپ نے - ہم آپ کے ساتھ ہیں ان جہادیوں کو بھاگنے نہیں دینا
     
  5. ‏نومبر 06، 2013 #5
    متلاشی

    متلاشی رکن
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2012
    پیغامات:
    336
    موصول شکریہ جات:
    373
    تمغے کے پوائنٹ:
    92

  6. ‏فروری 23، 2014 #6
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    Qatl-e-Nahaq
    حوالہ:

    عَنْ عُبَادَةَ بْنِ الصَّامِتِ أَنَّهُ سَمِعَهُ يُحَدِّثُ عَنْ رَسُولِ اللَّهِ -صلى الله عليه وسلم- أَنَّهُ قَالَ « مَنْ قَتَلَ مُؤْمِنًا فَاعْتَبَطَ بِقَتْلِهِ لَمْ يَقْبَلِ اللَّهُ مِنْهُ صَرْفًا وَلاَ عَدْلاً»
    (سنن ابی داؤد:4272)
    1898282_363740957097505_2003228913_n.jpg
     
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  7. ‏فروری 24، 2014 #7
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,160
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    محترم عامر بھائی آپ کی مطلقا اور غیر مقید باتوں کے مندرجہ ذیل نقصانات ہو سکتے ہیں کہ کلمۃ الحق یراد بھا الباطل کے تحت لوگ مطلق بات ہونے کی وجہ سے اسکا غلط مطلب لے لیتے ہیں ذرا نیچے پوسٹ دیکھیں
    میرے خیال میں اس سے مندرجہ ذیل نقصانات ہوں گے
    1-آپ کی مطلق بات سے ہماری جماعت بھی خارجی بنا دی گئی کہ نہیں-
    2-خارجیوں کی جو ذینیت ہوتی ہے اسکے تحت تو آپ کی بات میں الٹا انکو دلیل مل جائے گی کہ چونکہ حکومت نے پہلے قبائلی مسلمانوں کو ناحق مارنا شروع کیا پس حکومت خارجی ہو گئی اور ہم تو خارجیوں کو اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے حکم کے تحت مار رہے ہیں کہ انکو جہاں پاؤ قتل کرو

    میں آپ کی نیت پر شک نہیں کر رہا کہ آپ بھی ہماری جماعت کو خارجی سمجھ رہے ہیں یا آپ بھی حکومت کو خارجی ثابت کرنا چاہتے ہیں مگر چونکہ یہ حساس موضوع ہے اس لئے یا تو بات کو مکمل وضاحت کے ساتھ کیا جائے یا پھر ایسے موضؤع کو چھیڑا بھی نہ جائے
    اگر برا لگا ہو تو معاف کر دیں ارادہ تو اصلاح کا ہی ہے اللہ ہدایت پہ چلائے امین
     
  8. ‏اپریل 08، 2014 #8
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :
    اللہ تعالی کے نزدیک کسی مومن کا ناحق قتل کرنا ساری دنیا کے زوال اور تباہی سے کہیں بڑھ کر ہے
    سنن ابن ماجہ : 2619
    صحیح ابن ماجہ : 2138
    صحيح الجامع 5078
    1505345_611642548904018_534083821_n.jpg
     
  9. ‏ستمبر 20، 2015 #9
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    12003351_595864117218520_8528471204551559337_n (1).jpg


    ناحق قتل دین و دنیا کو تنگ کر دینے والا عمل :


    عَنْ ابْنِ عُمَرَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُمَا قَالَ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَنْ يَزَالَ الْمُؤْمِنُ فِي فُسْحَةٍ مِنْ دِينِهِ مَا لَمْ يُصِبْ دَمًا حَرَامًا

    (صحيح البخاري :6862) بَاب قَوْلِ اللَّهِ تَعَالَى { وَمَنْ يَقْتُلْ مُؤْمِنًا مُتَعَمِّدًا فَجَزَاؤُهُ جَهَنَّمُ }
     
  10. ‏اکتوبر 06، 2015 #10
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    11147242_871679419566995_8668873220717997457_n (1).jpg


    خُوب جان لو !


    -------------
    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ جو انسان، کسی چڑیا یا اس سے بھی چھوٹے کسی (حلال) جانور کو بے مقصد اور نا حق قتل کرتا ہے تو اللہ تعالی بروز قیامت اس کے بارے میں باز پرس کرے گا ، عرض کیا گیا کہ یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اس کا حق کیا ہے ؟ فرمایا
    اس کا حق یہ ہے کہ اسے ذبح کر کے کھا لو، ایسا نہ کرو کہ اس کا سر کاٹ کر اس کو پھینک دو


    ----------------------------------------------------------

    (صحيح الترغيب : 2266 ،1092، ، الأم للشافعي : 5/595
    تخريج مشكاة المصابيح : 4/118 ، ،الترغيب والترهيب : 2/162 ، ،
    البدر المنير : 9/376 ، ،نسائي ، كتاب الضحايا : 4445 (4450))
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں