1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قرب الہٰی کے حصول کا ”فاسقانہ امتحان“

'عملی تصوف' میں موضوعات آغاز کردہ از یوسف ثانی, ‏جون 25، 2014۔

  1. ‏جون 25، 2014 #1
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,760
    موصول شکریہ جات:
    5,268
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    اردو ڈائجسٹ شمارہ جون 2014 میں شائع شدہ ایک مضمون:
    imtehaan-1.gif imtehaan-2.gif imtehaan-3.gif
     
  2. ‏جون 25، 2014 #2
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,760
    موصول شکریہ جات:
    5,268
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    مدیراعلیٰ،
    اردوڈائجسٹ، لاہور
    السلام علیکم و رحمة اللہ و برکاتہ

    فاسقانہ امتحان کے ذریعہ قرب الٰہی کا حصول ؟

    جون 2014 ءکے شمارے میںمحترم حبیب اشرف صبوحی کا مضمون ”امتحان“ پڑھ کر حیرت ہوئی کہ اردو ڈائجسٹ جیسے مو¿قر اور مستند رسالہ میں اس مضمون کے ذریعہ ”عشق الٰہی“ کے ایک ایسے نام نہاد ”امتحان“ کی تشہیرو تبلیغ کی جارہی ہے ،جس کا اسلامی تعلیمات یعنی قرآن و صحیح حدیث سے دور دورکا بھی کوئی واسطہ نہیں۔ یہ مضمون حضرت فقیر سید عزیز الدین کے مرید رستم علی شاہ کے بارے میں ہے، جن کا کشمیر میں مزار، بقول مصنف آج بھی ”مرجع خلائق“ ہے۔قطع نظر اس بات کے کہ شاہ صاحب کی یہ کہانی درست ہے بھی یا نہیں، ہمیں یہ دیکھنا ہوگا کہ کیا نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی لائی ہوئی شریعت میں ایسے کسی ”امتحان“ کی گنجائش موجود ہے جس میں (نعو ذ باللہ) کوئی نوجوان قرب الٰہی کے حصول کی غرض سے کسی طوائف کی بارہ برس تک ایسی نوکری کرے جس میں سونے سے قبل طوائف کے بدن کو دبانا بھی شامل ہو۔ اور اس نام نہاد امتحان میں ”کامیابی“ پر نوجوان ”ولی اللہ“ کے مرتبہ پر فائز ہوجائے۔ استغفر اللہ۔ ہم سب مسلمان کم و بیش عشق الٰہی سے سرشار بھی ہیں اور قرب الٰہی کے حصول کے خواہاں بھی ہیں۔ توکیا مضمون نگار یا اس مضمون کو پڑھنے والا کوئی مسلمان قاری اپنے کسی نوجوان بیٹے کو ولی اللہ بنانے کے لئے کسی ایسے ہی ” امتحان“ پر بھیجنے پر تیار ہو گا؟ اور کیا دور رسالت صلی اللہ علیہ وسلم یا بعد میں (نعوذ باللہ) کسی صحابی رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے کبھی اس قسم کے کسی بھی ”فاسقانہ طرز عمل“ کے ذریعہ قرب الٰہی کے حصول کی کوشش کی؟ امید ہے کہ ان چند سطور کو اگلے شمارہ میں ضرور شائع کیا جائے گا تاکہ مسلمان نوجوان قارئین تک اسلام کا غلط اور گمراہ کن عقیدہ پہنچنے کا کسی نہ کسی حد تک ازالہ ہوسکے۔ والسلام (یوسف ثانی، مدیر پیغام قرآن ڈاٹ کام)
     
    Last edited: ‏جون 25، 2014
    • متفق متفق x 3
    • زبردست زبردست x 2
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  3. ‏جون 25، 2014 #3
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,760
    موصول شکریہ جات:
    5,268
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    اگر آپ میں سے بھی کوئی اس مضمون کا جواب دینا چاہے تو اس ای میل پر اپنے خیالات بھیجئے۔
    editor@urdu-digest.com

    اردو ڈائجسٹ کا آن لائن پتہ یہ ہے:
    http://urdudigest.pk/
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  4. ‏جون 28، 2014 #4
    جوش

    جوش مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 17، 2014
    پیغامات:
    621
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس جب بھی کویی شخص آتا اور سوال کرتا کہ آپ ہمیں کویی ایسا عمل بتایں کہ اس کو انجام دوں اور اسکی وجہ سے جنت میں چلاجاوں آپ صلی اللہ علیہ وسلم اس کو توحید کو لازم پکڑ نے کی تلقین کرتے اور نماز قایم کرنے ۔ زکوہ دینے۔ روزہ رکھنے ۔ اور حج کرنے کی تلقین کرتے ۔ یہ پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی تعلیمات ہوتی تھیں ۔ چونکہ صوفیوں کا دین الگ ہے اسلام سے انکا کویی تعلق نھین ہے اسلیے ان سے دور رہنا چاہیے جو ان کے چکر مین پھنس گیا وہ ہلاک ہوگیا۔
     
    • پسند پسند x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  5. ‏جون 28، 2014 #5
    جوش

    جوش مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 17، 2014
    پیغامات:
    621
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    صوفیون کی وجہ سے ایک بہت غلط لفظ یا غلط ترکیب ہمارے اسلامی سماج مین رایج ہے وہ ہے لفظ ۔ عشق ۔ جیسے عشق رسول ۔ اور ۔عشق الہی ۔ یہ بہت غلط تعبیر ہے کم از کم مسلمانون بالخصوص اہل حدیثوں کو اس لفظ سے پرہیز کرنا چاپیے اس کی جگھہ محبت الہی اور محبت رسول استعمال کرنا چاہیے ۔ قران و حدیث میں لفظ محبت آیا ہے نہ کہ لفظ عشق ۔
     
  6. ‏جون 28، 2014 #6
    جوش

    جوش مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 17، 2014
    پیغامات:
    621
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    مسلمان بھایوں سے مودبانہ گزارش ھے کہ۔ تصوف ۔ کو اسلام سے نا ملایں کیونکہ تصوف کا اسلام سے کویی تعلق نہیں ہے ۔ تصوف الگ مذہب ہے اور اسلام الگ ۔ تصوف سے اسلام کو کافی نقصان پہونچاہے اور پہونچ رہا ہے اب جو لوگ ۔۔ اسلامی تصوف ۔کہتے ہین وہ غلطی پر ہیں کیونکہ وہ غیر شعوری طور پریہ تاثر دینا چاہتے ہین کہ اسلام مین تصوف ہے ۔ سماج مین علماٰا کرام پر صوفیانہ فکر کا زیادہ چھاپ پڑاہے اللہ ہم سب کو تصوفانہ افکارو خیالات سے محفوظ رکھے ۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں