1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قریش کے نوجوان اور آزاد کردہ غلام

'طنز ومزاح' میں موضوعات آغاز کردہ از ابو حسن, ‏اپریل 16، 2018۔

  1. ‏اپریل 16، 2018 #1
    ابو حسن

    ابو حسن رکن
    شمولیت:
    ‏اپریل 09، 2018
    پیغامات:
    146
    موصول شکریہ جات:
    17
    تمغے کے پوائنٹ:
    57

    سعید بن یحیی اموی اپنے باپ سے نقل کرتے ہیں کہ

    قریش کے نوجوان تیر اندازی کی مشق کر رہے تھے

    تو ان میں سے ایک نوجوان نے جو ابوبکر اور طلحہ رضی اللہ عنہما کی اولاد میں سے تھا

    تیر چلایا جو ٹھیک نشانہ پر بیٹھا تو اس نے ( فخریہ ) کہا کہ میں ابن القرنین ( رسول اللہ ﷺ کے دو مصاحب خاص کا بیٹا ہوں )


    پھر دوسرے نے چلایا جوکہ عثمان رضی اللہ عنہ کی اولاد میں سے تھا وہ بھی نشانہ پر لگا تو اس نے ( فخریہ ) کہا کہ میں شہید کا بیٹا ہوں

    پھر ایک شخص نے جو آزاد کردہ غلاموں میں سے تھا نے تیر چلایا تو وہ بھی نشانہ پرٹھیک لگا تو اس نے کہا

    میں اس کا بیٹا ہوں جس کو فرشتوں نے سجدہ کیا تھا

    لوگوں نے پوچھا وہ کون ہے ؟ تو اس نے کہا آدم علیہ السلام
    ----------------------------------------

    اس پر مجھے اپنا اور پیر صاحب کا مکالمہ یاد آگیا جو میں نے اس مضمون میں درج کیا ہے

    میرا شجرہ نسب توآدم علیہ السلام سے ملتا ہے اور تم ابھی
     
    Last edited: ‏اپریل 16، 2018
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں