1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

قیاس حجت نہیں بلکہ گمراہی (یعنی بدعت ) ہے !

'معاصر بدعی اور شرکیہ عقائد' میں موضوعات آغاز کردہ از راشد محمود, ‏نومبر 05، 2016۔

  1. ‏جنوری 14، 2017 #21
    ابن داود

    ابن داود سینئر رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    2,595
    موصول شکریہ جات:
    2,429
    تمغے کے پوائنٹ:
    489

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    @راشد محمود صاحب! آپ تو ہر بات کو غلط فہمی و ازالہ سے تعبیر کرتے جا رہے ہیں! آپ کو ان الفاظ کااطلاق بھی سیکھنا چاہئے!
    آپ کو جو نصیحت کی ہے آپ اس پر بھی غلط فہمی کی سرخی لگا رہے ہو!
    اس پر بھی اعتراف کی سرخی آپ کی جہالت کا ثبوت ہے، کہ آپ کو اب یہ معلوم ہوا ہے کہ اہل الحدیث کے ہاں قیاس حجت ہے!
    قارئین سے پہلے آپ اس بات کو اچھی طرح سمجھ لیں!
    آپ کو غالباً ''شرعی ماخذ ''اور'' شرعی حجت ''کے درمیان لطیف فرق کا علم نہیں!
     
    Last edited: ‏جنوری 14، 2017
    • پسند پسند x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  2. ‏جنوری 14، 2017 #22
    ابن داود

    ابن داود سینئر رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    2,595
    موصول شکریہ جات:
    2,429
    تمغے کے پوائنٹ:
    489

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    جس تعریف کی بناء پر آپ نے فرمایا تھا:
    اسی تعریف کی بنا پر ہم نے عرض کیا ہے:
    آپ تو سوال کو بھی ازالہ باور کروانا چاہتے ہو!
    دکھیں میاں! الفاظ کے معنی و مفہوم کا خیال رکھتے ہوئے، الفاظ کے انتخاب میں احتیاط سے کام لیں!
    ہمیں ہماری اردو سے بہت پیار ہے!
     
    Last edited: ‏جنوری 14، 2017
    • زبردست زبردست x 3
    • پسند پسند x 2
    • لسٹ
  3. ‏جنوری 15، 2017 #23
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    صحیح مسلم میں صرف ناصیہ پر مسح کا ذکر ہے اس کے متعلق آپ کیا کہیں گے وہاں پورے سر کے مسح کی بات نہیں۔ دونوں حدیثوں میں قیاس کے بغیر کیسے تطبیق دیں گے
    قیاس کی تعریف بھی آپ کے ذمہ ہے
     
  4. ‏جنوری 15، 2017 #24
    راشد محمود

    راشد محمود مبتدی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 24، 2016
    پیغامات:
    194
    موصول شکریہ جات:
    15
    تمغے کے پوائنٹ:
    27

    اعتراض :

    جواب :

    جناب ! ہمیں تو بڑی اچھی طرح معلوم ہے کہ اہل حدیث حضرات کے لئے حجت کیا کیا ہے !؟
    لیکن آپ جو سادہ لوح عوام کو یہ کہہ کر دوکھا دیتے ہیں کہ :
    "ہمارے لئے حجت صرف قرآن اور حدیث ہے یعنی اہل حدیث کے دو ہی اصول اَطِيْعُوا اللّٰهَ وَاَطِيْعُوا الرَّسُوْلَ"

    تو سادہ لوح عوام آپ کے دوکھے میں آجاتی ہے اور سمجھتی ہے کہ ان کے لئے صرف قرآن اور حدیث ہی حجت ہے !؟
    تو اسی لئے آپ کے بیان پر اعتراف لکھا گیا اور پھر اس پر تبصرہ کیا گیا -
    اب اپنے کیے اعتراف کو آپ جہالت کہہ لیں تو کوئی مضائقہ نہیں !؟
     
  5. ‏جنوری 15، 2017 #25
    راشد محمود

    راشد محمود مبتدی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 24، 2016
    پیغامات:
    194
    موصول شکریہ جات:
    15
    تمغے کے پوائنٹ:
    27

    اعتراض :

    جواب :

    ہم نے اطلاق سیکھا ہوا ہے کہ کہاں کرنا ہے الحمد للہ
    اگر آپ نے زیر مشاہدہ موضوع کے متعلق کوئی بات کرنی ہے تو کیجیے ، یوں ادھر ادھر کی ہوائیاں چھوڑنے سے اجتناب کریں -
     
  6. ‏جنوری 15، 2017 #26
    راشد محمود

    راشد محمود مبتدی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 24، 2016
    پیغامات:
    194
    موصول شکریہ جات:
    15
    تمغے کے پوائنٹ:
    27

    غلط فہمی : -

    ازالہ : -
    جناب ! آپ کو کیسے پتا کہ میں نے کس تعریف کی بنیاد پر کہا کہ میرا کوئی مسلک نہیں ہے ؟ آپ نے یہاں پر بھی اپنی قیاس آرائیاں شروع کر دیں ہیں !؟
    اور میں نے اس جملہ کے آگے بھی لکھا تھا کہ میرا دین ہے اور وہ اسلام ہے -
    نہ جانے اپنے مطلب کی عبارت پیش کر کے ، باقی کو چھپا کر آپ کا مقصد کیا ہے ؟
    اور جہاں تک تعلق ہے اس سوال کا کہ :
    "آپ تو سوال کو بھی ازالہ باور کروانا چاہتے ہو!"
    تو یہ بھی آپ کی غلط فہمی ہے -
    بتائیے کیا سوال کے ذریعے غلط فہمی کو دور نہیں کیا جا سکتا ؟؟؟
    رسول الله بھی غلط فہمی کے ازالہ کے لئے سوال پوچھا کرتے تھے -
    بات پھر وہی ہے کہ پوسٹ سے متعلقہ گفتگو کیجیے ،،،،،،،!
    قارئین ! آپ جب پوسٹ کو ملاحظہ کریں تو مکمل کو کیجیے-
     
  7. ‏جنوری 15، 2017 #27
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    4,593
    موصول شکریہ جات:
    2,001
    تمغے کے پوائنٹ:
    650

    علامہ صاحب !
    ایک سوال کا جواب ابھی تک آپ نے نہیں دیا جو بنیادی سوال ہے :
     
  8. ‏جنوری 15، 2017 #28
    ابن داود

    ابن داود سینئر رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    2,595
    موصول شکریہ جات:
    2,429
    تمغے کے پوائنٹ:
    489

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    اب آپ کی جہالت کایہ عالم ہو کہ آپ کو یہ بھی سمجھ نہ آئے کہ:
    تو میاں! آپ کی ''عقل شریف'' کی صحت کے لئے دعا ہی کی جا سکتی ہے!
     
    • پسند پسند x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  9. ‏جنوری 15، 2017 #29
    ابن داود

    ابن داود سینئر رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    2,595
    موصول شکریہ جات:
    2,429
    تمغے کے پوائنٹ:
    489

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    قیاس نہیں ہے میاں! بلکہ ''مسلک'' جس تعریف پر آپ نے اپنے کسی مسلک کے حامل ہونے کی نفی کی ہے اسی تعریف کے تحت ہم نے آپ کو مجہول المسلک قرار دیا ہے!
    ہم نے آپ سے دین کے متعلق نہیں پوچھا تھا، بلکہ آپ کے مسلک سے متعلق پوچھا تھا!
     
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  10. ‏جنوری 15، 2017 #30
    ابن داود

    ابن داود سینئر رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    2,595
    موصول شکریہ جات:
    2,429
    تمغے کے پوائنٹ:
    489

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    ارے میاں! بالکل سوال کے ذریعے بھی جواب دیا جا سکتا ہے! اس کا انکار نہیں!
    مگر آپ کا یہ سوال تو ایک ''تعریف'' کے لئے ہے، ایسا نہیں کہ پہلے بیان کے برخلاف اقرار پر!
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں