1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

قیامت کے دن ورات

'حدیث وعلومہ' میں موضوعات آغاز کردہ از مشعل, ‏نومبر 27، 2019۔

  1. ‏نومبر 27، 2019 #1
    مشعل

    مشعل رکن
    جگہ:
    کوئیٹہ
    شمولیت:
    ‏جنوری 07، 2017
    پیغامات:
    58
    موصول شکریہ جات:
    4
    تمغے کے پوائنٹ:
    58

    تفسیر ابن ابی حاتم میں اس آیت
    "اصحاب الجنة یومئذ خیر مستقر و احسن مقیلا "
    کے تحت ایک روایت بیان کی ہے کہ
    عن ابن مسعود قال لاینتصف النھار حتی یقیل ھولاء وھولاء ثم قرء (اصحاب الجنة یومئذ خیر مستقر و احسن مقیلا ) ثم مقیلھم لالی الجھیم ۔
    اس سے یہ سوالات ذہن میں آئے کہ
    ١_اس روایت میں نصف نہار سے کیا مراد ہے ؟
    ٢_حساب کتاب والی دن کی دورنیہ کتنا ہوگا ؟
    ٣_کیا وہاں کی دن رات اور دنیا کی دن رات میں فرق ہے ؟؟
    محان سولات کی باحوالہ جوابات کی درخوست ہے
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں