1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

لیٹ کر قرآن کی تلاوت کرنا

'قرآن وعلومہ' میں موضوعات آغاز کردہ از عمر اثری, ‏ستمبر 28، 2017۔

  1. ‏ستمبر 28، 2017 #1
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,043
    موصول شکریہ جات:
    1,039
    تمغے کے پوائنٹ:
    387

    لیٹ کر قرآن کی تلاوت کرنا


    سوال: قرآن مجید کی تلاوت لیٹ کر کرنا کیسا ہے؟

    جواب: قرآن کریم کی تلاوت لیٹ کر کرنے میں کوئی حرج نہیں ہے. کونکہ اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے:
    الَّذِينَ يَذْكُرُونَ اللَّهَ قِيَامًا وَقُعُودًا وَعَلَى جُنُوبِهِمْ
    ترجمہ: جو اللہ تعالیٰ کا ذکر کھڑے اور بیٹھے اور اپنی کروٹوں پر لیٹے ہوئے کرتے ہیں
    (سورۃ آل عمران: 191)

    مزید دوسرے مقام پر فرمایا:
    فَإِذَا قَضَيْتُمُ الصَّلَاةَ فَاذْكُرُوا اللَّهَ قِيَامًا وَقُعُودًا وَعَلَى جُنُوبِكُمْ
    ترجمہ: پھر جب تم نماز ادا کر چکو تو اٹھتے بیٹھتے اور لیٹے اللہ تعالیٰ کا ذکر کرتے رہو.
    (سورۃ النساء: 103)

    وجہ استدلال: مذکورہ بالا دونوں آیات میں اللہ کے ذکر کو اٹھتے بیٹھتے اور لیٹے کرنے کا ذکر ہے اور قرآن اللہ کے ذکر میں شامل ہے.
    مزید حدیث سے بھی اسکا ثبوت ملتا ہے. چنانچہ عائشہ رضی اللہ عنہا بیان کرتی ہیں:
    كَانَ النَّبِيُّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: يَقْرَأُ الْقُرْآنَ وَرَأْسُهُ فِي حَجْرِي وَأَنَا حَائِضٌ
    ترجمہ: نبی کریم ﷺ اس وقت بھی قرآن پڑھتے تھے جب آپ کا سر مبارک میری گود میں ہوتا اور میں حالت حیض میں ہوتی۔
    (صحیح بخاری: 7549، صحیح مسلم: 301)

    امام نووی رحمہ اللہ اس حدیث کی تشریح میں لکھتے ہیں:
    فيه جواز قراءة القرآن مضطجعا ومتكئا
    ترجمہ: اس حدیث میں قرآن کریم کو لیٹ کر اور ٹیک لگا کر پڑھنے کا جواز ہے.

    علامہ ابن باز اور شیخ صالح الفوزان کا یہی فتوی ہے.
    واللہ اعلم بالصواب.

    کتبہ: عمر اثری ابن عاشق علی اثری
     
    • علمی علمی x 3
    • مفید مفید x 2
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں