1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ماں باپ کا مقام !!!

'والدین کے حقوق' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏مئی 14، 2014۔

  1. ‏مئی 14، 2014 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    10329030_394039660734301_3567807004536741556_n.jpg
    ماں باپ کا مقام !!!
    عن أبی الدرداءقال سمعت رسول الله صلى الله عليه و سلم يقول الوالد أوسط أبواب الجنة فإن شئت فأضع ذلك الباب أو احفظه
    ﴿سنن الترمذی1900﴾

    عَنْ مُعَاوِيَةَ بْنِ جَاهِمَةَ السَّلَمِيِّ أَنَّ جَاهِمَةَ جَاءَ إِلَى النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَقَالَ يَا رَسُولَ اللَّهِ أَرَدْتُ أَنْ أَغْزُوَ وَقَدْ جِئْتُ أَسْتَشِيرُكَ فَقَالَ هَلْ لَكَ مِنْ أُمٍّ قَالَ نَعَمْ قَالَ فَالْزَمْهَا فَإِنَّ الْجَنَّةَ تَحْتَ رِجْلَيْهَا
    ﴿سنن النسائی3104﴾
     
  2. ‏جون 09، 2014 #2
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

  3. ‏جون 09، 2014 #3
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,967
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

  4. ‏جون 09، 2014 #4
    ماریہ انعام

    ماریہ انعام مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏نومبر 12، 2013
    پیغامات:
    498
    موصول شکریہ جات:
    369
    تمغے کے پوائنٹ:
    164

    وعن ابى هريرة قال قال رجل يا رسول الله من احقّ بحسن صحابتى- قال أمك قال ثم من قال أمك قال ثم من قال أمك قال ثم من قال أبوك وفى رواية أمك ثم أمك ثم أمك ثم «1» أبوك ثم أدناك وأدناك- متفق عليه

    ابو ہریرۃ سے روایت ہے کہ ایک آدمی نے آپﷺ سے پوچھا
    میرے حسنِ سلوک کا سب سے زیادہ کون حقدار ہے؟؟
    آپﷺ نے فرمایا
    تیری ماں
    اس نے سوال کیا پھر کون
    آپﷺ نے جواب دیا
    تیری ماں
    اس نےپھر یہی سوال کیا
    آپﷺ نے جواباً کہا
    تیری ماں
    چوتھی دفعہ بھی جب اس نے اسی کے متعلق استفسار کیا تو آپﷺ نے فرمایا
    تیرا باپ

    اس حدیث پر ڈاکٹر ذاکر نائیک نے کیا خوب تبصرہ کیا تھا
    اس کا مطلب یہ ہوا کہ ماں کو ملا سونے کا تمغہ۔۔۔ماں کو ملا چاندی کا تمغہ۔۔۔ماں کو ہی ملا تانبے کا تمغہ اور باپ کو ملا حوصلہ افزائی کا انعام۔۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں