1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

مجھے جمہوریت قبول نہیں

'جمہوریت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد ارسلان, ‏فروری 11، 2013۔

  1. ‏فروری 13، 2013 #11
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جہاد تلوار اٹھا کر دوسروں کا بے دریغ قتل شروع کر دینا نہیں، بلکہ جہاد فی سبیل اللہ کا مقصد اللہ کے دین کی سربلندی ہے، اور جہاد کے لیے اصول و ضوابط بیان کیے گئے ہیں۔
     
  2. ‏فروری 13، 2013 #12
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    جزاک اللہ خیرا اس بات سے متفق ہوں
    بالکل جہاد جہاد تب ہی کہلائے گا جب فی سبیل اللہ ہوگا۔ دکھاوے یا دنیاوی غرض سے کیاجانے والی قتل وغارت کو جہاد کانام دیا ہی نہیں جاسکتا۔ مزید وضاحت کردوں کہ اعلاء کلمۃ اللہ کےلیے جو بھی کوشش کی جائے وہ جہاد کے ذمرے میں آتی ہے۔ کیونکہ آپ نے خود ہی کہہ دیا کہ دین کی سربلندی مقصود ہے۔ اور جو بھی طریقہ جس سے دین کی سربلندی ہوتی ہوگی وہ جہاد کے ذمرے میں ہی آئے گی۔
    لیکن عزیز کیا دین کی سربلندی کا واحد راستہ قتال ہی ہے ؟؟
    مثال کے طور پر ؟
     
  3. ‏فروری 13، 2013 #13
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    اللہ تعالیٰ آپ کو بھی جزائے خیر عطا فرمائے آمین
    جزاک اللہ خیرا
    جہاد کے تو اور بھی بہت سارے طریقے ہیں، جیسے جہاد بالنفس، جہاد بالقلم، جہاد باللسان، جہاد فی سبیل اللہ، لیکن ان سب میں میرے خیال سے "جہاد فی سبیل اللہ" کی زیادہ اہمیت ہے۔
    آج مختلف اقوام اور تنظیمیں مختلف جگہوں پر لڑ رہی ہیں اور سبھی اپنی اپنی اس جنگ کو جہاد فی سبیل اللہ کہتے ہیں، اب یہ اللہ بہتر جانتا ہے کہ ان میں کون اللہ کے دین کی خاطر لڑ رہا ہے۔ البتہ یہ بات ضروری یاد رکھنی چاہیے کہ جو کوئی قومیت کی یا وطنیت کی جنگ لڑے، کسی علاقے پر قبضے کی خاطر جنگ لڑے یا کسی ایسے اغراض و مقاصد کی خاطر جنگ لڑے جس کا اعلائے کلمۃ اللہ کی سربلندی سے کوئی تعلق نہ ہو تو وہ جہاد فی سبیل اللہ نہیں جہاد فی سبیل الشیطان ہے۔
    اصول و ضوابط کا مطلب جہاد کرنے کا طریقہ کار۔
     
  4. ‏فروری 13، 2013 #14
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    محترم ارسلان بھائی آپ نے جب اس عنوان ’’ مجھے جمہوریت قبول نہیں ‘‘ سے تھریڈ لگا کر پیکچر شامل کی جس میں کچھ یہ باتیں شامل ہیں
    میں نے باقی باتوں پر کوئی بات نہیں کی آپ سے صرف یہ پوچھا کہ
    آپ نے اس کا سرسری جواب دیا کہ
    یہاں پر میرا آپ سے ایک سوال ہے کہ کیا ہر غیر اسلامی نظام ( جس کا اسلام میں تذکرہ نہ ہو ) باطل ومردود ہے ؟ ( یاد رہے غیر اسلامی سے میری مراد جو اسلام سے متصاد ہو۔ ٹکراتا ہو۔اسلام کے اوامر کےخلاف ہو) میری مراد ہر گز یہ نہیں کہ جو نظام صرف غیر مسلموں کی طرف سے آیا ہو یا غیر مسلموں نے ترتیب دیا ہو۔ یا مسلمانوں نے غیر مسلموں سے لیا ہو۔
    جب آپ نے جمہوریت کے بارے کہا کہ جو بھی ہے پر ہے غیر اسلامی تو اس پر میں نے سوال کیا کہ
    جس کا جواب آپ نے دیا
    اس پر میں نے کچھ باتیں لکھیں
    1۔ آپ اس آیت پر اس وقت عمل کررہے ہیں ؟
    2۔ فتنہ کو ختم کرنے کا حکم ہے۔ فتنہ وضع کرنے کانہیں
    3۔ اس آیت میں عموم ہے یعنی ہر مسلمان آدمی شامل ہے چاہے وہ جس بھی طبقہ سےتعلق رکھتا ہو
    آپ نے ان باتوں پر غور کرنے کےبجائے جو مثال بیان کی گئی تھی اس بارے کہا کہ
    اس بیان میں آپ نے تین باتیں کی جس میں تیسری بات کے بارے میں نے آپ سے پوچھا کہ جہاد کے وہ اصول وضوابط کیا ہیں ؟ کیا آپ بتا سکتے ہیں ؟ آپ نے اس کا جواب دیا کہ
    حالانکہ یہ میرے سوال کاجواب نہیں۔

    محترم بھائی بات کسی اورطرف نکل گئی اصل بات یہ ہے کہ کیا مطلق جمہوری نظام کفر ہے ؟ یا وہ نظام جس پر لیبل تو جمہوریت کا ہو لیکن وہ ذیل میں بیان جملوں کی زد میں آتاہو۔
    اصل ہماری بات یہ ہے آپ نے مطلق نظام جمہوریت کو کفر قرار دیا ہے۔ کیا میں آپ سے پوچھ سکتا ہوں کہ آپ نے کن وجوہات واسباب کی وجہ سے جمہوریت کو کفر قرار دیا ہے۔؟ ہوسکتا ہے جب آپ وجوہات واسباب بیان کردیں تو انہیں اسباب و وجوہات کی وجہ سے میں بھی اس نظام کو جس کو جمہوریت کانام دیا گیا ہے کفر کا نظام مانتا ہوں۔ اس لیے آپ مجھے وہ اسباب اور وجوہات بتائیں جس کیوجہ سے آپ اس نظام کو کفر کہتے ہیں۔ جزاک اللہ
     
  5. ‏فروری 13، 2013 #15
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    [h=1]جمہوریت دینِ ابلیس[/h]یہاں تفصیل سے جمہوری نظام کے کفر ہونے کے دلائل ذکر کر دیے گئے ہیں۔
    یہ سوال تو پھر آپ کو یہاں بھی پوچھنے چاہیے تھے۔
    کیا جمہوریت کفر ہے؟
    کیا جمہوریت شرک وکفر ہے؟
    ویسے ان دو سوالوں کے جواب میں وجوہات ذکر کر دی گئیں ہیں۔
    کیا جمہوریت کفر ہے؟
    کیا جمہوریت شرک وکفر ہے؟
     
  6. ‏فروری 13، 2013 #16
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    آپ مجھے ایک بات بتائیں اگر اسلامی نظام کے ہوتے ہوئے بھی دیگر نظام قابل قبول ہیں تو پھر اسلام کا نظام کس لیے ہے؟
     
  7. ‏فروری 13، 2013 #17
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    وطن عزیز میں حاکمیت اعلیٰ اللہ عزو جل کو سزاوار ہے اور یہ کہ اس ملک میں کوئی قانون قرآن و سنت کے خلاف نہیں بنایا جا سکتا۔
    محترم بھائی اگر کسی ملک کے قوانین میں یہ شق داخل ہو چاہے اس ملک میں رائج نظام کو جو بھی نام دیا جاتا ہو یا دیا گیا ہو کیا وہ نظام نظام کفر ہوسکتا ہے ؟
     
  8. ‏فروری 13، 2013 #18
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    کیا عملی طور پر ایسا ہے؟
     
  9. ‏فروری 14، 2013 #19
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    محترم بھائی جب میں نے کہا کہ
    آپ نے جوابی طور مجھے ایک تھریڈ کا لنک دے دیا۔
    اگر مناسب سمجھیں تو صرف اسباب اور وجوہات ایک، دو، تین کی طرح اگر یہاں پیش کردیں تو سمجھنے میں آسانی رہے گی۔ دلائل کی بات بعد میں آتی ہے۔ سوال دوبارہ دوھرا دیتا ہوں کہ
    ’’ جمہوریت کو کفر کن اسباب و وجوہات کی وجہ سے کہہ رہے ہیں ‘‘؟؟
    محترم بھائی آپ سے اس لیے پوچھ رہا ہوں کہ آپ نے قیود لگائے بغیر ہی کفر کہہ دیا ہے۔ اگر آپ ان فتاویٰ میں دیکھیں تو آپ کو سمجھ آئے گی کہ جس فتویٰ کاعنوان ہے ’’ کیا جمہوریت کفر ہے‘‘ اس فتویٰ میں مفتی صاحب نے یہ فرمایا ہوا ہے۔
    ’’ جس جمہوریت سے قرآن مجید کی کسی آیت یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی احادیث ثابتہ سے کسی حدیث کا ردّ ہو وہ جموریت کفر ہے۔‘‘
    جس جمہوریت کے الفاظ اس بات پر دال ہیں کہ جمہوریت کو مطلق طور کفر نہیں کہا جاسکتا۔ اب آپ نے کہہ دیا تو اس لیے آپ کو اسباب اور وجوہات بھی پیش کرنا ہونگی۔۔آپ کے ہی قلم سے اسباب اور وجوہات کیوں پوچھی جارہی ہیں اس کی وجہ بھی بتا چکا ہوں۔
    دوسرے تھریڈ کا لنک دیئے بغیر آپ صرف اسباب ہی نقل کردیں جن کی وجہ سے آپ جمہوریت کو کفر سمجھتے ہیں۔ جزاک اللہ
    جزاک اللہ ایسی جمہوریت جس میں یہ سبب اور وجہ پائی جاتی ہو اس کو کوئی بھی مسلمان اچھا نہیں سمجھتا۔ لیکن بات سمجھنے کی یہ ہے کہ آیا ایکٹ میں یہ دونوں شرائط (قرآن کے خلاف ، حدیث کے خلاف ) لکھی بھی گئی ہیں کہ نہیں ؟ مطلب کہ قانون میں یہ بات شامل ہے کہ اگر قرآن وحدیث کے خلاف بھی کوئی قانون ہوگا تو وہ تسلیم کیا جائے گا ؟ اگر شامل ہے تو ثبوت اور اگر نہیں شامل تو اس کی کیا وجوہات ہیں ؟
     
  10. ‏فروری 14، 2013 #20
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    مسلم میں سے اس بات کا کسی نے انکار نہیں کیا اور نہ ہی کوئی کرسکتا ہے اور نہ کوئی کہہ سکتا ہے اور نہ کسی میں جرات ہے کہ اسلامی نظام کو مسترد کردیا جائے۔اور اس کی جگہ پہ ایسا نظام لایا جائے جو کلی طور اسلام کے مخالف ہو۔

    آپ مجھے ایک سوال کا جواب دیں کہ جمہوری نظام کی تمام شقیں ہی اسلامی نظام کے خلاف ہیں ؟ اگر ہیں تو حوالہ پیش کریں اور مجھے اپنی صف میں شامل کریں لیکن اگر نہیں تو پھر میں آپ کی ہاں میں ہاں ملانے کو تیار نہیں۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں