1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

تجویز محدث فورم پر عربی کورس؟

'تجاویز، آراء اور شکایات' میں موضوعات آغاز کردہ از خضر حیات, ‏دسمبر 07، 2013۔

  1. ‏دسمبر 07، 2013 #1
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,335
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    اہلا وسہلا ۔ کرلیں شروع اس پر ایک عدد ’’ لڑی ‘‘ ۔
    لیکن اس سے پہلے آپ کو یا دیگر عربی سیکھنے کے خواہشمند حضرات کو ایک زحمت دینا ضروری ہے ۔
    فورم پر پہلے کتنی دفعہ اس طرح کے موضوعات شروع کیے گئے ہیں ۔ ؟
    اور ان کا فائدہ کیا ہوا ہے ؟
    اور پھر وہ ختم کیوں ہوگئے ہیں ؟
    ان تین سوالات کےجوابات ڈھونڈ لیں تاکہ ہماری طرف سے یہ شروع کیا ہوا سلسلہ بھی پہلے کی طرح چند دن کے مہمان کی طرح نہ ہو ۔
     
    • پسند پسند x 8
    • متفق متفق x 4
    • زبردست زبردست x 4
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  2. ‏دسمبر 07، 2013 #2
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    ماشاءاللہ
    (1) فورم پر آج تک عربی اور انگلش زبان کو سکھانے کا کوئی اہتمام نہیں کیا گیا، انتظامیہ اپنے اہم ترین امور سر انجام دینے کے باعث اس طرف توجہ کرنے سے قاصر ہے، اور دیگر اراکین خواتین و حضرات علمی و تحقیقی مزاج کم رکھتے ہیں اور زیادہ تر اُن کی ترجیحات بحث و مباحثہ اور مختلف تنظیموں کے سربراہان کو زیر بحث لانے پر مشتمل ہیں۔
    (2) کوئی بھی زبان سکھانے کا اہتمام ہی نہیں کیا گیا جس کی وضاحت پوائنٹ نمبر (1) میں بیان کر دی گئی ہے تو فائدہ و نقصان تو بعد میں زیر بحث آئیں گے۔
    (3) پہلے تو ایسا کوئی اہتمام نہیں کیا گیا، علاوہ ازیں دیگر علمی مضامین کی اکثریت کو اراکین کی بے جا تنقید اور شخصی حملوں کے باعث "مقفل" کر دیا گیا ہے۔

    ایسی صورتحال میں خضر بھائی آپ کی کیا رائے ہے؟
     
    • پسند پسند x 7
    • متفق متفق x 4
    • شکریہ شکریہ x 2
    • لسٹ
  3. ‏دسمبر 07، 2013 #3
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,335
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    رائے کے لیے آپ نے کوئی گنجائش چھوڑی ہی نہیں ۔ اب دیگر اہل علم اور ساتھیوں سے مشورہ لے لیں کہ اس سلسلہ کو کس طرح نافع اور مفید بنایا جا سکتا ہے ؟
    اور پھر اس عنوان سے ایک عدد ’’ لڑی ‘‘ شروع کرلیتےہیں ۔
    اعلان کرکے پوچھ لیں کوئی اور بھی سیکھنے والا ہے کہ نہیں ؟
    ایک دفعہ شروع کرلیا تو پھر بھاگنے کی کوئی گنجائش نہیں ہو گی ۔
     
    • پسند پسند x 5
    • شکریہ شکریہ x 2
    • متفق متفق x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  4. ‏دسمبر 07، 2013 #4
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    بھائی جان! اعلان انتظامیہ کے ذریعے ہی کروائیں تو زیادہ بہتر ہے، مجھ حقیر کی کون سنے گا؟
     
    • شکریہ شکریہ x 6
    • پسند پسند x 2
    • متفق متفق x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  5. ‏دسمبر 07، 2013 #5
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,335
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    ٹھیک ہے ۔ جن اراکین کو آپ جانتے ہیں کہ وہ اس سلسلے میں دلچسپی رکھتے ہیں ان کو ذاتی پیغامات یا کسی دوسرے ذریعے اطلاع کریں تاکہ ہم انتظامیہ کے دفتر کے سامنے نعرہ بازی کریں اور یہ کام منظور کروالیں ۔ ( ابتسامہ ) ویسے بھی آپ بھی جانتے ہیں اور مجھے بھی معلوم ہے اس طرح کے کاموں میں انتظامیہ کی اجازت کی ضرورت نہیں ہوتی بلکہ وہ تو کسی رکن کی طرف سے اس طرح کی نیکی میں سبقت لے جانے پر خوش ہوتے اور دعائیں ( تہجد میں بھی ہوسکتیں ہیں اور حرمین میں بھی ۔ مسکراہٹ ) کرتے ہیں ۔
    ایک مشورہ ہے یہ کام کیسے شروع کرنا ہے اور اس کا طریقہ کار کیا ہوگا ؟ یہ سب ہمیں خود اراکین ( انتظامیہ بھی بطور رکن ) کو طے کرلینا چاہیے ۔
    کیونکہ اگر یہ سب کچھ انتظامیہ نے طے کردیا تو پھر اپنی مرضی نہیں چلے گی ۔ عزت مآب انتظامیہ کے مشورے ماننے پڑيں گے ۔
    ویسے بھی اگر ہم نے کچھ کرکے دکھایا تو خود بخود انتظامیہ ہماری ویسے ہی مشہوری کرے گی جیسے اسکولوں والے اپنے ہونہار طالبعلموں کی اشتہاروں کے ذریعے کرتے ہیں ۔ لیکن شرط یہ ہے کہ ہم کچھ کریں تو سہی ۔۔۔ !
     
    • زبردست زبردست x 5
    • شکریہ شکریہ x 3
    • پسند پسند x 3
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  6. ‏دسمبر 08، 2013 #6
    Dua

    Dua سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 30، 2013
    پیغامات:
    2,579
    موصول شکریہ جات:
    4,379
    تمغے کے پوائنٹ:
    463

    جزاکم اللہ خیرا کثیرا۔۔۔۔۔۔عمدہ کاوش ہے۔
    مگر اس سلسلے میں میری ایک رائے ہے ۔آ پ وہ عربی سکھائیں جو آسا ن ترین ہو ،کیوں کہ عربی سے متعلق بہت سی کتابیں موجود ہیں۔جن کو عام فرد پڑھے تو اسے خاصی مشکل پیش آتی ہے۔
     
    • متفق متفق x 7
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  7. ‏دسمبر 08، 2013 #7
    شاکر

    شاکر تکنیکی ناظم رکن انتظامیہ
    جگہ:
    جدہ
    شمولیت:
    ‏جنوری 08، 2011
    پیغامات:
    6,595
    موصول شکریہ جات:
    21,360
    تمغے کے پوائنٹ:
    891

    خضر حیات بھائی،
    شاگردوں میں دوسرے نمبر پر میرا نام بھی لکھ لیجئے۔ میں اور ارسلان بھائی دونوں ہی نہیں بھاگ سکتے۔ باقی احباب بھی نام درج کروائیں تاکہ یہ کورس شروع کرنے کے لئے خضر حیات بھائی پر پریشر ڈالا جا سکے۔

    چند تجاویز:
    1۔ یہ طے کر لینا چاہئے کہ عربی سکھانا یعنی عام عربی بول چال زیادہ بہتر و فائدہ مند ہے یا قرآنی عربی سمجھنا؟ کہ جب قرآن پڑھیں تو کم سے کم مفہوم ذہن میں اترتا چلا جائے۔
    2۔ ایک مرتبہ پروگرام بن جائے تو اس کے لئے خاص زمرہ بنا کر فقط شاگردوں کو رسائی دی جا سکتی ہے۔ دیگر احباب مطالعہ کر سکیں، لیکن کوئی سوال جواب وغیرہ نہ کر سکیں۔
    3۔ اسباق کے ساتھ مشقیں وغیرہ اور ٹیسٹ جیسے کہ عام کورس میں ہوتا ہے، اس کا اہتمام۔

    اور یہ تجاویز بطور رکن پیش کر رہا ہوں۔ آپ استاد ہیں لہٰذا حکم فرمائیں انتظامیہ سے جیسا تعاون چاہئے ہو، آپ کو ملے گا ان شاء اللہ۔ تجاویز سب کی سنیں، آخر میں اپنی مرضی سے جو فیصلہ لینا چاہیں لیجئے اور فائنل ہو جانے پر بس ہمیں بتا دیں۔
    اللہ تعالیٰ آپ کو اس کا دنیا و آخرت میں بہترین بدلہ عطا فرمائیں ۔ آمین یا رب العالمین۔
     
    • زبردست زبردست x 6
    • پسند پسند x 4
    • شکریہ شکریہ x 2
    • متفق متفق x 2
    • لسٹ
  8. ‏دسمبر 08، 2013 #8
    شاہد نذیر

    شاہد نذیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 17، 2011
    پیغامات:
    1,940
    موصول شکریہ جات:
    6,202
    تمغے کے پوائنٹ:
    412

    السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ!
    کیا نام درج کروانا ضروری ہے؟ کیا خاموشی کے ساتھ آپ کی شاگردی اختیار نہیں کی جاسکتی؟ استاد کے نامعلوم شاگردوں کو کچھ وہ فوائد حاصل ہوتے ہیں جو باقاعدہ شاگردوں کو نہیں ہوتے۔
     
    • پسند پسند x 5
    • متفق متفق x 4
    • شکریہ شکریہ x 3
    • لسٹ
  9. ‏دسمبر 08، 2013 #9
    Dua

    Dua سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 30، 2013
    پیغامات:
    2,579
    موصول شکریہ جات:
    4,379
    تمغے کے پوائنٹ:
    463

    ایک تجویز اور گزارش ہے کہ اس کورس میں عربی میں دعاؤں کا بھی اہتمام کیا جائے۔
    عرب میں ملاقا ت کے دوران ،اور گفتگو میں ڈھیروں دعائیں دی جاتی ہے۔جبکہ پاکستان میں اس پر اتنی توجہ بھی نہیں اور فہم بھی نہیں۔
    اس لیے ملاقات یا گفتگو میں کہے جانے والے دعائیہ کلمات بھی سکھائیں جائیں۔

    عربی سیکھنے کے خواہشمند افراد بہت ہیں۔۔۔جن میں ایسےلوگ بھی ہیں ،جو اب ٹیسٹ ،مشق کی عمر سے آگے نکل چکے ہیں۔۔ابتسامہ۔۔اور ایسے بھی ہیں جو ایک محدود وقت میں فورم پر آتے ہیں۔
    وہ صرف سیکھنا چاہتے ہیں۔جبکہ کورس کے لیے رولز بنا دینے پر عام رکن کے لیے آسانی نہیں رہے گی۔
    جیسا کہ شاہد بھائی نے سوال کیا ہے۔اس لیے اس پر حتی الامکان آسانی کو مد نظر رکھیں۔
    جب شروعات ہو جائے اور اراکین کی دلچسپی میں اضافہ بھی ہوتا رہے،تب آپ اسے ایک سسٹم کے اکورڈنگ (مطابق )کر سکتے ہیں۔
     
    • متفق متفق x 7
    • پسند پسند x 5
    • شکریہ شکریہ x 3
    • لسٹ
  10. ‏دسمبر 08، 2013 #10
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,335
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    یہ طے کرنا پہلے ضروری ہے ۔ کہ ہم عام بول چال والی عربی سیکھنا چاہتے ہیں یا کتابی عربی ؟
    میرے خیال سے اس سلسلے میں استاد محترم انس نضر صاحب بہتر رائے دے سکتے ہیں ۔
    متفق ۔ پڑھنے کے لیے جو مرضی آئے( لہذا وہ اراکین جو باقاعدہ شرکت نہیں کرنا چاہتے انہیں پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ) لیکن سوال وجواب کی سہولت صرف اور صرف مشارکین کے لیے ہونی چاہیے ۔
    میرے خیال سے یہ زیادہ فائدہ مند رہے گا ۔ ساتھ ساتھ پتہ بھی چلتا رہے گا کہ کون واقعتا لگن سے عربی سیکھنا چاہتا ہے ۔

    چونکہ یہ سارا تکنیکی قسم کا معاملہ ہے اس لیے شاکر بھائی اور کلیم حیدر بھائی کی بہت ضرورت رہے گی ۔ ویسے عام کلاس ہو تو پڑھنےپڑھانے میں کوئی مسئلہ نہیں ہوتا البتہ اس طرح آن لائن کلاس کس طرح لگائیں گے اس کے لیے معلمین و متعلمین سب شاکر بھائی اور کلیم بھائی کے پابند رہیں گے ۔
    اور نصاب متعین کرنے میں محترم انس نضر صاحب ابوالحسن علوی صاحب کفایت اللہ صاحب کی آراء کے منتظر رہیں گے ۔
    اس کے علاوہ دیگر اراکین فورم میں سے کوئی بھی قابل قدر رکن رہنمائی کرنا چاہیں تو دیدہ و دل فرش راہ ہیں ۔
     
    • پسند پسند x 15
    • شکریہ شکریہ x 5
    • متفق متفق x 5
    • زبردست زبردست x 3
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں