1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

محمد بن عبد الله الشافعي

'ثقہ رواۃ' میں موضوعات آغاز کردہ از کفایت اللہ, ‏نومبر 23، 2012۔

  1. ‏نومبر 23، 2012 #1
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,760
    موصول شکریہ جات:
    9,764
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    محمد بن عبد الله بن إبراهيم بن عبدويه بن موسى بن بيان (المتوفى: ٣٥٤ )۔



    امام دارقطني رحمه الله (المتوفى385)نے کہا:
    ثقة مأمون ما كان في ذلك الزمان أوثق منه[سؤالات حمزة للدارقطني: ص: 276]۔

    خطيب بغدادي رحمه الله (المتوفى463)نے کہا:
    كان ثقة ثبتا كثير الحديث حسن التصنيف[تاريخ بغداد للخطيب البغدادي: 5/ 456]۔

    امام سمعاني رحمه الله (المتوفى 562)نے کہا:
    ثقة صدوق ثبت كثير الحديث [الانساب للسمعاني: 7/ 216]۔

    امام ابن الجوزي رحمه الله (المتوفى597)نے کہا:
    وكان ثقة ثبتًا، كثير الحديث حسن التصنيف[المنتظم لابن الجوزي: 14/ 172]۔

    امام ذهبي رحمه الله (المتوفى748)نے کہا:
    الإِمَامُ، المُحَدِّثُ المُتْقِنُ الحُجَّةُ، الفَقِيْهُ، مُسْنِدُ العِرَاقِ[سير أعلام النبلاء للذهبي: 16/ 40]۔

    اور تذکرۃ الحفاظ میں ان کا ذکرکرتے ہوئے لکھتے ہیں:
    الامام الحجة المفيد محدث العراق[تذكرة الحفاظ للذهبي: 3/ 880]۔

    امام سيوطي رحمه الله (المتوفى911)نے کہا:
    الإِمَام الْحجَّة الْمُفِيد مُحدث الْعرَاق[طبقات الحفاظ للسيوطي: ص: 361]۔


    فائدہ : کسی بھی ناقد نے ان پرکوئی جرح نہیں کی ہے۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں