1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

مسجد میں سوال کرنا

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از عدیل سلفی, ‏فروری 22، 2017۔

  1. ‏فروری 22، 2017 #1
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,526
    موصول شکریہ جات:
    408
    تمغے کے پوائنٹ:
    197

    السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

    محترم شیخ اس کا جواب درکار ہے


    بہت سے لوگوں کو مانگتے ہوئے سوال کرتے ہوئے دیکھا ہے خاص طور سے مساجد میں نماز کے سلام پھیرنے کے بعد امام نمازیوں کی طرف رخ کرنے والا ہی ہوتا ہے کہ مانگنے والا ایک شخص اپنی حالت کو پیش کرتا ہے اور اکثر لوگ جھڑک دیتے ہیں اور اس شخص کو مسجد سے باہر نکال دیتے ہیں


    مسجد میں سوال کرنا کیا صحیح ہے؟

    جہاں تک جھڑکنے کا سوال ہے اللہ سبحان و تعالی کا فرمان ہے

    سورة الضحى

    وَأَمَّا السَّائِلَ فَلَا تَنْهَرْ﴿10﴾

    اور نہ سوال کرنے والے کو ڈانٹ ڈپٹ۔ (10)


     
  2. ‏فروری 22، 2017 #2
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,526
    موصول شکریہ جات:
    408
    تمغے کے پوائنٹ:
    197

  3. ‏مئی 29، 2019 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,233
    موصول شکریہ جات:
    2,369
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    اس سوال کا جواب درج ذیل تھریڈ میں دیکھئے :
    ضرورت مندوں کو لوگوں سے مانگنے کیلئے علماء کرام کا تزکیہ دینا
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں