1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

مسجد کے وضوء خانہ اور بیت الخلاء کس سے صفائی کرائیں ؟

'فقہی سوالات وجوابات' میں موضوعات آغاز کردہ از ابونعیم, ‏مارچ 24، 2012۔

  1. ‏مارچ 24، 2012 #1
    ابونعیم

    ابونعیم رکن
    شمولیت:
    ‏دسمبر 27، 2011
    پیغامات:
    12
    موصول شکریہ جات:
    44
    تمغے کے پوائنٹ:
    32

    السلام علیکم ورحمۃاللہ وبرکاتہ​
    ۔
    ایک مسجد ہے اسکے برابر میں وضوخانہ ہے وضوخانہ سے ہوتے ہوئے بیت الخلاء ہے جوکہ صرف اورصرف نمازیوں کےاستعمال کیلئے مختص ہے۔
    اس وضوء خانہ اور بیت الخلاء کی صفائی کیلئے کیسی غیرمسلم "بھنگی " کو مقرر کرسکتا ہے ؟
     
  2. ‏اپریل 02، 2012 #2
    ابوالحسن علوی

    ابوالحسن علوی علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 08، 2011
    پیغامات:
    2,524
    موصول شکریہ جات:
    11,486
    تمغے کے پوائنٹ:
    641

    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    اگر تو وضو خانہ وغیرہ مسجد میں شامل ہے یعنی مسجد کے لیے وقف شدہ زمین میں وضو خانہ وغیرہ تعمیر ہوا ہے اور وہ مسجد کے معروف احاطہ میں شامل ہے تو اس کی صفائی کسی غیر مسلم سے کروانا مناسب امر نہیں ہے۔ اور اگر وہ مسجد میں شامل نہیں ہے تو صفائی کروائی جا سکتی ہے۔ واللہ اعلم بالصواب
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں