1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

مسلمان کی عزت و احترام

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از حافظ محمد یونس اثری, ‏اگست 11، 2016۔

  1. ‏اگست 11، 2016 #1
    حافظ محمد یونس اثری

    حافظ محمد یونس اثری رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جولائی 07، 2014
    پیغامات:
    155
    موصول شکریہ جات:
    48
    تمغے کے پوائنٹ:
    77

    ذیل میں ہم مختلف نکات کے تحت وقتا فوقتا احادیث پیش کریں گے جس سے مسلمان کی عزت اور اس کی حیثیت کو مختلف طرق سے جانا جاسکتا ہے۔
    (1) مسلمان کی عزت و حرمت کعبہ کی حرمت سے بڑھ کر

    نبی ﷺ کعبہ کا طواف کررہے تھے ، اس دوران آپ نے کعبہ کو مخاطب کرکے فرمایا: ’’ ما أطيبك وأطيب ريحك . ما أعظمك وأعظم حرمتك . والذي نفس محمد بيده لحرمة المؤمن أعظم عند الله حرمة منك . ماله ودمه وأن نظن به إلاخيرا‘‘
    یعنی: تو کیا عمدہ ہے اور تیری خوشبو کس قدر عمدہ ہے تو کتنا عظیم ہے اور تیری حرمت کتنی عظیم ہے قسم ہے اس ذات کی جس کے قبضے میں محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی جان ہے مومن کی حرمت اس کے مال و جان کی حرمت اللہ کے نزدیک تیری حرمت سے عظیم تر ہے اور مومن کے ساتھ بدگمانی بھی اسی طرح حرام ہے ہمیں حکم ہے کہ مومن کے ساتھ اچھا گمان کریں ۔(سنن ابن ماجہ : 3933 )
    تنبیہ: علامہ البانی رحمہ اللہ نے اسے ضعیف الجامع اور سنن ابن ماجہ میں ضعیف قرار دیا تھا، لیکن السلسلة الصحيحة سے اسی مفہوم کی روایت ابن عباس سے مروی نقل کی (دیکھئے : 3420) اور اسی روایت کے تحت انہوں نے سنن ابن ماجہ والے حکم سے صریح طور پر رجوع فرماتے ہوئے کہا کہ یہ روایت قوی ہوجاتی ہے۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں