1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

منکر ِحدیث سے مکالمہ

'انکار حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از عبدہ, ‏جون 01، 2015۔

  1. ‏ستمبر 17، 2015 #51
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    باسمِ ربی۔ محترم ابن قدمہ صاحب آپ کے عالم صاحب کو فضول کامنٹس کرنے کا بڑا شوق ھے۔ اختلاف کا مطلب اختلاف ھے خواہ وہ لفظی ھو یا حقیقی اور قرآن کریم کا یہ چیلنج لفظی یا حقیقی کی تخصِص کیساتھ نہیں دیا گیا۔ بلکہ ہر قسم کے اختلاف سے متعلق ھے۔ جب آپ کے عالم صاحب کی ایمان کی حالت یہ ھو گی تو پھر وہ گفتگو کس معیار کی کر پائیں گے اُس کا بخوبی انداز ھو رہا ھے۔ مجھے نہین لگتا کہ وہ کبھی روایات پر نظر حق ڈال پائیں گے۔ کیونکہ حق گو حق نظر حق فکر ہر کسی کے بس کا روگ نہین ھے۔ چلئیے اُن سے کہئیے کہ وہ مجھے قرآن کریم میں کوئی ایک اختلاف ثابت کر دیں؟ پہلے ہم اُن کا ایمان قرآن کریم پر تو مکمل کر لین۔ پھر روایات کو اُس معیار پر پورا کر دیں۔ شاید یہ عمل اُن کے لئے آسان ھو جائے۔ ثم تتفکرو۔
     
  2. ‏ستمبر 20، 2015 #52
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,161
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    جی سوال چنا ہو تو جواب چنا ہی ہو گا باجرہ تو نہیں دیا جا سکتا

    جی اگر آپ کا یہ دعوی ہے کہ قرآن میں لفظی اختلاف بھی نہیں تو یہ درست نہیں اسکی مثال نیچے لکھتا ہوں
    قُل لاَّ أَجِدُ فِي مَا أُوْحِيَ إِلَيَّ مُحَرَّماً عَلَى طَاعِمٍ يَطْعَمُهُ إِلاَّ أَن يَكُونَ مَيْتَةً أَوْ دَماً مَّسْفُوحاً أَوْ لَحْمَ خِنزِيرٍ فَإِنَّهُ رِجْسٌ أَوْ فِسْقاً أُهِلَّ لِغَيْرِ اللّهِ بِهِ
    یہاں کہا گیا ہے کہ اے محمد صلی اللہ علیہ وسلم انکو کہ دو کہ میری طرف جو کچھ بھی وہی کیا گیا ہے (یعنی تمام وحی) اس میں ان چار چیزوں کے علاوہ کوئی چیز کھانے والے کے لئے حرام نہیں رکھی گئی
    یعنی اس آیت میں لفظی اور ظاہری طور پر یہ حصر سے بات کی گئی ہے کہ مجھے جو کچھ بھی وحی کیا گیا ان میں ان چار چیزوں کے علاوہ کوئی اور چیز حرام نہیں کی گئی ہے
    یہاں یہ بات تھوڑی سمجھ بوجھ رکھنے والا بھی جانتا ہے کہ جب الا نفی کے سیاق میں آئے تو اس سے حصر پیدا ہوتا ہے جیسے لا الہ الا اللہ یعنی کوئی بھی اور الہ نہیں مگر اللہ
    اسی طرح کہ کوئی بھی اور وحی نہیں کی گئی حرام ہونے کے سلسلے میں مگر ان چار چیزوں کے حرام ہونے کے سلسلے میں
    اب اس آیت کے لفظی معنی کے برعکس دوسری جگہ اور بھی چیزیں خود قرآن میں حرام کی گئی ہیں
    یہ پہلا لفظی اختلاف ہے باقی بعد میں
     
    • پسند پسند x 2
    • مفید مفید x 1
    • لسٹ
  3. ‏ستمبر 20، 2015 #53
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,364
    موصول شکریہ جات:
    2,655
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    اس کا حوالہ یعنی آیات بھی نقل کر دیں تاکہ قارئین کے سامنے بھی پکی ٹھکی دلیل آجائے!
     
  4. ‏ستمبر 23، 2015 #54
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    باسمِ ربی۔ محترم ابن قدمہ صاحب آپ اپنے عالم صاحب کو کہیں کہ وہ کسی ملاں سے نہیں بلکہ اللہ تعالٰی کے نوکر سے بات کر رھے ہیں۔ جن کو دماغ کو حاضر رکھ کر بات کرنے کا حکم دیا گیا ھے۔ اور صاف اور واضح بات کی تلقین کی گئی ھے۔ اُنہوں نے ایک آیت کا حوالہ دیا اور باقی بخاری اینڈ کمپنی کا مصالحہ ذہن میں ہی رکھ لیا اور اُن کا مفروضہ بنا کر سمجھ رھے ہین کہ اُنہوں نے بہترین جواب دیدیا۔ محترم اُن سے پوچھیں کہ قرآنِ کریم میں اور کیا کیا حرام قرار دیا گیا ھے۔ کم از کم اپنا موقف تو مکمل طور پر پیش کریں۔ ادھوری بات احسن نہیں ھوتی۔ اُنہوں نے اور چیزیں کیوں نہیں لکھیں تاکہ ہم غور کر پاتے۔ اُن کے کہنے سے ہم اُن کی بات کو تسلیم نہیں کر سکتے کہ قرآن کریم میں اختلاف ھے۔ اُن سے کہئیے کہ اگر آپ کو گفتگو کرنی نہیں آتی تو کیوں دوسروں کا وقت برباد کر رھے ہیں۔ ادھوری بات دوبارہ نہیں آنی چاھئیے۔ ورنہ اُن کے کامنٹس کو نظر انداز کرنا شروع کر دونگا۔ ثم تتفکرو۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • ناپسند ناپسند x 1
    • لسٹ
  5. ‏ستمبر 23، 2015 #55
    abusadbaig

    abusadbaig مبتدی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 03، 2015
    پیغامات:
    20
    موصول شکریہ جات:
    2
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    السّلام عليكم رحمةالّٰله
    ميرے بھائیوں میں کوئی عالم نہیں بس پڑھ لکھ لیتا ہوں اس علمی بحث پر تھوڑی سی نظر رکھے ہوئے تھا تاکہ میں بھی کچھ مستفید ہو سکوں مگر اب سمجھنے سے قاصر ہوں کیونکہ ابن قدامہ بھائ 'عبد بھائ آپس میں الجھے ہوئے ہیں اور عمران صاحب جن سے بحث ہونی تھی ان صاحب کا کوئ کمنٹ comment نھیں
     
  6. ‏اکتوبر 01، 2015 #56
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,364
    موصول شکریہ جات:
    2,655
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    ابن قدامہ بھائی ایک نامہ بر ہیں، یعنی پوسٹ مین، وہ تحریر اس فورم اور سے فیس غالباً فیس بک اور دوسرے صاحب کی تحریر فیس بک سے یہاں پوسٹ کر رہے ہیں!
     
  7. ‏اکتوبر 01، 2015 #57
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,161
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    جو لوگ سمجھنا چاہ رہے ہوتے ہیں انکے لئے تو مسئلہ نہیں ہوتا مگر جو جواب سے جان چھڑانا چاہ رہے ہوتے ہیں وہ اسی طرح کی باتیں ڈھونڈتے ہیں
    مثلا اگر میں باتیں ڈھونڈنے پہ آوں اور جواب نہ دینا چاہتا ہوں تو کہنا شروع کر دوں کہ اوپر بخآری اینڈ کمپنی لکھا ہوا ہے یہ کون سی کمپنہ ہے پہلے اسکی تفصیل بتائیں حالانکہ میں اچھی طرح جانتا ہوں کہ اس سے انکی مراد کیا ہے
    پس ذرا ان سے پوچھیں کہ کیا انکے ہاں وہی چار چیزیں حرام ہیں جو اوپر آیت میں لکھی گئی ہیں جہاں اللہ نے حصر لگا کر کہا کہ جو کچھ بھی وحی کی گئی اس میں صرف وہی چار چیزیں کھانے والی حرام ہیں ان چار چیزوں کے علاوہ اور چیزیں قرآن میں ہی حرام کی گئی ہیں اور انکو یہ جانتے بھی ہیں پھر بھی جان کر پوچھ رہے ہیں اگر نہیں جانتے تو ذرا یہ بتائیں کہ کیا آج تک انکے علاوہ یہ ہر چیز حلال سمجھ کر کھاتے رہے ہیں یعنی گدھے کتے وغیرہ
    خیر میں وہ آیت بھی لکھ دیتا ہوں
    حُرِّمَتْ عَلَيْكُمُ الْمَيْتَةُ وَالْدَّمُ وَلَحْمُ الْخِنْزِيرِ وَمَا أُهِلَّ لِغَيْرِ اللّهِ بِهِ وَالْمُنْخَنِقَةُ وَالْمَوْقُوذَةُ وَالْمُتَرَدِّيَةُ وَالنَّطِيحَةُ وَمَا أَكَلَ السَّبُعُ إِلاَّ مَا ذَكَّيْتُمْ وَمَا ذُبِحَ عَلَى النُّصُبِ وَأَن تَسْتَقْسِمُواْ بِالأَزْلاَمِ
    سورہ مائدہ آیت ۳
    ویسے ان سے یہ بھی پوچھ کر بتائیں کہ انکے ہاں کتے گدھے کا کیا حکم ہے
     
  8. ‏اکتوبر 02، 2015 #58
    mohammad yusuf

    mohammad yusuf رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 03، 2012
    پیغامات:
    97
    موصول شکریہ جات:
    94
    تمغے کے پوائنٹ:
    47

    اپنے سچ کہا ۔ جزاک اللہ خیر
     
  9. ‏اکتوبر 05، 2015 #59
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    باسمِ ربی۔ محترم ابن قدمہ صاحب میں کوئی کامنٹس نہیں کر سکتا۔ اس لئے معذرت خواہ ھوں۔ آپ ہیجڑے عالم صاحب سے کہہ دیں کہ میں حجاب میں بیٹھے رہنے والوں سے گفتگو کرنا پسند نہیں کرتا۔ اگر اُن کو گفتگو کرنی ھے تو سامنے آئیں اور شرائط طے کر کے بات کریں۔ اور اگر آپ کو بات کرنی ھو تو اپنے بل بوتے پر بات کریں۔ اور فیصلہ قرآن کریم کے مطاابق خود ہی اخذ کریں۔ مین مزید آپ کے عالم صاحب کی جہالت کا ساتھ نہیں دے سکتا۔ ثم تتفکرو ۔
    باسمِ ربی۔ جس شخص کو واضح آیت سے بات سمجھ نہ آ رہی ھو۔ اُس کو کیسے جواب دیا جا سکتا ھے۔ آپ خود دیکھئیے کہ اللہ تعالٰی نے چار چیزیں حرام قرار دیں ہیں تو صرف چار ہی ہیں۔ باقی اُن کی جہالت ھے جو میں جاننا چاہتا تھا۔ مگر اُنہوں نے جواب سے تہی نظر کیا۔ کتا، اور بلا اور ایسے تمام جاندار جن کا ایک معدہ ھوتا ھے وہ قرآنِ کریم کی ان چار چیزوں میں شمار ہیں۔ پلیز اُن کے مزید کامنٹس مت لائیے ۔ میرے پاس وقت نہیں ھوتا کہ بہت ساری جگہوں پر سوالات کو دیکھ سکوں۔ ثم تتفکرو۔ بلا
     
  10. ‏اکتوبر 05، 2015 #60
    mohammad yusuf

    mohammad yusuf رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 03، 2012
    پیغامات:
    97
    موصول شکریہ جات:
    94
    تمغے کے پوائنٹ:
    47

    انسے کہو کی یہی آ جاے ،، اور ابھی توشرائط طےہو رہے ہے۔۔۔خیر کبھی میں بھی ایسا تھا اللہ نے ہدایت دی،،
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں