1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

موت سے پہلے سیدنا عمرو بن عاص رضی الله عنہ کی وصیت پر اہل ایمان موقف

'تحقیق حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از lovelyalltime, ‏اکتوبر 30، 2014۔

  1. ‏اکتوبر 30، 2014 #1
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    خلیل الرحمن جاوید صاحب لکھتے ہیں کہ:​

    حضرت عمرو بن عاص رضی الله عنہ کی وصیت فرمانِ نبوی صلی الله علیہ وسلم کے عین مطابق تھی کیونکہ رسول الله صلی الله علیہ وسلم کا بھی یہی حکم ہے قبر کے پاس اتنی دیر تک کھڑے ہو کر میت کی ثابت قدمی کی دعا کرتے رہو جتنی دیر میں اونٹ ذبح کر کے اس کا گوشت کاٹا جاتا ہے -


    (پہلازینہ: صفحہ ١٩٠، ١٩١)

    pehla- zeena -1.jpg


    پہلا زینہ کتاب یہاں سے ڈونلوڈ کر لیں -

    http://forum.mohaddis.com/threads/پہلا-زینہ.19088/


    یہ بات کس صحیح حدیث میں نبی صلی الله علیہ وسلم سے روایت کی گئی ہے - یہ @اسحاق سلفی بھائی بتایں گے -

    عصرِ حاضر کے ایک مشہور و معروف عالم
    محمد بن صالح بن محمد العثيمين
    اپنے فتوی میں کہتے ہیں کہ:



    هذا أوصى به عمرو بن العاص رضي الله عنه فقال: "أقيموا حول قبري قدر ما تنحر جزور ويقسم لحمها"، لكن النبي صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لم يرشد إليه الأمة، ولم يفعله الصحابة رضي الله عنهم فيما نعلم


    ترجمہ: یہ عمرو بن العاص رضی الله عنہ نے وصیت کی پس کہا میری قبر کے اطراف اتنی دیر کھڑے رہنا جتنی دیر میں اونٹ ذبح کیا جائے اور اس کا گوشت تقسیم کیا جائے - لیکن نبی صلی الله علیہ وسلم نے نہ ہی اسکی نصیحت امت کو کی ، نہ صحابہ رضی الله عنہم نے ایسا کیا جیسا ہمیں پتا ہے -

    (مجموع فتاوى ورسائل العثيمين: کتاب الجنائز: باب: بعد دفن الميت هناك حديث ، جلد ١٧ ، صفحہ ٢١٨ ، دار الوطن - دار الثریا)
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
    Last edited by a moderator: ‏ستمبر 22، 2019
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  2. ‏اکتوبر 30، 2014 #2
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    Last edited by a moderator: ‏ستمبر 22، 2019
    • شکریہ شکریہ x 2
    • ناپسند ناپسند x 1
    • لسٹ
  3. ‏اکتوبر 30، 2014 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    ـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــ
    عزیز من :
    اس پر ہم نے نہیں ۔۔۔بلکہ آپ نے کمینٹس دینے ہیں ،ہم منتظر ہیں ؛
    بلا جھجک اس پر اپنی مدلل رائے سے نوازیں ،
     
    • متفق متفق x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏اکتوبر 30، 2014 #4
    شاہد نذیر

    شاہد نذیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 17، 2011
    پیغامات:
    1,940
    موصول شکریہ جات:
    6,202
    تمغے کے پوائنٹ:
    412

    عین ممکن ہے کہ خلیل الرحمن جاوید حفظہ اللہ کو اس حدیث کے ضعف کا علم ہی نہ ہو۔ اس لئے پہلے آپ ثابت کریں کہ وہ اس حدیث کا ضعف جانتے تھے لیکن اسکے باوجود بھی اس حدیث سے استدلال کیا پھر آپ نے جو اس دھاگے کا عنوان قائم کیا ہے درست ہوسکتا ہے ورنہ نہیں۔
     
    • متفق متفق x 3
    • شکریہ شکریہ x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  5. ‏اکتوبر 31، 2014 #5
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    @اسحاق سلفی بھائی کا فتویٰ کہاں گیا - فتویٰ صرف ہمارے لئے تھا - کوئی بات نہیں بھائی یہاں آپ کی زبان بند ہے - - ابتیسامہ
     
  6. ‏اکتوبر 31، 2014 #6
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    ---------------------------


    ایک ایسا بندہ جس کو حدیث کے ضعف کا علم ہی نہ ہو- اور بندہ ایک پوری کتاب لکھ کر ایک عقیدے کا دفاع کر رہا ہے - کیا یہ خلا تضاد نہیں - موصوف خود لکھ رہے ہیں - اور حدیث کا ضعف ان کو پتا ہے نہیں -واہ جی واہ - کیا بات ہے جناب -



    ۔
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
  7. ‏اکتوبر 31، 2014 #7
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    موصوف لکھتے ہیں کہ:

    حضرت عمرو بن عاص رضی الله عنہ کی وصیت فرمانِ نبوی صلی الله علیہ وسلم کے عین مطابق تھی کیونکہ رسول الله صلی الله علیہ وسلم کا بھی یہی حکم ہے قبر کے پاس اتنی دیر تک کھڑے ہو کر میت کی ثابت قدمی کی دعا کرتے رہو جتنی دیر میں اونٹ ذبح کر کے اس کا گوشت کاٹا جاتا ہے -


    (پہلازینہ: صفحہ ١٩٠، ١٩١)


    اور اس سے بھی حیرت کی بات یہ ہے کہ یہاں پی ڈی ایف سیکشن میں پوری کتاب سکین کر کے لگا دی گئی - اور ساتھ کیا تبصرہ لکھا گیا -



     
  8. ‏اکتوبر 31، 2014 #8
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    ایک مثال اور آپ کو دیتا ہوں - ایک اور کتاب سے وہ کتاب بھی محدث لائبریری میں موجود ہے-
    اور وہاں حضرت عمرو بن عاص رضی الله عنہ کے بارے میں کیا کہا گیا -

    قاری خلیل الرحمن جاوید صاحب لکھتے ہیں کہ:

    حضرت عمرو بن عاص رضی الله عنہ کی وصیت فرمانِ نبوی صلی الله علیہ وسلم کے عین مطابق تھی کیونکہ رسول الله صلی الله علیہ وسلم کا بھی یہی حکم ہے قبر کے پاس اتنی دیر تک کھڑے ہو کر میت کی ثابت قدمی کی دعا کرتے رہو جتنی دیر میں اونٹ ذبح کر کے اس کا گوشت کاٹا جاتا ہے -


    (پہلازینہ: صفحہ ١٩٠، ١٩١)

    ایسی کوئی صحیح حدیث نہیں جس میں الله کے نبی صلی الله علیہ وسلم نے امت کو یہ تلقین کی ہو جو قاری صاحب نے بیان کی -

    اس کے برعکس ایک دوسرے عالم خواجہ محمد قاسم صاحب لکھتے ہیں کہ:

    بلکہ انہی سے مروی ہے کہ ان کے والد محترم حضرت عمرو بن عاص رضی الله عنہ کا یہ خیال تھا کہ دفن ہونے کے بعد میت باہر کھڑے لوگوں کو محسوس کرتی ہے -


    (مسلم ج ١ ص ٧٦)

    حالانکہ یہ اہلحدیث کا مسلک نہیں ہے -


    (تعویذ اور دم: صفحہ ١٠)

    ایک کیا فتویٰ دیتا ہے تو دوسرا کیا! -


    hazrat umro 2.jpg hazrat umro-1.jpg
     
  9. ‏اکتوبر 31، 2014 #9
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    taqleed.jpg
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  10. ‏اکتوبر 31، 2014 #10
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,968
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    بے شک ھم اہل حدیث ہے اور ھم کسی کی اندھی تقلید نہیں کرتے بلکہ کسی کی بات بھی قرآن اور صحیح حدیث سے ٹکرا جائے اس کو چھوڑ دیتے ہے نا کہ عالم کو بلکہ اس کی بات کو


    اہل حدیث کا منہج اورعقیدہ - سابقہ دیوبندی شیخ ابو زید ضمیر حفظہ اللہ :

     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • زبردست زبردست x 2
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں