1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

موت سے پہلے سیدنا عمرو بن عاص رضی الله عنہ کی وصیت پر اہل ایمان موقف

'تحقیق حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از lovelyalltime, ‏اکتوبر 30، 2014۔

  1. ‏نومبر 10، 2014 #91
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    منہال بن عمرو ؒ
    صحیح بخاری اور دیگر کئی بنیادی کتب حدیث کا ثقہ راوی ہے ۔
    کئی جلیل القدر متقدمین محدثین نے اس کے ثقہ ہونے کی شہادت دی ہے ۔۔
    المنهال بن عمرو2.jpg
     
  2. ‏نومبر 12، 2014 #92
    ابوالحسن علوی

    ابوالحسن علوی علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 08، 2011
    پیغامات:
    2,524
    موصول شکریہ جات:
    11,484
    تمغے کے پوائنٹ:
    641

    ابن حزم تو عقیدے میں جہمی ہیں، انہیں اہل حدیث شمار کرنا پرلے درجے کی حماقت اور بے وقوفی ہے۔ جہمیہ اور سلفیہ میں کیا کوئی فرق نہیں ہے؟ شیخ بن باز علیہ الرحمۃ تو ابن حزم کے نام کے ساتھ رحمہ اللہ نہیں کہتے تو آپ انہیں اہل حدیث شمار کر رہے ہیں۔ ابن حزم ایک جید عالم دین تھے اور ہمارے ہاں کچھ لوگوں کا ان سے متاثر ہونا صرف اسی وجہ سے ہے کہ انہوں نے اماموں کا خوب رد کیا ہے تو جن لوگوں کی زندگی کا مقصد رد تقلید ہے تو ان کے واقعتا امام، ابن حزم ہی ہیں۔ کوئی جہمیہ پر اچھا سا مقالہ عربی میں پڑھ لیں تا کہ معلومات میں اضافہ ہو جائے کہ سلفیہ اور جہمیہ کا عقیدے میں فرق کیا ہے۔

    باقی رہے ابن الجوزی علیہ الرحمۃ تو وہ بھی عقیدے میں اشعری ہیں نہ کہ سلفی۔ اور اشعریہ اور سلفیہ کا فرق جاننے کے لیے اشعریہ پر کوئی اچھا سا مقالہ عربی میں پڑھ لیں۔

    قال شيخ الإسلام في "الأصفهانية" (ص109) فقال: «إن كثيراً من الناس ينتَسِبُ إلى السنة أو الحديث أو إتباع مذهب السلف أو الأئمة أو مذهب الإمام أحمد أو غيره من الأئمة أو قول الأشعري أو غيره، ويكون في أقواله ما ليس بموافقٍ لقولِ من انتسب إليهم. فمعرفة ذلك نافعةٌ جداً. كما تقدم في الظاهرية الذين ينتسبون إلى الحديث والسنة، حتى أنكروا القياس الشرعي المأثور عن السلف والأئمة، ودخلوا في الكلام الذي ذمه السلف والأئمة، حتى نفوا حقيقة أسماء الله وصفاته، وصاروا مشابهين للقرامطة الباطنية. بحيث تكون مقالة المعتزلة في أسماء الله، أحسن من مقالتهم! فهم مع دعوى الظاهر، يقرمطون في توحيد الله وأسمائه. وأما السفسطة في العقليات فظاهرة».
     
    Last edited: ‏نومبر 12، 2014
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  3. ‏نومبر 12، 2014 #93
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,987
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    السلام و علیکم -

    اس بارے میں آپ کیا کہیں گے ؟؟؟ کیا یہ صحابہ کرام رضوان اجمعین و سلف و صالحین کا بھی یہی عقیدہ تھا ؟؟؟

    ابن قیّم کتاب الروح میں لکھتے ہیں

    وَالسَّلَف مجمعون على هَذَا وَقد تَوَاتَرَتْ الْآثَار عَنْهُم بِأَن الْمَيِّت يعرف زِيَارَة الْحَيّ لَهُ ويستبشر بِهِ

    اور سلف کا اس پر اجماع ہے اور متواتر آثار سے پتا چلتا ہے کہ میّت قبر پر زیارت کے لئے آنے والے کو پہچانتی ہے اور خوش ہوتی ہے
    یعنی مٹی کے نیچے دبی مردہ میّت زندہ سے زیادہ قوی ہوتی ہے – زندہ انسان کی یاداشت خراب بھی ہو جاتی ہے لیکن میّت اس عیب سے پاک ہے نہ صرف سنتی ہے بلکہ پہچانتی بھی ہے

    ابن تیمیہ فتویٰ میں لکھتے ہیں مجموع الفتاوى ج ٣ ص ٤١٢

    أَنَّ الْمَيِّتَ يَسْمَعُ فِي الْجُمْلَةِ كَلَامَ الْحَيِّ وَلَا يَجِبُ أَنْ يَكُونَ السَّمْعُ لَهُ دَائِمًا ، بَلْ قَدْ يَسْمَعُ فِي حَالٍ دُونَ حَالٍ


    بے شک میّت زندہ کا کلام سنتی ہے اور یہ واجب نہیں آتا کہ یہ سننا دائمی ہو بلکہ یہ سنتی ہے حسب حال

    آپ نے دیکھا کہ ابن تیمیہ اس بات کے قائل تھے کہ میّت زندہ کا کلام سنتی ہے – کہاں ہیں وہ جو دعوی کرتے ہیں کہ میّت صرف دفنانے والوں کی چاپ سنتی ہے-
    ابن تیمیہ کے نزدیک نبی صلی الله علیہ وسلم مدینہ کی قبرمیں زندہ ہیں – وہ اپنی کتاب اقتضاء الصراط المستقيم مخالفة أصحاب الجحيم میں لکھتے ہیں:.

    كان سعيد ين المسيب في أيام الحرة يسمع الأذان من قبر رسول الله صلى الله عليه و سلم في أوقات الصلوات وكان المسجد قد خلا فلم يبقى غيرهRB]H]
    اور سعيد ين المسيب ایام الحرہ میں اوقات نماز قبر رسول الله صلى الله عليه وسلم سے اذان کی آواز سن کر معلوم کرتے تھے اور مسجد (النبی) میں کوئی نہ تھا اور وہ با لکل خالی تھی

    افسوس کہ الله کے نبی کو زندہ درگور کر دیا گیا

    ابن تیمیہ اس کے بھی قائل تھے کہ (مجموع الفتاوى ج ٢٧ ص ٣٨٤

    أنه صلى الله عليه وسلم يسمع السلام من القريب
    نبی صلی الله علیہ وسلم قبر کے قریب پکارا جانے والا سلام سنتے ہیں

    جب کہ حضرت عمر رضی الله عنہ اور ام المومنین حضرت عائشہ رضی الله کا عقیدہ اس کے برعکس تھا -
    http://forum.mohaddis.com/threads/حضرت-عمر-رضی-اللہ-عنہ-بھی-سماعِ-موتٰی-کے-منکر-تھے.9911/

    یہ لنک بھی پڑھیے - اس فورم پر ایک اہل حدیث بھائی نے یہاں پوسٹ کیا ہے - یہ پوسٹ دیوبندی حیاتی عقیدے کے رد میں لکھی گئی ہے- امام ابن تیمیہ رح بھی اسی عقیدے کے قائل تھے جس کے دیوبندی حیاتی قائل ہیں کہ نبی کریم اپنی قبر میں زندہ ہیں -

    http://forum.mohaddis.com/threads/عقیدہِ-حیات-فی-القبور-و-حیات-النبی-صلی-اللہ-علیہ-وسلم-فی-القبر-حصہ-اول.11939/

    لہذا عقیدہ یہ بنا کہ میّت حس و عقل رکھتی ہے سنتی ہے زائر کو پہچانتی ہے قبر کے اوپر کے حالات سے واقف ہوتی ہے

    اب اگر میّت اتنی قوت والی ہے تو کیوں نہ پوجی جائے کیوں نہ غیر الله کو پکارا جائے کیوں نہ قبروں سے فیض حاصل کیا جائے –
    اس کے برعکس قرآن کا فیصلہ ہے کہ میّت مٹی مٹی ہو جاتی ہے سنتی نہیں اور روح اس جسد میں اب قیامت کے دن آے گی-


    وَالَّذِينَ يَدْعُونَ مِن دُونِ اللَّهِ لَا يَخْلُقُونَ شَيْئًا وَهُمْ يُخْلَقُونَ۔ أَمْوَاتٌ غَيْرُ أَحْيَاءٍ ۖ وَمَا يَشْعُرُونَ أَيَّانَ يُبْعَثُونَ سورة النحل آیات ۲۰ ۔ ۲۱
    اور جنہیں الله کے سوا پکارتے ہیں وہ کچھ بھی پید انہیں کرتے اور وہ خود پیدا کیے ہوئے ہیں۔ وہ تو مُردے ہیں جن میں جان نہیں ور وہ نہیں جانتے کہ وہ کب اٹھائے جائیں گے


    ثُمَّ إِنَّكُم بَعْدَ ذَ‌ٰلِكَ لَمَيِّتُونَ۔ ثُمَّ إِنَّكُمْ يَوْمَ الْقِيَامَةِ تُبْعَثُونَ سورة المومنون، آیات ۱۵۔۱٦
    پھر تم اس کے بعد مرنے والے ہو، پھر تم قیامت کے دن اٹھائے جاؤ گے
     
    Last edited: ‏نومبر 12، 2014
    • متفق متفق x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • لسٹ
  4. ‏نومبر 16، 2014 #94
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

  5. ‏فروری 01، 2015 #95
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

  6. ‏فروری 01، 2015 #96
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    حافظ عبداللہ بہالپوی فرماتےہیں۔کہ جو اہل حدیث الیکشن میں کھڑے ہوتے ہیں وہ اہل حدیث نہیں
    ہیں
     
  7. ‏مارچ 17، 2015 #97
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    @اسحاق سلفی بھائی آپ کے جواب کا انتظار ہے تا کہ ہمارے علم میں اضافہ ہو - شکریہ -
     
  8. ‏اپریل 17، 2015 #98
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    آپ سے بڑا عربی شناس اور کون ہو گا - آپ ہی نیک کام کر دیں - تا کہ یہاں ہم سب کے علم میں اضافہ ہو - شکریہ -
     
  9. ‏اکتوبر 06، 2016 #99
    وجاہت

    وجاہت رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مئی 03، 2016
    پیغامات:
    421
    موصول شکریہ جات:
    41
    تمغے کے پوائنٹ:
    45

    بھائی اس بات کا کیا ثبوت ہے - کوئی حوالہ تو دیں کہ

    حافظ عبداللہ بہالپوی فرماتےہیں۔کہ جو اہل حدیث الیکشن میں کھڑے ہوتے ہیں وہ اہل حدیث نہیں
     
  10. ‏اکتوبر 06، 2016 #100
    وجاہت

    وجاہت رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مئی 03، 2016
    پیغامات:
    421
    موصول شکریہ جات:
    41
    تمغے کے پوائنٹ:
    45

    @اسحاق سلفی بھائی میں نے یہ پورا تھریڈ پڑھا - آپ نے خود ہے مجھے اس کا لنک دیا - کافی معلوماتی تھریڈ ہے یہ -
    پلیز یہاں @محمد علی جواد کی باتوں کا کیا جواب ہو گا -
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں