1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

میری کتاب ’’ حادثہ کربلا اورسبائی سازش‘‘ سے متعلق ایک وضاحت

'تاریخی روایات' میں موضوعات آغاز کردہ از کفایت اللہ, ‏دسمبر 25، 2013۔

موضوع کا سٹیٹس:
مزید جوابات پوسٹ نہیں کیے جا سکتے ہیں۔
  1. ‏دسمبر 29، 2013 #21
    کلیم حیدر

    کلیم حیدر رکن
    جگہ:
    لیہ
    شمولیت:
    ‏فروری 14، 2011
    پیغامات:
    9,403
    موصول شکریہ جات:
    25,973
    تمغے کے پوائنٹ:
    995

    ناپسند کے علاوہ کوئی گھٹیا بٹن ہوتا تو صاحب کےلیے وہی گفٹ پیش کرتا۔
     
    • متفق متفق x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  2. ‏دسمبر 29، 2013 #22
    محمد وقاص گل

    محمد وقاص گل سینئر رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 23، 2013
    پیغامات:
    1,037
    موصول شکریہ جات:
    1,678
    تمغے کے پوائنٹ:
    310


    جناب آپ کو بارہاں آگاہ کیا جا چکا ہے کہ دھیان سے بات کریں۔
    بے شک آپ کفایت اللہ صاحب کو صاحب علم نا مانیں لیکن یہ تو آپ کو معلوم ہونا چاہیئے کہ وہ آپ کے دینی بھائی ہیں اور ایک چھوٹے سے مسئلے میں اختلاف ہے اور اس کی بنا پر ہمیں کسی کے بارے میں غلط الفاظ کا استعمال ہرگز نہیں کرنا چاہیئے۔۔

    باقی آپ نے جو کتاب کا صفحہ 26 شیئر کیا اس میں آپ کی ذکر کردہ بات تو نظر نہیں آئی۔۔۔؟؟؟

    یہ کہان ذکر کی ہے کتاب میںِِ؟؟؟
     
    • پسند پسند x 3
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  3. ‏جنوری 03، 2014 #23
    قمرالزمان

    قمرالزمان مبتدی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    15
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    6

    ص 17 پر کفایت اللہ نے آدھی روایت نقل کی ہے جو کہ آدھی روایت خذف کر گئے ہیں۔ کیونکہ پوری روایت میں صحابہ کےلئے سخت الفاظ اور رافضی لہجا استعمال کیا گیا ہے ۔ ہمارا اعتراض یہ ہے کہ کفایت اللہ سنابلی نے جو آدھی روایت پیش کی ہے اور باقی خذف کر گئے ہیں وہ آدھی ہم یہاں پیش کر دیتے ہیں اور اس کا ترجمہ بھی۔ اور آدھی روایت قبول کرنا باقی نہ کرنا یہ اصول کہاں سے لیاہے محدث فورم کے عالم نے ؟؟

    پوری روایت :

    حَدَّثَنِي عَبْد الْمَلِكِ بن نوفل بن مساحق بن عَبْدِ اللَّهِ بْنِ مخرمة، أن مُعَاوِيَة لما مرض مرضته الَّتِي هلك فِيهَا دعا يَزِيد ابنه، فَقَالَ: يَا بني، إني قَدْ كفيتك الرحلة والترحال، ووطأت لك الأشياء، وذللت لك الأعداء، وأخضعت لك أعناق العرب، وجمعت لك من جمع واحد، وإني لا أتخوف أن ينازعك هَذَا الأمر الَّذِي استتب لك إلا أربعة نفر من قريش:
    الْحُسَيْن بن علي، وعبد اللَّه بن عُمَرَ، وعبد اللَّه بن الزُّبَيْرِ، وعبد الرَّحْمَن بن أبي بكر، فأما عَبْد اللَّهِ بن عُمَرَ فرجل قَدْ وقذته العبادة، وإذا لم يبق أحد غيره بايعك، وأما الْحُسَيْن بن علي فإن أهل العراق لن يدعوه حَتَّى يخرجوه، فإن خرج عَلَيْك فظفرت بِهِ فاصفح عنه فإن لَهُ رحما ماسة وحقا عظيما، وأما ابن أبي بكر فرجل إن رَأَى أَصْحَابه صنعوا شَيْئًا صنع مثلهم، ليس لَهُ همة إلا فِي النساء واللهو، وأما الَّذِي يجثم لك جثوم الأسد، ويراوغك مراوغة الثعلب، فإذا أمكنته فرصة وثب، فذاك ابن الزُّبَيْر، فإن هُوَ فعلها بك فقدرت عَلَيْهِ فقطعه إربا إربا.

    اس میں ابوبکر رضی اللہ عنے کے بیٹے کے لئے معاویہ رضی اللہ عنہ یہ الفاظ کہہ ہیں :

    وأما ابن أبي بكر فرجل إن رَأَى أَصْحَابه صنعوا شَيْئًا صنع مثلهم، ليس لَهُ همة إلا فِي النساء واللهو۔۔۔۔۔

    ابن ابی بکر جب اپنے ساتھیوں کو کچھ کرتے ہوئے دیکھے گا تو وہی کرے گا، اور اس کے اندر سوائے عورتوں میں دلچسپی اور کھیل کود کرنے کے علاوہ کوئی خاص عزم نہیں

    ابن زبیر کے بارے میں معاویہ رضی اللہ عنہ کے یہ الفاظ :

    ويراوغك مراوغة الثعلب
    یعنی ابن زبیر لومٹری کی سخت چال کی طرح تجھ پر چال چلے گا۔

    اور پھر آخر میں فرمایا

    فإن هُوَ فعلها بك فقدرت عَلَيْهِ فقطعه إربا إربا.۔۔۔

    اگر تو اس کو پالے تو اس پر کامیابی کے بعد اس کے ٹکڑے ٹکڑے کردے

    کفایت اللہ سنابلی نے روایت کا آدھا حصہ نقل نہیں کیا اور جو اپنےپسند کی بات تھی اسے قبول کر لیا ہے۔

    یہ اصول کہاں سے سیکھا ہے کفایت اللہ سنابلی نے کہ آدھی روایت تسلیم کرو جو اپنے فائدے میں ہو اور جو باقی آپ کے خلاف ہو وہ چہوڑ دو ؟؟

    اپنے بنائے ہوئے من گھڑت اصول ہیں جو یزید کو بچانےکےچکر میں بنائے جا رہے ہیں ۔

    اللہ تعالی ہدایت دے ۔
     
  4. ‏جنوری 03، 2014 #24
    عمیر زبیر

    عمیر زبیر رکن
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مئی 08، 2013
    پیغامات:
    43
    موصول شکریہ جات:
    31
    تمغے کے پوائنٹ:
    58

    ''حادثہ کربلا ویزید،صرف صحیح روایات کی روشنی میں''
    یہ کتاب کب تک آن لائن دستیاب ہوگی۔
     
  5. ‏جنوری 03، 2014 #25
    عمیر زبیر

    عمیر زبیر رکن
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مئی 08، 2013
    پیغامات:
    43
    موصول شکریہ جات:
    31
    تمغے کے پوائنٹ:
    58

    دو دن پہلے میری ایک رافضی جو حضرت امیر معاویہ رضی اللہ عنہ پر تبراکرتا ہے سے گفتگو ہو رہی تھی۔ میں نے شیعہ کتب سے اسکے سوالوں کا جواب دیا- لیکن اس دوران اس نے کہا " تمہارامولوی عمر صدیق تو یزید کو برا کہتا ہے۔ اب (نعوذ باللہ ) جب بیٹا ایسا ہو تو باپ کیسا ہوگا۔ " مجھے بہت افسوس ہوا کہ معاشرے آگے مسائل کم تھے جو ایسے مسائل پر گفتگو چھیڑ دی گئی۔ اور تو اور پھر زبان درازیوں کا سلسلہ اس قدر شروع ہوا کہ اب یہ موضوع اک تماشا بن گیا۔ مزید معلومات کیلیے فیس بک چیک کیجیئے۔ یزید کا فسق ثابت کرنا اتنا لازم ہوگیا کہ معاشرے میں پھیلتےہوئے شرک، بدعت ، الحاد ، جرائم کی شرح (زنا ، قتل وغیرہ) کو نظر انداز کرنا پڑا۔
    ایک اور بات میں ایک عام انسان ہونے کی حیثیت سے ایک سوال پوچھتاہوں کہ وطی فی دبر کے مسئلہ پر حضرت عبداللہ بن عمررضی اللہ عنہ کا موقف تو عمر صدیق صاحب کو پتا ہوگا- حضرت عبد اللہ بن عباس رضی اللہ عنہ کا جواب بھی پتہ ہوگاکہ اللہ رحم کرے عبد اللہ بن عمررضی اللہ عنہ پر اسے وہم ہوگیا ہے۔ کیا یہ طریقہ ٹھیک نہیں تھا گفتگو کا یہ اختلاف کا۔ میری ان سےاور انکی متعقدین سے درخواست ہے کہ کم از کم ان لوگوں کا خیال کر لیں جن کی اعتقادی حالت قابل رحم ہے۔
    جزاکم اللہ
     
  6. ‏مارچ 28، 2016 #26
    سید طہ عارف

    سید طہ عارف مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 18، 2016
    پیغامات:
    719
    موصول شکریہ جات:
    134
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    حادثہ کربلا ویزید،صرف صحیح روایات کی روشنی میں
    کسی بھائی کے پاس شیخ کفایت اللہ کی اس کتاب کا لنک ہو تو مجھے بھیج دیں
     
    Last edited by a moderator: ‏مارچ 28، 2016
  7. ‏مارچ 28، 2016 #27
    سید طہ عارف

    سید طہ عارف مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 18، 2016
    پیغامات:
    719
    موصول شکریہ جات:
    134
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    اور یزید بن معاویہ پر الزامات کا علمی جائزہ بھی ہو تو بھیج دیں
     
  8. ‏مارچ 28، 2016 #28
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    محترم! جب ”صحیح“ احادیث پر مبنی کتاب موجود تھی تو اس ”موضوع و ضعیف“ روایات پر مبنی کتاب لکھنے کا مقصد؟
     
  9. ‏مارچ 28، 2016 #29
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    جہاں تک مجھے یاد ہے انہوں نے بعد میں رجوع کر لیا تھا جس پر یہاں ان کی الگ سے ایک پوسٹ ہے، شائد وہ اسی کتاب کے حوالہ سے ہو یا کوئی اور اس پر کوئی سینئر ممبر اگر مزید جانتا ہو تو وہ پوسٹ سرچ کر کے پیش کر سکتا ہے۔

    والسلام
     
  10. ‏مارچ 29، 2016 #30
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    کمائی کا دھندا ہے لوگوں کو دین کا چکمہ دے کر۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...
موضوع کا سٹیٹس:
مزید جوابات پوسٹ نہیں کیے جا سکتے ہیں۔

اس صفحے کو مشتہر کریں