1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ناسخ اور منسوخ

'علوم قرآن' میں موضوعات آغاز کردہ از سید طہ عارف, ‏جون 25، 2016۔

  1. ‏جون 26، 2016 #11
    سید طہ عارف

    سید طہ عارف مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 18، 2016
    پیغامات:
    719
    موصول شکریہ جات:
    134
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    سورہ البقرہ میں اللہ تعالی نے ہر مسلمان کو حکم دیا ہے کہ وہ موت سے پہلے وصیت کرے اپنے والدین کے حق میں اور قریبی رشتہ داروں کے حق میں.اگر وہ یہ وصیت نہی کرے گے تو گناہ گار ہوگا
    پھر سورہ النساء میں اللہ تعالی نے والدین اور دوسرے قریبی رشتہ داروں جن کی تفصیل آیات میں موجود ہے کے حق میں وصیت کو منسوخ کرلیا اور ان کے حصے مقرر کردیے جو ان کو لازماً ملیں گے چاہے وہ وصیت کرے یا نہی. جیسا کہ ہمیں ایک حدیث سے بھی معلوم ہوتا ھے جس میں یہ بیان کیا گیا ہے کہ وارثوں کے حق میں وصیت نہی ہوسکتی. شیخ محترم اصل الفاظ نقل فرمالیں. اس کے علاوہ پیارے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی ایک حدیث نے وصیت کو بھی مال کے ایک تہائی تک محدود کرلیا. یعنی مرنے والا شخص اپنے مال کا صرف ایک تہائی وصیت کرسکتا ہے. پہلے وصیت فرض تھی آیات وراثت کے بعد اب وہ فرض نہی.

    Sent from my SM-G360H using Tapatalk
     
  2. ‏جون 26، 2016 #12
    سید طہ عارف

    سید طہ عارف مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 18، 2016
    پیغامات:
    719
    موصول شکریہ جات:
    134
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    یعنی وراثت کے احکامات سے وصیت کی فرضیت منسوخ ہوگئی
    وصیت قریبی رستہ داروں کے حق میں جن کا ذکر آیات میں ہے منسوخ ہوگئی
    اور وصیت ایک تہائی تک محدود ہوگئی

    Sent from my SM-G360H using Tapatalk
     
  3. ‏مئی 26، 2017 #13
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    401
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    65

    السلام و علیکم!
    نہایت ادب کے ساتھ یہ کہنا چاہوں گا کہ اس قرآن مجید میں کوئی بھی منسوخ آیت نہیں ہے ۔ صرف ہمیں سمجھنے میں غلطی ہے ۔۔۔ہر آیت قیامت تک اپنے اہمیت رکھتی ہے ۔ صرف اس کو سمجھنے کے لئے غور و فکر کی ضرورت ہے ۔ شکریہ
    جو منسوخ کی گئی وہ اس میں درج ہی نہیں کی گئی ۔۔۔۔شکریہ
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں