1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

نماز میں رفع الیدین کے بارے میں احناف کا موقف :

'نماز' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏اکتوبر 22، 2015۔

  1. ‏دسمبر 24، 2015 #61
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    یہ حدیث صحیح نہیں ہے ۔آپ کو کتنی بار بتایا ہے
     
  2. ‏دسمبر 24، 2015 #62
    اشماریہ

    اشماریہ سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏دسمبر 15، 2013
    پیغامات:
    2,684
    موصول شکریہ جات:
    740
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    بخاریؒ اور ابن قیمؒ دونوں کا فرمان سر آنکھوں پر۔ دونوں ہمارے بڑے ہیں اور جو کہا ہوگا سوچ کر تحقیق کر کے کہا ہوگا۔
    لیکن اگر بات تقلید کی ہی ہے اور دوسرے کی تحقیق کو ماننے کی ہی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تو ان کی تقلید کے بجائے یہ بہتر نہیں ہے کہ میں ائمہ احناف کی تقلید کر لوں؟
     
  3. ‏دسمبر 24، 2015 #63
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    اس سے جناب کی کیا مراد ہے ذرا کھل کر لکھیں۔
     
  4. ‏دسمبر 25، 2015 #64
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    ما قبل علماء کی تحقیق سے استفادہ کرنا تقلید نہیں ، ورنہ حنفی علماءکی کتابوں میں غیر حنفی علماء کے حوالے نہیں ہونے چاہییں ۔
     
  5. ‏دسمبر 25، 2015 #65
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    سنن النسائي: كِتَاب التَّطْبِيقِ بَاب رَفْعِ الْيَدَيْنِ لِلسُّجُودِ
    أخبرنا محمد بن المثنى قال حدثنا ابن أبي عدي عن شعبة عن قتادة عن نصر بن عاصم عن مالك بن الحويرث أنه رأى النبي صلى الله عليه وسلم رفع يديه في صلاته وإذا ركع وإذا رفع رأسه من الركوع وإذا سجد وإذا رفع رأسه من السجود حتى يحاذي بهما فروع أذنيه

    حکم :صحیح

    سنن النسائي: رکوع کے درمیان میں تطبیق کا بیان سجدے میں جاتے وقت رفع الیدین کرنا
    حضرت مالک بن حویرث رضی اللہ عنہ سے روایت ہے، انھوں نے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو دیکھا آپ اپنی نماز میں جب رکوع کرتے یا رکوع سے سر اٹھاتے یا سجدے میں جاتے یا سجدے سے سر اٹھاتے تو اپنے دونوں ہاتھ اٹھاتے حتی کہ انھیں کانوں کے کناروں کے برابر کرتے۔
    اس حدیث کو جناب ”ضعیف“ کہہ رہے ہیں اس کے مفصل دلائل تحریر فرمادیں۔
     
  6. ‏دسمبر 25، 2015 #66
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    آپ لوگوں کا دعویٰ ”قرآن اور حدیث“ کا ہے لہٰذا اصولی طور پر آپ لوگوں کو اپنے دلائل قرآن اور حدیث ہی سے دینے چاہئیں بلا تحریف کیئے۔ دوسرے یہاں پر کوئی کسی کی وڈیو پیش کر رہا ہے کوئی کسی ”غیر نبی“ کی کتابیں پیش کر رہا ہے اور دعویٰ ”قرآن اور حدیث“ کا ہے۔ اگر کسی کے پاس اتنا علم نہیں کہ کسی پوست کا جواب دےسکے تو وہ چپ ہو رہے اور کسی دوسرے کو موقعہ دے۔
     
  7. ‏دسمبر 25، 2015 #67
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    المعجم الكبير للطبراني - (ج 11 / ص 439)
    حدثنا أَحْمَدُ بن الْمُعَلَّى الدِّمَشْقِيُّ، حَدَّثَنَا هِشَامُ بن عَمَّارٍ، حَدَّثَنَا رِفْدَةُ بن قُضَاعَةَ الأَوْزَاعِيُّ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بن عُبَيْدِ بن عُمَيْرٍ، عَنْ أَبِيهِ، عَنْ جَدِّهِ: أَنّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ"يَرْفَعُ يَدَيْهِ مَعَ كُلِّ تَكْبِيرَةٍ فِي الصَّلاةِ الْمَكْتُوبَةِ".

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ہر تکبیر کے ساتھ رفع الیدین کرتے تھے۔
    اس حدیثِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم سے انکار کے لئے جناب کے پاس کیا بہانہ ہے ”دلائل“ کے ساتھ لکھیں صرف ”ضعیف“ کہہ کر رد نہ کریں۔
     
  8. ‏دسمبر 25، 2015 #68
    ابن قدامہ

    ابن قدامہ مشہور رکن
    جگہ:
    درب التبانة
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2014
    پیغامات:
    1,772
    موصول شکریہ جات:
    421
    تمغے کے پوائنٹ:
    198

    آپ کوکون سامان لینا ہے
     
  9. ‏دسمبر 25، 2015 #69
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    آپ اپنی ذمہ داری سے تو سبکدوش ہو جائیں۔
     
  10. ‏دسمبر 26، 2015 #70
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    آپ لوگوں کا دعوی ’’ امام صاحب کی تقلید ‘‘ کا ہے ، لہذا اصولی طور پر آپ لوگون کو اپنے دلائل امام صاحب کے اقوال ہی سے دینے چاہییں ، احادیث میں تحریف والا مذموم کام نہیں کرنا چاہیے ، اگر آپ کو امام صاحب کے اقوال کے بارے میں علم نہیں تو خاموشی اختیار کریں ، ادھر ادھر سے دلائل پیش کرکے اپنی مقلدانہ حیثیت کا مذاق نہ اڑائیں ۔
     
    • زبردست زبردست x 3
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں