1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

نماز کے طبی اثرات

'نماز' میں موضوعات آغاز کردہ از شہزاد ضمیر, ‏ستمبر 20، 2017۔

  1. ‏ستمبر 20، 2017 #1
    شہزاد ضمیر

    شہزاد ضمیر مبتدی
    جگہ:
    پشاور، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 16، 2016
    پیغامات:
    9
    موصول شکریہ جات:
    2
    تمغے کے پوائنٹ:
    15

    السلام و علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ!

    محترم مجھے یہ کسی نے ارسال کیا ہے، اس بارے میں پوچھنا ہے کہ کیا یہ قرآن و حدیث کے حوالے سے درست ہے یا نہیں؟

    " نماز کے طبی اثرات "
    فجر :

    نماز فجر کے وقت سوتے رہنے سے معاشرتی ہم آہنگی پر اثر پڑتا ہے، کیونکہ اجسام کائنات کی نیلگی طاقت سے محروم ہو جاتے ہیں-
    رزق میں کمی اور بےبرکتی آجاتی ہے۔
    چہرہ بے رونق ہو جاتا ہے۔
    لہذا مسلسل فجر قضا پڑھنے والا شخص بھی انہی لوگوں میں شامل ہے۔

    ظہر:

    وہ لوگ جو مسلسل نماز ظہر چھوڑتے ہیں وہ بد مزاجی اور بدہضمی سے دوچار ہوتے ہیں.
    اس وقت کائنات زرد ہو جاتی ہے اور معدہ اور نظامِ انہظام پر اثر انداز ہوتی ہے-
    روزی تنگ کر دی جاتی ہے۔

    عصر:

    اکثر نماز عصر چھوڑنے والوں کی تخلیقی صلاحیتیں کم ہو جاتی ہیں، اور عصر کے وقت سونے والوں کا زہن کند ہو جاتا ہے اور اولاد بھی کند زہن پیدا ہوتی ہے-
    کائنات اپنا رنگ بدل کر نارنجی ہوجاتی ہے اور یہ پورے نظامِ تولید پر اثر انداز ہوتی ہے-

    مغرب:

    مغرب کے وقت سورج کی شعاعیں سرخ ہو جاتی ہیں-
    جنات اور ابلیس کی طاقت عروج پر ہوتی ہے-
    سب کام چھوڑ کر پہلے مغرب کی نماز ادا کرنی چاہیئے-
    اس وقت سونے والوں کی کم اولاد ہوتی ہے یا ہوتی ہی نہیں اور اگر ہو جاے تو نافرمان ہوتی ہے۔

    عشاء:

    نماز عشاء چھوڑنے والے ہمیشہ پریشان رہتے ہیں-
    کائنات نیلگی ہو کر سیاہ ہو جاتی ہے اور ہمارے دِماغ اور نظامِ اعصاب پر اثر کرتی ہے-
    نیند میں بے سکونی اور برے خواب آتے ہیں، جلد بڑھاپا آجاتا ہے۔

    نوٹ :

    بے نمازی کی نہ دنیا ہے نہ ہی آخرت، کیونکہ یہ ہماری شیطان کے ساتھ گہری دوستی اور ہمارے گناہ ہی ہیں جو ہمیں اللّٰہ تعالٰی کے سامنے سجدہ نہیں کرنے دیتے۔

    بیوقوف ہے وہ مسلمان جس کو پتہ بھی ہے کہ پہلا سوال نماز کا ہونا ہے پھر بھی وہ نماز قائم نہیں کرتا۔

    جب جنت والے جہنم والوں سے پوچھیں گے کہ تمہیں کون سا عمل یہاں (جہنم میں) لے آیا تو وہ کہیں گے کہ ہم نماز نہیں پڑھتے تھے۔
    (القرآن)

    یاالله ہمیں وقت پہ نماز ادا کرنے کا پابند بنا۔
    آمین!
     
  2. ‏اکتوبر 12، 2017 #2
    محمد المالكي

    محمد المالكي رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 01، 2017
    پیغامات:
    401
    موصول شکریہ جات:
    152
    تمغے کے پوائنٹ:
    47

  3. ‏اکتوبر 12، 2017 #3
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    7,638
    موصول شکریہ جات:
    8,077
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    و علیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    قرآن وسنت کے اندر ان ’ اثرات ‘ کے اثبات یا نفی کے حوالے کوئی دلیل نہیں ، لہذا یہ باتیں ہو بھی سکتیں ہیں اور نہیں بھی ہوسکتی ہیں ۔
    البتہ انہیں قرآن وسنت کی طرف منسوب کرنا جائز نہیں ۔
    ان میں سے کچھ باتیں ایسی ہیں ، جن کے متعلق کچھ روایات مروی ہیں ، جو کہ اکثر ضعیف ہیں ۔
     
  4. ‏اکتوبر 12، 2017 #4
    محمد المالكي

    محمد المالكي رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 01، 2017
    پیغامات:
    401
    موصول شکریہ جات:
    152
    تمغے کے پوائنٹ:
    47

    جزاک اللہ خیر
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں