1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

وسیلہ کیلیۓوکیل،جج کی گٹھیامثال اورشیطان کی !!!!

'وسیلہ' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏جنوری 22، 2014۔

  1. ‏جنوری 22، 2014 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,968
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

  2. ‏جنوری 22، 2014 #2
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,968
    موصول شکریہ جات:
    6,506
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

  3. ‏جنوری 22، 2014 #3
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

  4. ‏جنوری 22، 2014 #4
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,160
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    محترم بھائی ایک بات میں بتانا چاہتا ہوں کہ جو بھی آپ کو دنیاوی مثالیں دے کہ بڑے افسر سے ملنے کے لئے بیچ میں وسیلے کی ضرورت ہوتی ہے تو اس سے مندرجہ ذیل باتیں پوچھیں
    جو افسر چھوٹوں کی باتیں ڈائریکٹ نہیں سنتا وہ آپ کے نزدیک زیادہ اچھا ہے یا حضرت عمر رضی اللہ عنہ جیسا افسر (خلیفہ) جس کے دربار میں ہر کوئی جا کر اپنی بات کر سکتا تھا
    کوئی بھی مسلمان (شیعہ نہیں) اسکا جواب یہی دے گا کہ عمر رضی اللہ عنہ کی طرح کا افسر اچھا لگتا ہے
    تو پھر اسکو بتائیں کہ اللہ نے قرآن میں فرشتوں کو اللہ کی بیٹیاں بنانے والوں کو کہا ہے
    اصطفی البنات علی البنین مالکم کیف تحکمون
    ام لہ البنات ولکم البنون
    یعنی وہ اپنے لئے تو بیٹے چنتے ہیں اور اللہ کے لئے بیٹیاں ہی چننی تھیں
    اسی طرح ان لوگوں کی عقل تو ڈائریکٹ بات سننے والوں کو اچھا سمجھتی ہے مگر اللہ کے لئے یہ اچھائی بری لگتی ہے مالکم کیف تحکمون
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں