1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

وطنیّت

'اردو زبان وادب' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد ظہیر اقبال, ‏جون 25، 2019۔

  1. ‏جون 25، 2019 #1
    محمد ظہیر اقبال

    محمد ظہیر اقبال مبتدی
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اگست 08، 2018
    پیغامات:
    8
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    10

    یعنی وطن بحیثیّت ایک سیاسی تصوّر کے

    اس دور میں مے اور ہے، جام اور ہے جم اور
    ساقی نے بِنا کی روِشِ لُطف و ستم اور
    مسلم نے بھی تعمیر کِیا اپنا حرم اور
    تہذیب کے آذر نے ترشوائے صنم اور
    ان تازہ خداؤں میں بڑا سب سے وطن ہے
    جو پیرہن اس کا ہے، وہ مذہب کا کفن ہے
    یہ بُت کہ تراشیدۂ تہذیبِ نوی ہے
    غارت گرِ کاشانۂ دینِ نبَوی ہے
    بازو ترا توحید کی قوّت سے قوی ہے
    اسلام ترا دیس ہے، تُو مصطفوی ہے
    نظّارۂ دیرینہ زمانے کو دِکھا دے
    اے مصطفَوی خاک میں اس بُت کو ملا دے!
    ہو قیدِ مقامی تو نتیجہ ہے تباہی
    رہ بحر میں آزادِ وطن صُورتِ ماہی
    ہے ترکِ وطن سُنّتِ محبوبؐ الٰہی
    دے تُو بھی نبوّت کی صداقت پہ گواہی
    گُفتارِ سیاست میں وطن اور ہی کچھ ہے
    ارشادِ نبوّت میں وطن اور ہی کچھ ہے
    اقوامِ جہاں میں ہے رقابت تو اسی سے
    تسخیر ہے مقصودِ تجارت تو اسی سے
    خالی ہے صداقت سے سیاست تو اسی سے
    کمزور کا گھر ہوتا ہے غارت تو اسی سے
    اقوام میں مخلوقِ خدا بٹتی ہے اس سے
    قومیّتِ اسلام کی جڑ کٹتی ہے اس سے

    اقبالؒ
     

اس صفحے کو مشتہر کریں